نیا وفاقی بجٹ آنےکاامکان،تیاریاں شروع

Shakeel Ahmed
September 9, 2018

 نئی حکومت نے وفاقی بجٹ میں دی گئی ٹیکس چھوٹ ختم کرنے کا بگل بجا دیا ۔ وزارت خزانہ کے حکام کہتے ہیں کہ فنانس بل 2018میں ترامیم کا مقصد ریونیو میں اضافہ کرنا ہے۔ دوسری طرف ایف بی آرنے بھی ٹیکس چوروں کے گرد شکنجہ سخت کرنے کا اعلان کردیا۔

پی ٹی آئی حکومت نے نظرثانی شدہ بجٹ لانے کی تیاریاں شروع کردیں۔وفاقی ترقیاتی بجٹ کیلئے مختص 1030 ارب روپے میں نمایاں کمی کا امکان ہے۔ریونیو بڑھانے کیلئے فنانس بل 2018 میں اہم ترامیم ضروری ہیں۔

وزارت خزانہ کے حکام کہتے ہیں کہ ترامیم کے بعد حالیہ بجٹ میں دی گئی ٹیکس چھوٹ ختم ہوجائے گی۔ سالانہ 12 لاکھ روپے کمانے والے بھی ٹیکس نیٹ میں آسکتے ہیں۔

ماہرین نے بجٹ خسارے میں کمی کیلئے اخراجات کی مد میں اربوں روپے کٹوتی کی بھی تجویز دے دی ہے۔تمام اقدامات سے قومی خزانے میں 300 ارب روپے سے زائد اضافی ریونیو شامل ہونے کی توقع ہے۔ نظرثانی شدہ بجٹ جلد منظوری کیلئے پارلیمنٹ میں پیش کردیا جائے گا۔

ایف بی آر حکام کہتے ہیں کہ ریونیو میں اضافے کیلئے اقدامات حکومت کی صوابدید ہے،ہمیں جو ہدایات ملیں گی ان پر عمل کرکے دکھائیں گے۔اندرون ملک ٹیکس چوروں کیخلاف سخت کارروائی کے ساتھ بیرون ملک خفیہ جائیدادیں رکھنے والوں کا پیچھا بھی کیا جائے گا۔