Monday, October 19, 2020  | 1 Rabiulawal, 1442
ہوم   > اینٹرٹینمنٹ

بلوچ فنکار ایک بار پھر مایوس ہوگیا

SAMAA | - Posted: Apr 20, 2018 | Last Updated: 3 years ago
SAMAA |
Posted: Apr 20, 2018 | Last Updated: 3 years ago

رپورٹ:ظہیر ظرف

کوئٹہ: صدارتی ایوارڈ یافتہ گلوکار بشیر بلوچ کو چھ  گھنٹے وزیر اعلی کے دفتر کے باہر بٹھائے رکھنے کے بعد ملے بغیر خالی ہاتھ گھر بھیج دیا گیا۔

بشیر بلوچ نے سماء سے گفتگو میں بتایا کہ چھ گھنٹے تک بٹھائے رکھنے پر شدید کوفت کا سامنا کرنا پڑا مگر مجبوری نے بٹھائے رکھا۔مجھ سے کہا گیا کہ وزیر اعلی مصروف ہیں آپ اپنی درخواست دے دیں، میں نے کہا انھوں نے بلایا ہے تو مل لیں، درخواست انہی کو دوں گا۔چھ گھنٹے بٹھائے رکھنے کے بعد رات 9 بجے کہا گیا کہ آپ 5 دن بعد آئیں۔

 

واضع رہے کہ صدارتی ایوارڈ یافتہ گلوکار بشیر بلوچ کسمپرسی اور بلوچستان حکومت کے اسی رویے کے باعث اپنے ایوارڈز بیچنے پر مجبور ہوئے تھے جس پر دنیا بھر میں ہلچل مچ گئی تھی جس کے بعد وزیر اعلی بلوچستان قدوس بزنجو نے اس خبر کا نوٹس لے کر انھیں گزشتہ روزاپنے آفس بلایا تھا ۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube