Monday, September 20, 2021  | 12 Safar, 1443

قومی اسمبلی میں فنانس بل کثرت رائے سے منظور

SAMAA | - Posted: Jun 29, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 29, 2021 | Last Updated: 3 months ago

فائل فوٹو

قومی اسمبلی میں فنانس بل 2021 -22 منظور کرلیا گیا ہے۔ بل کے حق میں 172 ، جب کہ مخالفت میں 138 ووٹ ڈالے گئے۔ وفاقی وزیرِ خزانہ شوکت ترین نے قومی اسمبلی میں فنانس ترمیمی بل 2021-22 پیش کیا۔

منگل 29 جون کو قومی اسمبلی  میں خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا کہ موجودہ بجٹ مکمل طور پر غریب کیلئے ہے، پہلی بار بجٹ میں غریب کیلئے روڈ میپ تیار کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ڈیڑھ کروڑ افراد کی فہرست ہے ہمارے پاس جو جان کر ٹیکس ادا نہیں کرتے، جان کر ٹیکس ادا نہ کرنے والوں کو گرفتار کیا جائے گا۔ سالانہ ڈھائی کروڑ سے زائد آمدن والا اگر ٹیکس نہیں دے گا تو اسے پکڑا جائے گا۔

وزیر خزانہ کا یہ بھی کہنا تھا کہ زراعت پر پیسے خرچ نہ کرنے کی وجہ سے اشیاء خور ونوش پر مہنگائی بڑھی۔ زراعت سے متعلق انہوں نے بتایا کہ ہم نے زراعت کے لیے 63 ارب روپے رکھے ہیں، جب کہ کل 150 ارب روپے زراعت پر خرچ کریں گے۔ کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتوں میں کمی صرف زراعت کی ترقی سے ممکن ہے، زرعی شعبہ پر حکومت ڈیڑھ سو ارب روپے لگا رہے ہیں۔

 بل کے مطابق پولٹری فیڈ پر سیلز ٹیکس میں 7 فیصد کمی کی ترمیم کی گئی ہے، جس کے بعد پولٹری فیڈ سیلز ٹیکس 17کے بجائے 10فیصد کردیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ ایوان میں پیش کیے گئے بل کے حکومت میں 172 جب کہ 138 ووٹ مخالفت میں ڈالے گئے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube