Wednesday, January 19, 2022  | 15 Jamadilakhir, 1443

کرونا وائرس سے اسٹاک مارکیٹ میں مندی کا رجحان

SAMAA | - Posted: Feb 24, 2020 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Feb 24, 2020 | Last Updated: 2 years ago

فوٹو: اے ایف پی

چین میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے باعث پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں کاروباری ہفتے کے آغاز میں شدید مندی دیکھی گئی۔

پیر 24 فروری کو 100 انڈیکس میں 1105 پوائنٹس کی کمی ہوئی، جس کے بعد انڈیکس 2.82 فیصد کمی سے 39 ہزار 143 کی سطح پر بند ہوا۔

عالمی مارکیٹ میں 4 فروری سے اب تک سونے اور چاندی کی قیمتوں میں 6 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ ہفتہ 22 فروری کو پاکستان میں سونے کی فی تولہ قیمت 94 ہزار 300 تک پہنچ گئی تھی۔

دوسری طرف جولائی 2019 سے اب تک پاکستانی بانڈ مارکیٹ میں غیرملکی سرمایہ کاری 3 بلین ڈالر سے تجاوز کر چکی ہے۔ مرکزی بینک کی جانب سے شرح سود 13.25 فیصد پر برقرار رکھنے کے بعد سے سونا اسٹاک مارکیٹ کے مقابلے میں سرمایہ کاری کےلیے اہمیت اختیار کرگیا ہے۔

بہرحال، ایف اے ٹی ایف کی جانب سے پاکستان کو ملنے والی 4 ماہ کی توسیع نے مارکیٹ پر مثبت اثرات مرتب کیے ہیں۔ پاک کویت سرمایہ کاری سے متعلق سینئر تجزیہ کار عدنان سمی نے وضاحت کی ہے کہ ایف اے ٹی ایف کی خبر کے باعث مارکیٹ میں مندی کے مزید امکانات بھی تھم گئے بصورت دیگر مارکیٹ کے مزید نیچے آنے کا امکان تھا۔

کرونا وائرس کے باعث مجموعی طور تمام مارکیٹوں کی کارکردگی متاثر ہوئی ہے۔ ایشیائی مارکیٹ ایک تا تین فیصد گر گئی ہے۔

انٹر مارکیٹ سیکیورٹی کے ڈائریکٹر ریسرچ رضا جعفری کے مطابق کرونا وائرس سے پیدا ہونے والے خدشات نے تاجروں کو تذبذب کا شکار کر دیا ہے۔ انکا یہ بھی کہنا تھا کہ مارکیٹ معمول پر آگئی ہے اس لیے اب دوبارہ سے سرمایہ کاری کرنے اور منافع کمانے کا وقت ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube