Friday, January 28, 2022  | 24 Jamadilakhir, 1443

کراچی: بجلی صارفین پر پونے 3ارب روپے کااضافی بوجھ

SAMAA | - Posted: Dec 4, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Dec 4, 2021 | Last Updated: 2 months ago

Electricity

کے الیکٹرک نے اکتوبر میں مہنگی ترین بجلی پیدا کرکے کراچی کے شہریوں پر پونے 3 ارب روپے کا اضافی بوجھ ڈال دیا۔

نیپرا دستاویزات سے انکشاف ہوتا ہے کہ کے الیکٹرک کی جانب سے مہنگی بجلی کی پیداوار نے کراچی کے صارفین پر 2 ارب 45 کروڑ کا اضافی بوجھ ڈال دیا۔

دستاویزات کے مطابق اکتوبر میں کے الیکٹرک نے اپنے پاور پلانٹس سے 75 کروڑ 80 لاکھ یونٹس بجلی پیدا کی، جن کی لاگت 16 ارب 61 کروڑ روپے رہی۔

کے الیکٹرک کی اپنے پاور پلانٹس کی پیداواری لاگت 21 روپے 91 پیسے رہی جبکہ آئی پی پی پیز سے 9 روپے 22 پیسے فی یونٹ بجلی خریدی گئی۔ یوں کے الیکٹرک نے اپنے پلانٹس سے نجی بجلی گھروں کی نسبت 130 فیصد مہنگی بجلی پیدا کی۔ آئی پی پیز سے 1 ارب 18 لاکھ یونٹ 9 ارب روپے میں خریدے گئے۔

نیپرا دستاویزات سے یہ بھی پتہ چلتا ہے کہ بجلی کی مہنگی پیداوار کی وجہ گیس کا کم پریشر ہے، جس کے باعث فرنس آئل ڈیزل اور مہنگے درآمدی کوئلے سے بجلی پیدا کی گئی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube