Friday, September 24, 2021  | 16 Safar, 1443

مسلسل دسویں ماہ 2ارب ڈالر سے زائدکی ترسیلات زر کاریکارڈ

SAMAA | - Posted: Apr 12, 2021 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 12, 2021 | Last Updated: 5 months ago

فوٹو: العربیہ

پاکستان میں مسلسل 10ویں ماہ بھی مارچ کے مہینے میں بیرون ملک پاکستانیوں کی جانب سے ملک میں 2 بلین ڈالرز سے زائد رقم پاکستان منتقل کی گئی ہے۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق اوورسیز پاکستانیوں کی جانب سے یہ رقوم گزشتہ برس مارچ کے مقابلے میں 43 فیصد زائد ہے جبکہ گزشتہ ماہ فروری کے مقابلے 20فیصد زائد رقم پاکستان منتقل کی گئی ہے۔

مالی سال 2021 میں جولائی سے مارچ کے درمیان ترسیلات زر 21.5 ارب ہوئیں جبکہ مالی سال 2020 کی نسبت اس عرصے میں 26فیصد زائد ہے۔

ایکسچینج کمپنیز ایسوسی ایشن آف پاکستان کے سیکریٹری ظفر پراچہ کا کہنا ہے کہ اوورزسیز پاکستانیوں کی جانب سے بھیجی گئی رقوم کےباعث ڈالر کی قدر میں کمی واقع ہورہی ہے اور ترسیلات زر میں اضافے کا مطلب زرمبادلہ یا ڈالر کی ملک آرہے ہیں۔

رواں برس بیرون ملک کام کرنے والوں نے ریکارڈ رقوم پاکستان بھیجی ہیں۔ سب سے زیادہ رقوم چار ممالک میں ملازمت یا کاروبار کرنے والوں نے پاکستان منتقل کیں۔

اسٹیٹ بینک پاکستان کے اعداد و شمار کے مطابق سب سے زیادہ رقوم سعودی عرب میں کام کرنے والوں نے پاکستانیوں نے بھیجیں ان کی مالیت تقریبا 3.3 ارب ڈالر تھی۔ دوسرے نمبر پر متحدہ عرب امارات آتا ہے، جہاں کام کرنے والوں نے 2.4 ارب ڈالر پاکستان بھیجے۔ تیسرے نمبر پر برطانیہ سے اوورسیز پاکستانیوں نے 1.6 ارب ڈالر جبکہ امریکا سے 1 ارب ڈالر پاکستان منتقل ہوئے۔

اسٹیٹ بینک پاکستان کے اعداد و شمار کے مطابق بیرون ملک کام کرنے والوں نے نومبر کے مہینے میں 2.34 ارب ڈالر پاکستان بھیجے۔ اکتوبر کے مقابلے میں یہ رقم 2.4 فیصد زائد بنتی ہے۔ اگر اس کا موازنہ اکتوبر 2019 کے مقابلے رقم تقریبا 28فیصد زائد ہے۔

رواں مالی سال کے پہلے پانچ ماہ میں مجموعی طور پر تقریبا 12 ارب ڈالر پاکستان بھیجے گئے، جو گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے کی نسبت تقریبا 27 فیصد زیادہ ہیں۔

ترسیلات زر کے لیے پاکستان حکومت اور اسٹیٹ بینک مسلسل آسانیاں پیدا کر رہے ہیں۔ منی لانڈرنگ کے راستے مسدود کرتے ہوئے قانونی ڈیجیٹل راستے کھولے جارہے ہیں۔ رقوم کے تبادلے کی مارکیٹوں میں نئے ضوابط متعارف کروائے جا رہے ہیں، جس کے نتیجے میں ترسیلات زر میں اضافہ ہو رہا ہے۔ چار دسمبر کے اعداد و شمار کے مطابق اس جنوبی ایشیائی ملک کے غیرملکی لیکوئڈ زرمباددلہ کے ذخائر بیس اعشاریہ چار ارب ڈالر تھے۔

پاکستان اسٹیٹ بینک نے ترسیلات زر میں اضافے کے لیے حال ہی میں اوورسیز پاکستانیوں کے لیے روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ بھی متعارف کروایا تھا۔ حیران کن طور پر روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس کے ذریعے یومیہ 7.7 ملین ڈالر پاکستان پہنچ رہے ہیں۔ مجموعی طور پر ان اکاؤنٹس سے ابھی تک تقریبا 140 ملین ڈالر پاکستان پہنچے ہیں۔ ان میں سے 81 ملین نیا پاکستان سیرٹیفیکیٹس میں انویسٹ کیے گئے ہیں۔

دوسری جانب پاکستانی وزیراعظم عمران خان نے اپنے ایک ٹوئٹر پیغام میں بیرون ملک پاکستانیوں کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا کہ انہوں نے مسلسل 10ماہ 2 بلین ڈالرز سے زائد رقوم پاکستان بھیجیں جو ایک ریکارڈ ہے جس پر وہ اس پر ان کے شکر گزار ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube