کراچی:سپرہائی وے پرقائم مویشی منڈی میں جانوروں کی آمد جاری

SAMAA | - Posted: Jun 17, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Jun 17, 2021 | Last Updated: 1 month ago

بغیر ماسک منڈی میں داخلے کی اجازت نہیں

کراچی کی سپر ہائی وے پر قائم ایشیا کی سب سے بڑی مویشی منڈی میں قربانی کے جانوروں کو لانے کا سلسلہ جاری ہے۔ جہاں 10 ہزار سے زائد جانور لائے گئے ہیں۔ منڈی میں بغیر ماسک داخلے کی اجازت نہیں ہوگی۔

سپرہائی وے پر قائم عارضی مویشی منڈی کی رونق ہر گزرتے دن کے ساتھ بڑھ رہی ہے، منڈی کا باقاعدہ افتتاح 10 جون کو کیا گیا تھا، جس کے بعد گجرانوالہ، راجن ہور، شیخوپورہ، رحیم یارخان، اوکاڑہ، میرپور خاص، نوشہرو فیروز، حیدرآباد، کوئٹہ اور سبی سمیت کئی شہروں سے 10 ہزار سے زائد قربانی کے جانور پہنچائے گئے ہیں۔

سپر ہائی وے پر قائم اس مویشی منڈی میں گائے، بیل، بکرے شامل ہیں۔ 900 ایکٹر کے وسیع رقبے پر پھیلی منڈی میں 6 لاکھ جانوروں کی گنجائش ہے۔ ترجمان مویشی منڈی یاور رضا چاولہ کے مطابق قربانی کے جانوروں کی خرید و فروخت کیلئے ایک ماہ کے نوٹس پر مویشی منڈی انتظامیہ نے ایک نیا شہر آباد کردیا ہے جہاں عیدالضحیٰ تک لاکھوں خریدار آتے رہیں گے۔

مویشی منڈی میں 6 لاکھ جانوروں کی گنجائش رکھی گئی ہے۔ ہر گزرتے دن کے ساتھ جانوروں کی آمد میں تیزی آتی جائے گی۔ مویشی منڈی کو خوبصورتی، قیمت اور رنگ کے لحاظ سے اسے مختلف بلاکس میں تقسیم کیا گیا ہے۔ جہاں خریداروں کو پہلے آئے پہلے پایئے کی بنیاد پر ایڈجسٹ کر رہے ہیں۔

بیوپاریوں کا کہنا ہے کہ سپرہائی وے کی منڈی میں ہر سہولت مل رہی ہے اور جانواروں کے اچھے دام مل جاتے ہیں، جس کی وجہ سے ہم ہر سال کراچی کا رخ کرتے ہیں۔ شہریوں کی آمد کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے نوجوان ٹولوں کی شکل میں منڈی کا رخ کر رہے ہیں لیکن خریداری کی شرح ابھی کم ہے، دن گزرنے کے ساتھ اور عید قرباں قریب آنے پر خریداری میں بھی اضافہ ہوگا۔ بیوپاری متوقع مون سون بارشوں کے حوالے سے تشویش کا اظہار کر رہے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ بہت سارے بیوپاری بارش کی صورت حال کے پیش نظر ابھی آنے سے کترارہے ہیں۔

ترجمان مویشی منڈی کا یہ بھی کہنا تھا کہ پاکستان کے معاشی حب کراچی میں قربانی کے جانوروں کی کروڑوں روپے مالیت کی خرید وفروخت ہوگی جس سے بیوپاریوں کو فائدہ ہوگا، جب کہ خوانچہ فروشوں، ریڑھی بان، کیبن، کھانے پینے کے اسٹال اور ہوٹلز لگانے والوں اور پرائیویٹ لوڈرز گاڑیاں رکھنے والوں کو روزگار کے مواقع میسر ہوں گے۔

مویشی منڈی میں جانوروں کو24 گھنٹے پانی کی سپلائی کا انٹظام کیا گیا ہے اور داخلہ انٹری کارڈ کی بنیاد پر کیا جارہا ہے۔ منڈی انتظامیہ کے مطابق شہریوں کیلئے سیکیورٹی کے مؤثر انتظامات کئے گئے ہیں۔ پانی ،بجلی اور دیگر سہولیات بھی دستیاب ہیں، جب کہ کرونا وائرس کی روک تھام کیلئے مقررہ ایس او پیز پر عمل درآمد کیا جارہا ہے جس کے تحت کسی کو بغیر ماسک داخلے کی اجازت نہیں ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube