ہوم   > معیشت

قوانین کی خلاف ورزی پر 10 بینکوں پر بھاری جرمانے

SAMAA | - Posted: Sep 6, 2019 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Sep 6, 2019 | Last Updated: 5 months ago

اسٹيٹ بينک نے منی لانڈرنگ اور بینکنگ قوانين کی خلاف ورزیوں پر پر 10 بينکوں پر بھاری جرمانے عائد کردیئے۔

اسٹیٹ بینک پاکستان کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق مختلف کمرشل بينکوں کی جانب سے اينٹی منی لانڈرنگ، صارفين کی معلومات پوری نہ ہونے اور فارن ايکسچينج قوانين کی خلاف ورزی کی گئی۔

مرکزی بینک نے 10 بینکوں پر 80 کروڑ 51 لاکھ روپے کے جرمانے عائد کردیے، ان بینکوں میں دبئی اسلامک بینک، حبیب بینک لمیٹڈ، مسلم کمرشل بینک لمیٹڈ، سلک بینک، بینک الفلاح لمیٹڈ، الائیڈ بینک لمیٹڈ، سندھ بینک لمیٹڈ، سمٹ بینک لمیٹڈ، جے ایس بینک لمیٹڈ اور حبیب میٹروپولیٹن بینک لمیٹڈ شامل ہیں۔

 

مرکزی بينک نے اس سے قبل قوانين کی خلاف ورزيوں پر جولائی 2019ء ميں بھی 4 کمرشل بينکوں پر 18 کروڑ 46 لاکھ روپے کا جرمانہ عائد کيا تھا۔

منی لانڈرنگ اور دہشت گردوں کی مالی معاونت سمیت دیگر معاملات میں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی پاکستان پر کڑی نظر ہے، پاکستان ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ میں شامل ہے جبکہ اسے بلیک لسٹ ہونے کا بھی خطرہ لاحق ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube