پاکستان کیلئے 50کروڑ ڈالرکی اگلی قسط جاری کرنے کی منظوری

SAMAA | - Posted: Mar 25, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 25, 2021 | Last Updated: 4 months ago

IMF_artwork_

انٹرنیشنل مانیٹرنگ فنڈ (آئی ایم ایف) کے ایگزیکٹیو بورڈ نے پاکستان کے لیے 50 کروڑ ڈالر کی اگلی قسط فوری جاری کرنے کی منظوری دے دی۔

آئی ایم ایف نے پاکستان کی معاشی صورتحال پر اطمینان کا اظہار کيا ہے اور ایف اے ٹی ایف ایکشن پلان کی جلد تکمیل کو بھی ضروری قرار دے دیا ہے۔

پريس ريليز ميں کہا گيا ہے کہ سرکاری اداروں کی مینجمنٹ اور پاؤر سیکٹر میں ریکوری بہتر کی جا رہی ہے۔ گردشی قرضے کے مینجمنٹ پلان اور نیپرا ایکٹ میں ترمیم سے مالی بہتری آئے گی۔ مالی سال کے پہلے 6 ماہ میں مالیاتی کارکردگی بہتر رہی جبکہ مالی اہداف کی تکمیل کا انحصار جی ایس ٹی اور انکم ٹیکس میں اصلاحات پر ہے۔

آئی ایم ایف کے مطابق کرونا وباء کی وجہ سے پاکستانی معیشت کے لیے چیلنجز برقرار ہیں البتہ پاکستانی اتھارٹیز نے قرض پروگرام کے تحت تسلی بخش پیش رفت کی۔ حکومت نے بجلی کی قیمتوں میں اضافے سمیت زیادہ تر شرائط پوری کیں۔

آئی ایم ایف پاکستان کو 50کروڑ ڈالر دیگا

پاکستان کو ایک ارب 45 کروڑ ڈالر پہلے ہی مل چکے ہیں جبکہ 6ارب ڈالر کا قرض پروگرام ایک سال کے وقفے کے بعد باقاعدہ بحال کر دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال 16 فروری کو پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان 50 کروڑ ڈالر قرض کا معاہدہ طے پایا تھا۔ ایگزیکٹو بورڈ کی منظوری سے رقم جاری کی جانے تھی۔

پاکستان نے آئی ایم ایف کے ساتھ 39 ماہ کے ای ایف ایف یا بیل آؤٹ پروگرام پر دستخط کیے تھے۔ اس پروگرام کے تحت پاکستان کو 3 فیصد سے بھی کم شرح سود پر 10کروڑ 80 لاکھ ڈالرز اگلے 10 سال میں ادا کرنے ہوں گے۔

ان شرائط میں توانائی کے شعبے میں اصلاحات، ٹیکس نیٹ کو وسیع کرنا، مارکیٹ پر مبنی زر مبادلہ کی شرح اور حکومت کی ملکیت کمپنیوں کی تنظیم نو شامل ہیں جوکہ خسارے میں ہیں۔

انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ سے معاہدہ پاکستان کی جانب سے اصلاحاتی پروگرام کے دوسرے سے پانچویں ریویو کی تکمیل کے بعد طے پایا تھا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube