پاکستانی خواجہ سرا کی مختصر فلم ’رانی‘بین الاقوامی فلم فیسٹیول میں منتخب

Muhammad Qaisar Kamran Siddiqui
September 12, 2018

پاکستان کے مشہور خواجہ سرا ماڈل کامی سڈ کی پہلی مختصر فلم ’رانی‘ بین الاقوامی شہرت یافتہ این بی سی یونیورسل شارٹ فلم فیسٹیول کیلئے منتخب کرلی گئی ہے۔

امریکی شہر لاس اینجلس میں 24 اکتوبر کو ہونے والے بین الاقوامی فلم فیسٹول میں پاکستانی فلم رانی کی نمائش کی جائے گی، فیسٹیول میں 3500 فلموں میں سے 6 کا انتخاب کیا گیا ہے، پاکستانی فلم رانی بھی ان فلموں میں شامل ہے۔

مختصر فلم ’رانی ‘ میں مرکزی کردار ادا کرنے والی پاکستان کی خواجہ سرا ماڈل و اداکار کامی سڈ نے سماء ڈیجیٹل سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ فلم کے فیسٹیول میں منتخب ہونے پر بے پناہ خوشی ملی ہے، ہماری محنت رنگ لائی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ فلم رانی کی کہانی اور معاشرے کی حقیقی زندگی میں مماثلت ہے، فلم میں خواجہ سرا کی زندگی کو اس طرح پیش کیا گیا ہے جیسے وہ حقیقی معاشرے میں زندگی بسر کرتے اور طرح طرح کی مشکلات اٹھاتے ہیں۔

کامی سڈ نے کہا کہ خواجہ سراؤں کو بھی پاکستان کی فلم اور ڈرامہ انڈسٹری میں موقع دینا چاہئے لیکن صرف ترس کھا کر نہیں بلکہ ان کی صلاحیتوں کو تسلیم کرتے ہوئے ایسا ہونا چاہئے۔

فلم ’’رانی‘ کی کہانی کراچی کی سڑکوں پر کھلونے فروخت کرنے والے خواجہ سرا کی زندگی پر مبنی ہے، جس کو ایک روز ایسا بچہ ملا جسے اس کے خاندان والے چھوڑ چکے تھے۔

فلم کے ہدایت کار امریکا سے تعلق رکھنے والے حماد رضوی ہیں جبکہ اسے گرے ہاؤس پروڈکشن کی جانب سے پیش کیا گیا ہے۔

کامی سڈ نے ماڈلنگ کا آغاز 2016ء میں کیا، جس کے بعد وہ 2017ء میں اداکاری کے شعبے میں آگئیں، جہاں لوگوں کی جانب سے ان کی اداکاری کو سراہا گیا، ’رانی‘ ان کی پہلی مختصر فیچر فلم ہے جس میں انہوں نے ایک حقیقی کردار ہی ادا کیا ہے۔