لیجنڈ ہالی ووڈ اداکارہ ڈورس ڈے انتقال کرگئیں

May 14, 2019

ہالی ووڈ کی لیجنڈری اداکارہ اور گلوکارہ ڈورس ڈے ستانوے برس کی عمر میں کیلی فورنیا میں انتقال کر گئیں۔

خبر رساں ایجنسی کے مطابق ڈورس ڈے کا شمار ہالی ووڈ کی تاریخ کے قد آور ترین باکس آفس اسٹارز اور بیسویں صدی کی مقبول ترین گلوکاروں میں ہوتا ہے۔ اداکارہ کے انتقال پر ساتھیوں کا کہنا ہے کہ ہالی ووڈ آج ایک بڑے انسان اور اداکاری کی اکیڈمی سے محروم ہوگیا۔

ڈورس نے اپنی زندگی کے آخری ایام کیلیفورنیا میں کارمل ویلی میں گزارے، انتقال کے وقت ان کے قریبی دوست ان کے ہمراہ تھے۔ ڈورس فلمی اور گلوکاری کے کیریئر سے پہلے ڈانسر بنانا چاہتی تھیں، تاہم گاڑی کے ایکسیڈنٹ میں سیدھی ٹانگ پر شدید چوٹیں آنے کے باعث وہ اپنا یہ خواب پورا نہ کرسکیں۔ ڈورس نے گلوکاری کا آغاز 15 سال کی عمر سے کیا۔

 

 شوبز شخصیات کا کہنا ہے کہ ڈورس کی وفات سے ہالی ووڈ کے سنہری دور کا باب ختم ہوگیا۔ ڈورس ڈے نے سال 1945 میں گیت "سنٹیمنٹل جرنی" سے شہرت پائی اور سولو سنگر کی حیثیت سے 650 سے زائد گیت ریکارڈ کرائے۔ اپنے گانوں سے ڈورس نے بل بورڈ اور باکس آفس پر کامیابیوں کے جھنڈے گاڑے۔

پچاس کی دہائی کی ہالی ووڈ فلموں میں اپنی اداکاری سے ڈورس کو عالمی شہرت حاصل ہوئی، جب کہ کئی ایوارڈ بھی انہوں نے اپنے نام کیے۔

سال 1951 میں ان کی فلم " آئی ول سی یو ان مائی ڈریم " نے باکس آفس کا بیس سالہ ریکارڈ توڑا۔ سال 2008 میں انہیں گریمی لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ دیا گیا، جانوروں کے حقوق کے لئے ان کی خدمات پر 2004 میں انہیں اس وقت کے صدر جارج بش نے صدارتی آزادی ایوارڈ سے بھی نوازا تھا۔