Tuesday, January 25, 2022  | 21 Jamadilakhir, 1443

سندھ کا1241ارب روپےبجٹ آج پیش ہوگا

SAMAA | - Posted: Jun 17, 2020 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Jun 17, 2020 | Last Updated: 2 years ago

سندھ حکومت نے نئے مالی سال کے بجٹ کی منظوری دے دی ہے۔وزيراعلیٰ سندھ آج شام بجٹ پيش کريں گے۔ سندھ کا آئندہ مالی سال کا بجٹ ساڑھے 1241 ارب روپے کے قريب ہوگا جس ميں ساڑھے 18 ارب روپے کا خسارہ بھی ہوگا۔ پہلی بار ترقياتی منصوبوں ميں ايک بھی نئی اسکيم شامل نہيں ہے۔ بجٹ میں ملازمین کی تنخواہوں میں اضافےکافیصلہ نہیں ہوسکا ہے اوراب کابینہ اس حوالے سے کوئی فیصلہ کرے گی۔

نئے مالی سال کےسندھ حکومت کے بجٹ کی کابينہ نے منظوری دے دی ہے۔وزيراعلیٰ سندھ اسمبلی میں پیش کریں گے۔ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ بجٹ ميں غريبوں،کاشت کاروں،سرکاری ملازمين ونجی شعبےکوريليف دياگيا،مشکلات کے باوجود سندھ حکومت نے ترقیاتی کاموں کیلئے بجٹ رکھا ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ ہم نے کوشش کی ہے کہ ایک متوازن بجٹ پیش کریں،عوام کو تنہا نہیں چھوڑیں گے۔

سندھ کا آئندہ مالی سال کابجٹ 1241 ارب روپےکےقريب ہوگا۔نئے بجٹ میں ساڑھے اٹھارہ ارب روپے کا خسارہ بھی ہوگا۔وفاق سے 731ارب روپے وصول ہوں گے۔

اس کےعلاوہ صوبائی ٹيکس کی مد ميں 313ارب روپے وصول ہوں گے۔ترقیاتی پروگرام کے لیے 165 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔ ترقیاتی منصوبوں میں پہلی بارایک بھی نئی اسکیم شامل نہیں ہے۔

اس بجٹ میں ملازمین کی تنخواہوں میں اضافےکافیصلہ نہیں ہوسکا ہے اوراب کابینہ اس حوالے سے کوئی فیصلہ کرے گی۔زرعی شعبےکوترقی دینےکیلئے10ارب روپےکی سبسڈی اورقرض شامل ہے۔

کاشت کاروں کوکھاد،بیج،زرعی دوائيں50فیصدکم سبسڈی نرخ پرملیں گے۔چھوٹے کاروبار کے لیے 10 ارب روپے کے قرضے رکھےگئے ہیں۔

صحت کے حوالے سے سندھ حکومت کے بجٹ میں کرونا وائرس کے لیے 5 ارب روپے الگ سے مختص کیےگئے ہیں۔محکمہ صحت کے بجٹ کو120ارب سےبڑھاکر140 ارب روپے کیا گیا ہے۔

اس کےعلاوہ تعلیم کےشعبےکیلئے 22ارب روپے اضافے کے ساتھ 196ارب رکھے گئے۔محکمہ بلدیات کابجٹ ساڑھے5 ارب سےبڑھاکر40ارب روپےکیا گیا۔بلدیاتی اداروں کی گرانٹ میں6ارب روپےکااضافہ کرکے80ارب کیاگیا۔ سندھ میں ٹڈی دل کے خاتمے کیلئے 45 کروڑ روپے مختص کیے گئےہیں۔

ٹیکس کے حوالے سے سیلزٹیکس آن سروسزکی مدمیں سندھ ریونیوبورڈکو135ارب روپے کاہدف دیا گیا ہے۔امن وامان سمیت دیگراداروں کے بجٹ میں کوئی اضافہ نہیں کیاگیا ہے۔

سندھ اسمبلی کے  بجٹ اجلاس ميں صرف 25 فیصد ارکان شرکت کر سکیں گے جبکہ ديگر اراکين بجٹ سیشن میں آن لائن شرکت کریں گے۔سندھ اسمبلی کےقواعد وضوابط میں ترمیم کردی گئی ہے۔آن لائن سندھ اسمبلی سیشن میں ارکان گھربیٹھےتقاریر کرسکیں گے۔ارکان گھر بیٹھے ایوان کی کارروائی میں شریک ہوسکیں گے۔اسپیکرسندھ اسمبلی جب چاہیں گےآن لائن سیشن کال کرسکیں گے۔کروناوائرس سےمتاثرہ ارکان سندھ اسمبلی بجٹ سیشن میں حصہ لےسکیں گے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube