ہوم   > Latest

وہ لمحہ جب نادیہ جمیل نے فلم ’’ویرزارا‘‘ میں کام کرنے سے انکار کیا

4 months ago

 اداکارہ نادیہ جمیل نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں بالی ووڈ فلم ’’ویر زارا‘‘ کے لیے رانی مکھر جی کو دیے جانے والے کردار کی آفر ہوئی تھی جو انہوں نے قبول نہیں کی۔

نادیہ جمیل ایک وقت میں پاکستان ٹی وی کا معروف ترین چہرہ تھیں ، کیرئیر کے عروج میں انہیں بھارتی فلمساز یش چوپڑا نے اپنی فلم ویر زارا میں کام کرنے کی آفر کی تھی۔

اداکاری کے علاوہ سماجی خدمات کے حوالے سے اپنی منفرد پہچان بنانے والی نادیہ اپنی نرم دلی کے باعث سب کی پسندیدہ ہیں، حال ہی میں نادیہ یو ٹیوب پر کیے جانے والے شو ’’ریوائنڈ ود ثمینہ پیرزادہ ‘‘ میں شریک ہوئیں اور کیرئیر سمیت نجی زندگی کے حوالے سے وہ باتیں شیئر کیں جنہیں ان کے مداح جاننا چاہتے ہیں۔

نادیہ نے بتایا کہ کیرئیر کے عروج میں ان کی ملاقات بھارتی ہدایت کار یش چوپڑا سے ہوئی تھی جنہوں نے شاہ رخ خان کے ساتھ فلم ویر زارا میں کام کرنے کی آفرکی تھی لیکن نادیہ نے انکارکردیا۔

انکارکی وجوہات بتاتے ہوئے نادیہ کا کہنا تھا کہ اس وقت میرا بیٹا 2 ماہ کا تھا۔ میری امی اس کا خیال رکھتیں لیکن مجھے محسوس ہوا کہ اگر میں اس راہ پر چل پڑی تو پھر میں عادی ہو جاؤں گی اور چھوڑ نہیں پاؤں گی۔ میں نے فیصلہ کیا کہ میں یا تو ایک ماں بن جاؤں یا پھراداکارہ ۔  اسی لیے یہ کردار ادا کرنے سے انکار کردیا۔

فلم ’’ویرزارا‘‘ میں شاہ رخ خان کے مقابل ہیروئن کا کردار پریتی زنٹا کا تھا جبکہ رانی مکھر جی اس فلم میں وکیل کے روپ میں نظر آئی تھیں۔

لندن میں پیدا ہونے والی نادیہ کے مطابق 11 سال کی عمر میں پاکستان آئی ، کانوننٹ جیسس اینڈ میری والے میری شرارتوں سے تنگ تھے انہوں نے مجھے بہت برداشت کیا۔ امی ہیڈ مسٹریس کے آفس کے باہر رو رہی ہوتی تھیں کہ تمہیں مسئلہ کیا ہے۔

نادیہ نے اپنی بیماری کے حوالے سے بہت سی باتیں شیئرکرتے ہوئے بتایا کہ اللہ تعالیٰ،باکسنگ اور درخت ان تین چیزوں کا میری صحتیابی میں بہت اہم کردار ہے۔

نادیہ نے 4 سال کی عمر میں ڈرائیور کے ہاتھوں ہراساں کیے جانے کا بھی ذکر کیا۔

اداکارہ کے مطابق انہیں پڑھائی کا کوئی خاص شوق نہیں تھا۔ گھر والوں نے انہیں بڑی مشکل سے کالج بھیجا، ان کی زندگی ماہی منڈوں کی طرح گزری۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں