Thursday, October 21, 2021  | 14 Rabiulawal, 1443

پرانی کاروں اور ہلکی کمرشل گاڑیوں کی فروخت میں اضافہ

SAMAA | - Posted: Jan 20, 2017 | Last Updated: 5 years ago
SAMAA |
Posted: Jan 20, 2017 | Last Updated: 5 years ago

263970,xcitefun-suzuki-alto-2
اسلام آباد : نئے سروے رپورٹ کے مطابق گزشتہ تین سال کے دوران درآمد کی گئی پرانی کاروں اور ہلکی کمرشل گاڑیوں کی فروخت میں 5 فیصد کا اضافہ  ہوا ہے۔

گزشتہ تین سال کے دوران درآمد کی گئی پرانی کاروں اور ہلکی کمرشل گاڑیوں کی فروخت میں 5 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ سال 2013ءکے دوران ملک میں میں تیار کی جانے والی کاروں اور ہلکی کمرشل گاڑیوں کی پیداوار کے مقابلہ میں درآمد کی گئی استعمال شدہ گاڑیوں کا تناسب 14 فیصد تھا جو سال 2016ءکے دوران 19 فیصد تک بڑھ گیا۔

xsd_9B7_PakWheels(com)
گزشتہ سال کے دوران 46 ہزار 5 سو پرانی کاریں اور ہلکی کمرشل گاڑیاں درآمد کی گئیں جبکہ مقامی صنعت نے 2 لاکھ 3 ہزار 5 سو گاڑیوں کی پیداوار حاصل کی تھی۔ پاکستان ایسوسی ایشن آف آٹو موٹو پارٹس اینڈ اسیسریز مینوفیکچررز (پاپام) کی رپورٹ کے مطابق سال 2015ءکے دوران 43 ہزار 4 سو استعمال شدہ گاڑیاں درآمد کی گئیں جبکہ مقامی صنعت نے2 لاکھ 47ہزار 5 سو گاڑیوں کی پیداوار حاصل کی تھی جس میں پنجاب حکومت کی اپنا روزگار سکیم کے تحت سوزوکی بولان اور راوی کی 50 ہزار گاڑیاں بھی شامل تھیں۔

Suzuki-Bolan-Pakistan
پاپام کے سابق چئرمین عامر اللہ والا نے کہا ہے کہ کاروں اور ہلکی کمرشل گاڑیوں کی مقامی مارکیٹ میں اضافہ ہو رہا ہے اور استعمال شدہ گاڑیوں کی درآمدات میں اضافہ سے مقامی صنعت پر مثبت اور منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔

cars_for_sale
پاپام کی رپورٹ کے مطابق سال 2016ءکے دوران 46 ہزار 5 سو استعمال شدہ کاروں اور ہلکی کمرشل گاڑیوں کی درآمد سے پرزہ جات تیار کرنے والی مقامی صنعت کی سیلز میں کمی واقع ہوئی ہے۔ پرزہ جات تیار کرنے والی مقامی صنعت سالانہ 16 ارب روپے کے پرزہ جات تیار کرتی ہے اور لاکھوں افراد کو بالواسطہ یا بلا واسطہ روزگار فراہم کیا جا رہا ہے۔ استعمال شدہ کاروں اور ہلکی کمرشل گاڑیوں کی درآمد میں اضافہ سے پرزے تیار کرنے والی مقامی صنعت متاثر ہو رہی ہے۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube