Friday, January 28, 2022  | 24 Jamadilakhir, 1443

پراپرٹی ایویلیوایشن کےحوالے سےفیٹف کادباؤ ہے،چیئرمین ایف بی آر 

SAMAA | - Posted: Dec 6, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Dec 6, 2021 | Last Updated: 2 months ago

  

چیئرمین ایف بی آر ڈاکٹر محمد اشفاق احمد کا کہنا ہے کہ پاکستان پر پراپرٹی ایویلیوایشن کے حوالے سے فیٹف کادباؤ ہے۔ 

اسلام آباد میں سینیٹر طلحہ محمود کی زیر صدارت سینیٹ کی قائمہ کمیٹی خزانہ کے اجلاس میں چیئرمین ایف بی آر کا کہنا تھا کہ ہم نے دستیاب وسائل کے مطابق نئے ریٹس کا تعین کیا ہے ہم پراپرٹی کا اوسط ریٹ نکالتے ہیں۔

ڈاکٹر محمد اشفاق احمد کا کہنا تھا کہ پہلے 10 سے 25 فیصد اضافہ کرکے کام چل جاتا تھا لیکن اب وہ وقت نہیں رہا اس لیے ہمیں معاملات درست کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ پراپرٹی ریٹس کے معاملے پر مشیر خزانہ سے مشاورت کے بعد ان کی ہدایات کے بارے میں کمیٹی کو آگاہ کر دیں گے۔ چیئرمین ایف بی آر کا کہنا تھا کہ کراچی کے لوگ نئے پراپرٹی ریٹس پر خوش ہیں اور سندھ حکومت نے ایف بی آر کے کی ایویلیوایشن کو تسلیم کیا ہے تاہم اسٹیک ہولڈرز کے مطابق پنجاب اور اسلام آباد میں ایویلیوایشن زیادہ ہے شائد اسٹیک ہولڈرز مشاورت کے عمل سے مطمئن نہیں ہیں۔

کمیٹی نے ایف بی آر کو پراپرٹی کے نئے ریٹس کا نوٹیفکیشن واپس لینے کی سفارش کرتے ہوئے 15 روز کے اندر معاملے کا ازسر نو جائزہ لینے کی ہدایت کی۔ چیئرمین کمیٹی طلحہ محمود کا کہنا تھا کہ مسئلہ حل ہونے تک پرانا ایس آر او بحال کیا جائے تاکہ مارکیٹ میں پریشانی اور اضطراب کا خاتمہ کیا جاسکے۔

چیئرمین ایف بی آر نے پراپرٹی کی قیمتوں کے تعین کے لیے کمیشن قائم کرنے کی تجویز دیتے ہوئے کہا کہ ایک ایسی مین نیشنل ایویلیوایشن کمیشن قائم کرنے کی ضرورت ہے جس میں وفاق کے ساتھ ساتھ صوبے بھی شامل ہوں۔ 

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube