Friday, September 25, 2020  | 6 Safar, 1442
ہوم   > معیشت

پی آئی اے کو10 سال میں ساڑھے3 کھرب روپے سے زائد کا نقصان

SAMAA | - Posted: Feb 14, 2020 | Last Updated: 7 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 14, 2020 | Last Updated: 7 months ago

ہوابازی ڈویژن نے ايک دہائی پر مشتمل خسارے کی تفصيلات قومی اسمبلی ميں پيش کردی ہیں۔ پی آئی اے کو گزشتہ 10 سال ميں 3 کھرب 71 ارب روپے سے زائد کا نقصان ہوا،15 ہزار سے زائد ملازمين بھی ادارے پر بوجھ بنے رہے۔

پاکستان کی قومی ائيرلائن کو سال 2009 سے2019 کے دوران 3 کھرب 71ارب 14 کروڑ روپے کا نقصان ہوا۔ جمعرات کو ہوا بازی ڈويژن نے پی آئی اے ميں بھرتیوں اورنقصانات کی تفصیلات قومی اسمبلی ميں پيش کردی گئیں جس کے مطابق ادارے کا 2009 میں خسارہ صرف 12 ارب روپے تھا جو2013  تک تين گنا سے زيادہ بڑھ کر 44 ارب روپے ہوگیا۔

سال 2014ميں 29 ارب روپے، 2017 ميں 51 ارب روپے، 2018 میں 67 ارب روپے اور2019 میں 53 ارب روپے کا نقصان ہوا۔

دس سال کے دوران لاہور سے لندن 1 ارب 99 کروڑ روپے، فیصل آباد سے جدہ 12 کروڑ 90 لاکھ روپے، سیالکوٹ سے ریاض فلائٹس کو 3 کروڑ 20 لاکھ روپے خسارے کا سامنا کرنا پڑا۔ اسلام آباد سے لندن اور جدہ 97 کروڑ64 لاکھ روپے ، کراچی سے لندن اور دمام فلائٹس سے ادارے کو 60 کروڑ 10 لاکھ روپے کا نقصان ہوا۔ کوئٹہ اور سيالکوٹ سميت ديگر شہروں سے آنے جانے والی پروازيں بھی خزانے پر بوجھ پڑیں ۔

ہوابازی ڈويژن کے مطابق قومی ائيرلائن ميں 15 ہزار 52 ملازمین ميں سے 11 ہزار284 مستقل ہیں۔ 2014 کے بعد ادارے ميں کوئی نئی بھرتی نہیں ہوئی ہے۔

WhatsApp FaceBook
PIA

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube