Friday, January 28, 2022  | 24 Jamadilakhir, 1443

اسٹاک مارکیٹ میں دوسرے روز بھی مندی کا رجحان

SAMAA | - Posted: Dec 3, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Dec 3, 2021 | Last Updated: 2 months ago
PSX down

فوٹو: آن لائن

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں جمعہ 3دسمبر کو ٹریڈنگ کے دوران اتار چڑھاؤ ديکھا جا رہا ہے، پہلے کاروباری سیشن کا اختتام منفی زون میں ہوا اور 100 انڈیکس 197 کی کمی سے 43 ہزار 37 پوائنٹس پر بند ہوا۔

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعرات سے شدید مندی دیکھنے میں آرہی ہے، حصص کی فروخت کا رجحان زیادہ ہونے کے باعث جمعرات کو کے ایس ای 100 انڈیکس 2 ہزار 282 پوائنٹس کی کمی سے 43 ہزار 89 پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا۔

تجزیہ کاروں کے مطابق جمعرات کو اسٹاک مارکیٹ میں ہونے والی مندی رواں سال کے کسی بھی ایک دن میں سب سے بڑی مندی ہے۔

اس سے قبل گزشتہ سال، 29 مارچ 2020ء کو بھی کرونا وباء اور لاک ڈاؤن کے سبب اسٹاک مارکیٹ میں تقریباً اتنے ہی پوائنٹس ایک دن میں گرے تھے لیکن اس وقت انڈیکس 28 ہزار کی سطح پر تھا، اس لیے مارکیٹ گرنے کی شرح جمعرات کے مقابلے میں کم تھی۔

اسٹاک مارکیٹ میں مندی کی وجوہات

معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ 100 انڈیکس میں کمی ایک بڑی وجہ پاکستان کی درآمدات کا نومبر میں 8 ارب ڈالر تک پہنچنا ہے جو کسی بھی ماہ کی درآمدات کی بلند ترین سطح ہے۔ اس کے برعکس نومبر میں برآمدات صرف 2.93 ارب ڈالر رہی جس سے نومبر میں تجارتی خسارہ 5 ارب ڈالر اور رواں مالی سال کے پہلے پانچ ماہ میں 20.75 ارب ڈالر تک پہنچ گیا۔

اس کے علاوہ دوسری بڑی وجہ اسٹیٹ بینک کی جانب سے متوقع شرح سود میں مزید اضافہ ہے، جس کے امکانات جمعرات کو مزید بڑھ گئے کیونکہ اسٹیٹ بینک کی جانب سے یکم دسمبر کو جو ٹریژری بلز جاری ہوئے اس پر کامیاب آکشنز کے نتائج کے مطابق 3 ماہ کے ٹی بلز پر منافع کی شرح 10.39 فیصد اور 6 ماہ کے ٹی بلز پر 11.05 فیصد ہے۔

اس سے اندازہ لگایا جا رہا ہے کہ اسٹیٹ بینک 14 دسمبر کو آنے والی مانیٹری پالیسی میں شرح سود ایک سے ڈیڑھ فیصد تک مزید بڑھا سکتا ہے، گزشتہ ماہ بھی شرح سود میں ڈیڑھ فیصد اضافہ کیا گیا تھا جس کے بعد شرح سود 8.75 فیصد پر پہنچ گئی۔

سرمایہ کاروں کی مانیٹری پالیسی میں شرح سود کے بڑھائے جانے کے امکان کے باعث تشویش بڑھ گئی ہے اور سرمایہ کار محتاط ہوکر حصص کی ٹریڈنگ کر رہے ہیں۔

شرح سود میں مزید اضافے کے امکانات مہنگائی کی رفتار سے بھی بڑھ رہے ہیں، مہنگائی کی شرح نومبر میں 11.5 فیصد ہوگئی ہے جو گزشتہ 21 ماہ کی بلند ترین سطح ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube