Friday, December 3, 2021  | 27 Rabiulakhir, 1443

بجلی کی قیمت میں 2.5 روپے فی یونٹ کا اضافہ

SAMAA | - Posted: Oct 27, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Oct 27, 2021 | Last Updated: 1 month ago
Electricity

فوٹو: اے ایف پی

نیپرا نے ایک ماہ کیلئے فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی مہنگی کرنے کی منظوری دے دی ہے۔

نوٹیفیکشن کے مطابق  نیپرا نے ستمبر کیلیے بجلی 2.5 روپے فی یونٹ مہنگی کردی جس سے صارفین پر 38 ارب روپے سے زائد کا اضافی بوجھ پڑے گا۔بجلی کی قیمت  میں اضافے  کا اطلاق کے الیکٹرک صارفین پر نہیں ہوگا۔

نیپرا حکام نے سماعت کے دوران بجلی کی پیداواری لاگت میں اضافے کی وجہ پوچھی تو نیشنل پاور کنسٹرکشن کارپوریشن ( این پی سی سی) حکام نے بتایا کے ستمبر میں بجلی کی طلب میں 7 فیصد اضافہ ہوا  اور گیس کی کمی کی وجہ سے فرنس آئل سے بجلی پیدا کرنا پڑی جس کی وجہ سے پیداواری لاگت میں اضافہ ہوا۔

سماعت کے دوران ایڈیشنل سیکرٹری پاور وسیم مختار نے اتھارٹی کو بتایا کہ ملک میں گیس کے ذخائر تیزی سے کم ہو رہے ہیں جب تک نیا ٹرمینلز نہیں بنتے این جی کی فراہمی میں بھی رکاوٹ بنے رہیں گے ۔

سی پی پی اے کی نیپرا کو بجلی کی قیمت میں اضافے کی درخواست

سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی پی پی اے) نے 20 اکتوبر کو نیپرا کو ایک ماہ کے لیے فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمت میں 2 روپے 65 پیسے فی یونٹ مہنگی کرنے کی درخواست دی تھی۔

 درخواست کے مطابق ستمبر کے مہینے میں 13 ارب یونٹ بجلی پیدا کی گئی جس کی لاگت 104 ارب روپے رہی۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ ڈیزل پر 21 روپے 74 پیسے فی یونٹ، فرنس آئل پر 19٫11 روپے 23 پیسے اور ایل این جی سے 14 روپے 91 پیسے فی یونٹ میں بجلی پیدا ہوئی۔ ایران سے گزشتہ ماہ13 روپے  پیسے میں بجلی درآمد کی گئی، لائن لاسز کی مد میں 20 پیسے فی یونٹ کو بھی بجلی مہنگی کرنے کا جواز ٹھہرایا گیا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube