Thursday, July 9, 2020  | 17 ZUL-QAADAH, 1441
ہوم   > معیشت

نیشنل سیونگ نے شرح منافع ایک سال میں تیسری مرتبہ کم کردیا

SAMAA | - Posted: Jun 2, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Jun 2, 2020 | Last Updated: 1 month ago

حکومت نے ایک سال کے اندر تیسری مرتبہ نیشنل سیونگ سے منافع کی شرح کم کردی ہے۔سیونگ اکاؤنٹ سےاب 2فیصد کمی کے بعد 6.5 فیصد منافع ملے گا۔

شرح منافع پچھلے برس 12 فیصد سے زیادہ رہا تھا۔ اس برس پاکستان کے سب سے بڑے انوسٹمنٹ اور فائنانشل ادارے نیشنل سیونگ نے سیونگ اسکیمز کے لیے منافع کم کرنا شروع کردیا ہے۔اس سے قبل جنوری اور اپریل میں شرح منافع کم کیا گیا۔ دو جون کو اعلان کردہ ریٹس ایک سال میں تیسری بار شرح سود میں کمی ہے۔

نئے ریٹس کے تحت،اگر آپ سیونگ اکاؤنٹ میں ایک لاکھ روپے جمع کروائیں گے تو آپ کو ہر سال ساڑھے 6 ہزار روپے منافع ملے گا۔ پنشنرز بینیفٹ اکاؤنٹ اور بہبود سیونگ سرٹیفیکیٹ سے سالانہ منافع 9.84 فیصد ملے گا۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے بھی تین ماہ میں اپنی مانیٹری پالیسی کی شرح  5.25 فیصد کی ہے،جس سے شرح سود 8 فیصد تک آگئی ہے۔

آج کے شرح سود میں کمی کے اعلان کے بعد نیشنل سیونگز کے ذریعے منافع دینے والی متعدد اسکیموں میں بھی 0.5 سے 0.9 فیصد تک کمی ہوگئی ہے۔ یہ شرح سود میں حتمی کمی نہیں بلکہ کمی کی متوقع رینج ہے۔ نیشنل سیونگ کی ویب سائٹ پر شرح سود دیکھے جاسکتے ہیں۔

نیشنل سیونگ کا شمار پاکستان کے سب سے بڑے سرمایہ کاری اور مالیاتی ادارے میں ہوتا ہے اور اس میں 70 لاکھ سرمایہ کار موجود ہیں جنھوں نے 3.4 کھرب روپے سے زیادہ کی سرمایہ کاری کی ہوئی ہے۔ صارفین نیشنل سیونگ کی مصنوعات میں ملک بھر میں 376 برانچوں کے ذریعے سرمایہ کاری کرسکتے ہیں۔

یہ وزارت خزانہ سے منسلک ہے جو بچت کو فروغ دیتا ہے اور اس کے لیے قومی بچت کو فعال کیا گیا ہے۔ یہ طریقہ کار سب سے پہلے جنگ عظیم اول اور دوم میں برطانوی حکومت نے استعمال کیا جس کا مقصد جنگ سے منسلک اخراجات کے لیے فنڈز جمع کرنا تھا۔

معیشت میں بچت کا رجحان پروان چڑھانے کےعلاوہ یہ حکومت کے لیے فنڈز مہیا کرتی ہے جو بجٹ خسارے کوپورا کرنے اور انفرااسٹریکچرجیسا کہ اسکول ، اسپتال،سڑکیں، پل اور ڈیمز وغیرہ کے لیے رقم فراہم کرتا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube