کینسر کے مرض میں مبتلا پاکستانی اداکار مالی معاونت کا منتظر

November 8, 2018

پاکستان شوبز انڈسٹری کے معروف اداکار ارشد حسین گزشتہ دو برس سے کینسر کے خلاف جنگ لڑرہے تاہم مالی مسائل کے باعث اب وہ ہمت ہار چکے ہیں ۔

بی بی سی کے مطابق شوبر انڈسٹری میں گذشتہ تین دہائیوں سے کام کرنے والے ارشد حسین آج کل کینسر جیسے جان لیوا مرض میں مبتلا ہیں،تاہم انہوں نے اس بیماری میں جو کچھ ان کے پاس تھا اپنے علاج پر سب خرچ کر بیٹھے ہیں۔

مردان سے تعلق رکھنے والے اداکار ارشد حسین نے پاکستان ٹیلی ویژن اور نجی ٹی وی چینلز پر متعدد ڈراموں میں کام کیا ہے اس کے علاوہ وہ اسٹیج اور ریڈیو پاکستان میں بھی ایک عرصے تک کام کر چکے ہیں۔

وہ گذشتہ 30 سالوں تک اس فیلڈ سے منسلک رہے ہیں، انھیں دو سال سے مثانے میں کینسر کا مرض لاحق ہے جس کے لیے وہ مختلف اسپتالوں میں علاج کراچکے ہیں۔

ارشد حسین کی مالی مدد کے لیے خیبر پختونخوا کے فنکاروں نے حکومت اور دیگر امدادی اداروں سے ان کی مدد کرنے کی اپیل کی ہےاور ’سپورٹ ارشد حسین‘کے نام سے ایک مہم شروع کی ہے۔

معروف گلوکار بختیار خٹک کا کہنا تھا کہ ارشد حسین نے دو سال تک اپنا علاج خود کرایا ہے، جس پر ایک اندازے کے مطابق 40 لاکھ روپے خرچہ آیا ہے، تاہم اب وہ ہمت ہار چکے ہیں اسی لیے ان کے ساتھی اداکاروں اور فنکاروں نے ان کی مدد کا بیڑا اٹھایا ہے۔

بختیار خٹک نے کہا کہ ایک فنکار کو اپنی شہرت اور شناخت کو برقرار رکھنے کے لیے بہت کچھ کرنا ہوتا ہے جس میں لباس، خوراک، اس کا خوبصورت نظر آنا جیسے عوامل شامل ہیں جس کے لیے اسے خرچہ کرنا پڑتا ہے، تاہم اس کے لیے اس کا معاوضہ انتہائی کم ہوتا ہے۔

بختیار خٹک کے بقول جس اداکار یا فنکار کے ساتھ لوگ ایک سیلفی بنانے کو ترستے ہیں، جب وہ کسی محکمے میں مدد کے لیے جاتا ہے تو سب آنکھیں پھیر لیتے ہیں۔