محسن پاکستان ڈاکٹر رتھ فاؤ کی پہلی برسی

August 10, 2018

جزام کے مریضوں کی مسیحا ڈاکٹر روتھ فاو کی پہلی برسی جمعہ کے روز منائی جا رہی ہے، روتھ فاو کے مریض آج بھی انھیں یاد کرکے آبدیدہ ہوجاتے ہیں۔

جزام کے مریضوں کی مسیحا ڈاکٹر روتھ فاو کو ہم سے بچھڑے ایک سال گزر گیا۔ 8 مارچ 1960 کو ڈاکٹر رتھ کیتھرینا مارتھا فاو جرمنی سے پاکستان آئیں تو جذام کے خاتمے کیلیے زندگی وقف کردی۔

 

ڈاکٹر روتھ فاو رنگ و نسل اور مذہب کے فرق کو کبھی خاطر میں نہ لائیں، جذام کے مریضوں کو اس وقت گلے لگایا جب ان کے اپنے ساتھ چھوڑ گئے۔ یہ ڈاکٹر روتھ فاو کی ہی کاوشیں ہیں کہ پاکستان میں جزام کے مریضوں نمایاں کمی آئی ہے۔

 

جزام کے مریض آج بھی ڈاکٹر روتھ فاو کی خدمات کو نہیں بھولے، کئی مریض انہیں ماں کا درجہ دیتے ہیں۔

ڈاکٹر روتھ فاو نے 57 سال تک پاکستان میں انسانیت کی خدمت کی ۔ پاکستانی قوم نے بھی ڈاکٹر رتھ فاؤ کی خدمات کو کبھی فراموش نہیں کیا۔