ڈپریشن مجھے جلد مار ڈالے گا، محسن عباس حیدر

SAMAA | - Posted: Jan 29, 2019 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Jan 29, 2019 | Last Updated: 2 years ago

معروف ڈی جے،گلوکار اور اداکارمحسن عباس حیدر اپنی جاندار پرفارمنس سے سب کی توجہ سمیٹ لینے کی صلاحیت رکھتے ہیں ۔ مزاحیہ کردار نبھانا ہو یا سنجیدہ اداکاری، محسن کی فنی صلاحیتوں کے سبھی معترف ہیں اور ان کی گلوکاری کا بھی جواب نہیں۔

سوشل میڈیا پر محسن عباس حیدر کی ایک پوسٹ  نے ان کے مداحوں کو تشویش میں مبتلا کردیا ، محسن نے انکشاف کیا کہ وہ شدید ڈپریشن میں مبتلا ہیں۔

انسٹا پر محسن عباس نے لکھا کہ ’’ ڈپریشن مجھے جلد مار ڈالے گا، میں ان لوگوں کا شکریہ ادا کرنا چاہتا تھا جو اس ڈپریشن کی وجہ بنے‘‘ ۔

اس پوسٹ کے بعد طویل تبصروں کی لائن لگ گئی۔

 

 

محسن عباس کے چاہنے والوں نے شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ان کے لیے دعا کی اور اس مایوس کن کیفیت سے نکلنے کے لیے بہترین مشورے بھی دیے۔

 

دسمبر 2016 میں محسن عباس کو گہرا صدمہ جھیلنا پڑا تھا جب ان کی ایک ماہ کی بیٹی ماہ وین حیدر چل بسی تھی، اس کے بعد سے محسن اکثر بیٹی کی یاد میں شاعری پوسٹ کرتے رہتے ہیں ۔

اس کے علاوہ ان کی نجی زندگی بھی کشمکش کا شکار رہی، اطلاعات ہیں کہ محسن کی اپنی اہلیہ فاطمہ نقوی سے علیحدگی ہو چکی ہے۔

محسن عباس کے مداحوں میں پائی جانے والی تشویش بڑی حد تک بجا ہے کیونکہ ماہرین کے مطابق ڈپریشن کا مریض خودکشی تک کر سکتا ہے۔ ڈپریشن میں مبتلا افراد میں سے صرف 25 سے 30 فیصد میں کلینیکل ڈپریشن کی تشخیص ہوتی ہے اور ان میں سے بھی محض دس فیصد کا موزوں علاج ہو پاتا ہے۔ شدید ڈپریشن کی جتنی جلد تشخیص ہو گی، خودکشی کے واقعات کی اتنی ہی زیادہ روک تھام کی جا سکتی ہے۔

اداکار محسن عباس حیدر کو گہرا صدمہ

ڈپریشن کی اہم علامات میں اداسی، بے حسی، نقاہت، بھوک کی کمی کے علاوہ خودکشی کر لینے کے خیالات آتے ہیں۔ ڈپریشن مختلف حیاتیاتی، نفسیاتی اور سماجی عوامل کا نتیجہ ہے اور ان عوامل کا کردار ہر شخص میں مختلف ہو سکتا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube