ہنڈائی نئی سیڈان ایلانٹرا کب لانچ کریگی؟

SAMAA | - Posted: Mar 5, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Mar 5, 2021 | Last Updated: 1 month ago

امکان ہے کہ ہنڈائی کمپنی رواں ماہ (مارچ) کے درمیان تک اپنی 2 ہزار سی سی کار ایلانٹرا لانچ کردے گی، جو پاکستان میں تیار کی جانیوالی مہنگی ترین سیڈان ہوگی۔ ماہرین کو توقع ہے کہ ایلانٹرا پاکستان میں تیار کی جانیوالی حالیہ مہنگی ترین گاڑی ہونڈا سوک ٹربو سے بھی زیادہ قیمت کی ہوگی۔

ہنڈائی پہلے ہی پاکستان میں ایچ 100 پورٹر پک اپ ٹرک اور ایس یو وی ٹکسن تیار کررہی ہے۔ ایچ 100 پورٹر اس سے قبل شہزور کے نام سے جانا جاتا تھا۔ کمپنی درآمد شدہ گاڑیاں گرینڈ اسٹاریکس، آیونک ہائیبرڈ اور سات سیٹر سانتا ایف ای بھی فروخت کررہی ہے۔

آٹو سیکٹر کے ماہر اور کار اسپرٹ پی کے ڈاٹ کام کے نام سے بلاگنگ ویب سائٹ چلانے والے عثمان انصاری کا کہنا ہے کہ میں سمجھتا ہوں کہ اگر ہنڈائی ایلانٹرا 2 ہزار سی سی ویری اینٹ لانچ کررہی ہے تو وہ ٹویوٹا کرولا گرانڈے اور ہونڈا سوک سے بھی زیادہ قیمت کے ساتھ ساتھ مہنگی ترین گاڑی ہوگی۔

کمپنی ذرائع نے سماء منی کو بتایا کہ ہنڈائی مستقبل کی منصوبہ بندی شیئر کئے بغیر ابتدائی طور پر ایلانٹرا کا 2 ہزار سی سی ویری اینٹ لانچ کرے گی۔

عثمان انصاری نے مزید کہا کہ ہنڈائی اپنی گاڑی کی قیمت دیگر مدمقابل گاڑیوں سے تھوڑا سا اوپر رکھ کر ایک پریمیم برانڈ کی حیثیت سے پاکستان میں پوزیشن حاصل کررہی ہے۔

وہ مزید کہتے ہیں کہ ہم نے ماضی میں دیکھا کہ جب انہوں نے اپنی کراس اوور ایس یو وی ٹکسن لانچ کی تو اس کی قیمت ’کیا‘ کی اسپورٹیج سے زیادہ رکھی، اس لئے میں سمجھتا ہوں کہ وہ ایلانٹرا کے ساتھ بھی کچھ ایسا ہی کریں گے۔

دنیا بھر میں ایلانٹرا کو کرولا اور سوک سے ملتا جلتا تصور کیا جارہا ہے جس پر عثمان انصاری ہنڈائی کی جانب سے خود کو پریمیم برانڈ کی حیثیت سے رکھنے کی حکمت عملی پر تنقید کرتے ہیں۔ ٹاپ سوک ویری اینٹ کی قیمت 47 لاکھ روپے ہے جبکہ کرولا کی مہنگی ترین گاڑی آلٹس گراندے 40 لاکھ روپے میں دستیاب ہے۔ ان کا خیال ہے کہ ایلیٹ کلاس کو راغب کرنے کیلئے کمپنی 2 ہزار سی سی ایلانٹرا کی قیمت 47 لاکھ روپے سے زیادہ رکھ سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کمپنی ایک ایسا ماڈل کچھ تبدیلیوں کے ساتھ لارہی ہے جو دنیا بھر میں 2014ء میں لانچ کیا جاچکا ہے، ہنڈائی انٹرنیشنل ایلانٹرا کا نیا ماڈل امریکا، یورپ اور آسٹریلیا میں رواں سال متعارف کراچکی ہے، تاہم پاکستان میں یہ کمپنی پرانا ماڈل لارہی ہے جسے ہنڈائی انٹرنیشنل مرحلہ وار مارکیٹ میں لاچکی ہے۔

جے ایس گلوبل کے سینئر تجزیہ کار احمد لاکھانی کا کہنا ہے کہ پاکستان تیسری دنیا سے تعلق رکھنے والا ملک ہے، اس لئے جدید ماڈل پیش کرنا کار کمپنیوں کیلئے کاروباری لحاظ سے ترجیحی معاملہ نہیں بنتا، میرا خیال ہے کہ ہنڈائی کمپنی ایلانٹرا کا نیا ماڈل لانچ کرے گی تو وہ کراس اوور ایس یو ویز کی مارکیٹ میں قیمتوں کی بنیاد پر داخل ہوسکتی ہے جو اسے خریداروں کیلئے غیر موزوں بناسکتی ہے۔

ہنڈائی نشاط موٹر، نشاط گروپ، سوجیٹز کارپوریشن (جاپان) اور ملت ٹریکٹرز لمیٹڈ کا مشترکہ منصوبہ ہے۔ کمپنی کی سالانہ پیداواری صلاحیت 15 ہزار گاڑیاں ہے جسے کمپنی متاثر کن طلب پر بڑھا بھی سکتی ہے۔ ملک بھر میں اس کے ڈیلرز کی تعداد 14 ہے جبکہ 6 دیگر سے معاملات ابھی حتمی مراحل میں ہیں۔

ہنڈائی کو اپنی ایس یو وی ٹکسن کی قیمت اگست میں لانچ کے اگلے ہی دن 54 لاکھ سے بڑھا کر 56 لاکھ روپے کرنے پر شدید تنقید کا سامنا ہے۔ کمپنی حکام نے بتایا کہ اسے چند گھنٹوں میں ہی تعارفی قیمت میں دستیاب گاڑیوں سے کہیں زیادہ آرڈرز ملے۔

ذرائع کے مطابق کمپنی کو وباء کے دوران ٹکسن لانچ کرنے پر اتنی زبردست طلب کی توقع نہیں تھی۔

ٹکسن کا اصل مقابلہ کیا اسپورٹیج سے ہے، دلچسپ بات یہ ہے کہ ہنڈائی، کیا کی پیرنٹ کمپنی ہے، یہ دونوں کورین کمپنیاں ہیں۔

ماہرین کو توقع ہے کہ دونوں کورین کمپنیاں پاکستان کی آٹو انڈسٹری میں جاپانی کار ساز کمپنیوں کیلئے مقابلے کی فضاء پیدا کریں گی۔

WhatsApp FaceBook

One Comment

  1. Fed up  March 6, 2021 7:53 am/ Reply

    ھنڈائ نشاط نے پہلے سے موجود کار مافیا کے ساتھ شروع دن سے ھاتھ ملایا ہے۔ یہ پرانے ماڈل زیادہ قیمت پر بیچینے کی حکمت عملی پر چل رہے ہیں۔

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube