خواتین علی ظفر کی حمایت میں سامنے آگئیں

Samaa Web Desk
April 24, 2018

کراچی: میشا شفیع کے علی ظفر پر الزامات کے بعد سوشل میڈیا پر مزید خواتین علی ظفر کی حمایت میں آگئیں۔ علی ظفر بینڈ کی دو ارکان کا کہنا ہے میشا نے جس ایونٹ میں ہراسانی کا الزام لگایا وہاں ایسا کوئی واقعہ نہیں ہوا۔


تفصیلات کے مطابق اقصیٰ علی کہتی ہیں۔ جس ایونٹ کا میشا نے ذکر کیا اس میں ایسا کوئی واقعہ نہیں ہوا تھا۔ میشا نے ایسا الزام لگایا جسے بہت سے لوگ غلط ثابت کرسکتے ہیں۔ بینڈ کی دوسری رکن کنزہ منیر نے بھی سوشل میڈیا پر رائے دیتے ہوئے لکھا کہ جیم روم میں دیگر خواتین سمیت دس سے زائد لوگ تھے۔ میشا کا الزام عجیب ہے۔ کنزہ کہتی ہیں کہ ہراسانی کے خلاف عالمی مہم کا سستی شہرت کے لیے اور غلط استعمال روکا جانا ضروری ہے۔

ایک قریبی ذریعے کے مطابق ریہرسل سیشن کا انعقاد علی ظفر کے گھر ہوا تھا اور اس کے دو دن بعد میشا نے علی کے ساتھ کنسرٹ بھی کیا تھا۔ میشا نے اس کنسرٹ کی تصویر اپنے ٹوئیٹر اکاؤنٹ پر شیئر کی تھی اور اس میں علی ظفر کا بھی ذکر کیا تھا۔

قریبی ذریعے کے مطابق اگر ایسا کوئی واقعہ ہوا ہوتا تو میشا شفیع علی ظفر کے ساتھ تصویر شیئر نہ کرتیں۔ سماء