Friday, December 3, 2021  | 27 Rabiulakhir, 1443

یوایفا نیشنز لیگ: 4یورپی ہیوی ویٹ ٹیمیں آمنے سامنے

SAMAA | - Posted: Oct 5, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Oct 5, 2021 | Last Updated: 2 months ago

یو ایفا نیشنز لیگ 2021 کے فیصلہ کن راونڈ کی میزبانی یورو چیمپئن اٹلی کر رہا ہے جو 6اکتوبر سے 10اکتوبر تک کھیلا جائے گا جس میں یورپ کی چار ہیوی ویٹ فٹبال ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں جن میں یورو چیمپئن اٹلی‘ فیفا عالمی نمبر ایک بلجیئم‘ عالمی چیمپئن فرانس اور سابق ورلڈ چیمپئن اسپین شامل ہے۔

میچز اٹلی کے دو شہروں میلان اور تورن میں منعقد ہوں گے جہاں پہلے سیمی فائنل میں بدھ 6اکتوبر کو میزبان اٹلی کا مقابلہ اسپین سے ہوگا جبکہ سات اکتوبر کو بلجیئم اور فرانس تورن میں مدمقابل ہوں گے۔

یوایفا  نیشنز لیگ کا دفاعی چیمپئن پرتگال اپنے گروپ میں دوسرے نمبر پر آنے کی وجہ سے اس بار فائنلز کیلئے کوالیفائی کرنے میں ناکام رہا۔

نیشنز لیگ کا فائنل 10اکتوبر کو میلان اور تیسری پوزیشن کا میچ اسی روز تورن میں کھیلا جائے گا سیمی فائنلز اور فائنل میچ  مقررہ وقت میں نتیجہ خیزنہیں ہوئے تو  30 منٹ کا اضافی وقت دیا جائے گا اگر اس میں بھی فیصلہ نہ ہوا تو  پھر میچ کو فیصلہ کن بنانے کیلئے دونوں ٹیموں کو پنالٹی ککس دی جائیں گی۔

تیسری پوزیش کے میچ میں مقررہ وقت میں مقابلہ برابر رہنے  کی صورت میں اضافی وقت نہیں دیا جائے گا بلکہ براہ راست پنالٹی ککس دی جائیں گی۔

کرونا وباء کی پابندیوں کے باوجود میلان میں بدھ کو روایتی حریفوں اٹلی اور اسپین کے میچ کیلئے 31000 ٹکٹس فروخت ہو چکے ہیں اور فٹبال کے شائقین میں اپنے پسندیدہ کھلاڑیوں کو دیکھنے کیلئے زبردست جوش و خروش پایا جاتا ہے۔

اٹلی اور اسپین کے مابین 38 میچ کھیلے گئے جن میں سے دونوں ملکوں نے گیارہ گیارہ میچ جیتے اور 16  ڈرا ہوئے دونوں ٹیمیوں کے درمیان پہلا میچ 1920 کے سمر اولمپکس میں ہوا تھا جس میں اسپین 2-0  سے فاتح تھا۔ آخری بار  یورو 2020 میں مد مقابل تھے جس میں اٹلی نے کامیابی حاصل کی تھی۔

یورو2020 کے سیمی فائنل میں اسپین اور اٹلی کا میچ مقررہ اوراضافی وقت میں 1-1 گول سے برابر رہا تھا جس  کے بعد اٹلی نے پنالٹی ککس پر اپنے روایتی حریف کو 4-2 سے شکست دی تھی  یورو 2012  کے فائنل میں اسپین نے اٹلی کو 4-0 سے شکست دے کر ٹرافی جیتی تھی یورو 2016 کے پری کوارٹر فائنل مرحلے میں اٹلی نے اسپین کے خلاف 2-0 سے کامیابی حاصل کی تھی۔

ہسپانوی فٹ بال ٹیم میں زیادہ تر نوجوان کھلاڑی شامل ہیں جن کو اپنے تجربہ کار کھلاڑیوں کی انجریز کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہے۔ ان فٹ کھلاڑیوں میں جیرارڈ مورینو  ‘ الوارو موراٹا ‘جوڈی ایلبا ‘ پیڈری ‘ ڈینی اولمو  اور 17 سالہ گیوی شامل ہیں۔ تاہم ٹیم کے کوچ لوئیس اینرک کو اپنے نوجوان کھلاڑیوں کی صلاحیتوں پر پورا اعتماد ہے شارٹ پاسز اور ڈربلنگ ہسپانوی ٹیم کی سب سے بڑی خوبی ہے جس سے حریف ٹیم کو مشکلات سے دوچار کرتی ہے۔

اینرک کا کہنا ہے کہ اس میچ میں نوجوان کھلاڑی اپنی صلاحیتوں کے جوہر دکھائیں گے اور شائقین کو اچھا میچ دیکھنے کو ملے گا۔ پیڈری نے حالیہ یورو چیمپئن شپ میں میں غیر معمولی کھیل پیش کر کے  شائقین فٹبال سے داد وصول کی تھی۔

دوسری جانب اطالوی ٹیم میں یورو کپ جیتنے والے تقربباً تمام ہی کھلاڑی شامل ہیں اس کے باوجود وہ ہسپانوی ٹیم کواپنے لیے بڑا خطرہ سمجھتے ہیں کیونکہ ہسپانوی ٹیم ان کیلئے ہمیشہ سخت ترین حریف ثابت ہوئی ہے جو اپ سیٹ کر سکتی ہے اطالوی ٹیم  مسلسل 37  میچوں میں ناقابل ناقابل شکست رہنے کا نیا ریکارڈ قائم کیا ہے۔

  نیشنزلیگ اے کے گروپ میچز میں اٹلی نے  چھ میچوں میں سے  تین جیتے  اور تین  برابر کیے ۔ اسپین نے اپنے گروپ میں چھ میچوں میں سے تین جیتے ایک ہارا اور دو ڈرا کیے اسپین نے جرمنی کو 6-0  کے بڑے مارجن سے شکست دی تھی۔

فرانس اور بلجیم  کے فٹبال مقابلوں کی تاریخ ایک صدی سے زیادہ پرانی ہے بلجیئم اور فرانس پہلی مرتبہ باقاعدہ  طور پر 1904 میں برسلز میں دوستانہ میچ میں مد مقابل آئے تھے اور یہ اولین میچ 3-3  گول سے برابر رہا تھا۔

دونوں  ٹیمیں  75  ویں بار آمنے سامنے ہیں بلجیئم کا پلہ 30  فتوحات کے ساتھ بھاری ہے جبکہ فرانس نے 25  میچوں میں کامیابی حاصل کی اور 19  میچ بے نتیجہ رہے۔

دونوں ملک یورو ٹورنامنٹس میں پانچ  بار آمنے سامنے آئے جن میں سے  بلجیئم نے دو میچ جیتے اور فرانس ایک میچ میں فاتح رہا جبکہ دو میچ  ڈرا ہوئے۔  فیفا ورلڈ کپ میچز میں فرانس کا پلہ بھاری ہے جس نے سات میچوں میں سے پانچ میں کامیابی سیمیٹی ۔ بلجیئم صرف ایک میچ جیت پایا ۔ایک میچ نیتجہ خیز ثابت نہیں ہوا۔

بڑے ٹورنامنٹس فائنلز میں فرانس مکمل طورپر بلجیئم پرحاوی رہا ہے ۔ فرانسیسی فٹبالرز نے چار بڑے ایونٹس کے فائنلز میں بلجیئم کو زیر کیا لیکن اس بار بلجیئم کی گولڈن جنریشن پر مشتمل ٹیم عالمی چیمپئن فرانس کو ہرانے کیلئے پر عزم ہے۔

بلجیئم نے اپنے گروپ میں چھ میں سے پانچ میچوں میں کامیابی حاصل کی اور صرف ایک میچ میں انگلینڈ سے 2-1 سے شکست ہوئی۔

فرانس نے بھی اپنے گروپ میں پانچ میچوں میں حریف ٹیموں کو شکست سے دوچار کیا اور دفاعی چیمپئن پرتگال کے خلاف ایک میچ  بغیر کسی گول کے برابر کھیلا۔

یوایفا کے زیر اہتمام کھیلے جانے والے اس ایونٹ میں نیشنز لیگ فائنلز 2021  کیلئے لیگ اے کے چار گروپوں میں ٹاپ پوزیشن پر آنے والی  چار ٹیموں نے فائنلز کیلئے کوالیفائی کیا ہے۔

یورپی فٹبال باڈی نے اس نیشنز لیگ کا آغاز  فیفا کیلنڈر ائر کے تحت کھیلے جانے والے انٹرنیشنل دوستانہ میچوں کے متبادل کے طور پر کیا گیا تھا ۔ فارمیٹ کے مطابق یوایفا کے رکن ملکوں کو یو ایفا رینکنگ کے مطابق چار لیگز یعنی  لیگ اے ‘ لیگ بی ‘ لیگ سی اور  لیگ ڈی میں تقسیم کیا جانا ہے ۔  ٹیموں کے مابین ہوم اینڈ اوے میچ کھیلے جانے ہیں۔

نئے فارمیٹ کے تحت لیگز میں ٹیموں کی تنزلی اور پروموشن کے طریقہ کار کو بھی شامل کیا گیا ۔ اس سال لیگ اے  کے چاروں گروپس میں چوتھے نمبر پر آنے والی ٹیموں کی لیگ بی آٹومیٹک تنزلی ہو گی اور لیگ بی کے چار گروپس میں ٹاپ پر آنے والی چار ٹیمیں لیگ اے کیلئے کوالیفائی کر جائیں گی۔

فیفا ورلڈ کپ 2018 کے بعد اس نیشنز لیگ کا اولین ایڈیشن 2018 میں  پرتگال میں منعقد ہوا تھا جس میں کرسٹیانو رونالڈو کی کپتانی میں میزبان پرتگال نے فائنل میں ہالینڈ کو 0-1 سے شکست دے کر یوایفا نیشنز کپ چیمپئن کا اعزاز  جیتا تھا۔

انگلینڈ نے مقررہ اور اضافی وقت میں میچ بغیر کسی گول کے برابر رہنے کے بعد پنالٹی ککس پر سوئیزرلینڈ کو 6-5 سے ہرا کر تیسری پوزیشن حاصل کی تھی ۔ پہلی پانچ پانچ پنالٹی ککس پر دونوں ٹیموں کے فٹبالرز گول کرنے میں کامیاب ہوئے تھے تاہم سڈن ڈیتھ پنالٹی پر انگلینڈ کے فٹبالرایرک ڈائر نے گول کر دیا تھا جبکہ سوئس فٹبالر جوزف ڈریمک کی پنالٹی ضائع ہو گئی تھی۔

اس سے قبل سیمی فائنلز میں ہالینڈ نے انگلینڈ کو اضافی وقت میں 3-1 اور پرتگال نے سوئیزرلینڈ کو 3-1 سے شکست دی تھی۔

 نیشنز لیگ 2021  کیلئے  لیگ اے میں  16  ملکوں کو چار گروپس میں تقسیم کیا گیا تھا ۔  گروپ ون اٹلی ‘ ہالینڈ ‘ پولینڈ بوسنیا ہرزگووینا  ‘ گروپ ٹو   بلجیئم ‘ڈنمارک ‘انگلینڈ ‘آئس لینڈ ‘ گروپ تھری فرانس ‘پرتگال ‘ کروشیا ‘  سویڈن  جبکہ گروپ فور اسپین ‘جرمنی ‘سوئیزرلینڈ اور یوکرائن پر مشتمل تھا۔

 گروپ ون سے  اٹلی گروپ ٹو سے بلجیئم گروپ تھری سے فرانس اور گروپ فور سے اسپین نے نیشنز لیگ فائنلز میں رسائی کی ۔ دفاعی چیمپئن پرتگال اپنے گروپ میں دوسرے نمبر پر رہا تھا اور اسے ہوم گرائونڈ لزبن میں  فرانس کے ہاتھوں گروپ میچ میں 1-0  سے شکست ہوئی تھی جبکہ پرتگال اور فرانس کا سینٹ ڈینس پیرس میں کھیلا جانے والا میچ بغیر کسی گول کے برابر رہا تھا۔

گروپ مراحل مکمل ہونے کے بعد لیگ اے میں گروپ ون  سے  بوسنیا ہرزگووینا گروپ ٹو سے آئس لینڈ گروپ تھری سے سویڈن اور گروپ فور سے یوکرائن کی تنزلی ہوئی ہے۔ بلجیم کے رومیلو لوکاکو پانچ گول کے ساتھ ٹاپ اسکورر ہیں۔

اٹلی اور بلجیئم کے مابین 23  میچ کھیلے گئے جن میں سے اٹلی نے 15 جیتے اور چار میں بلجیئم فتح یاب رہا ۔ چار میچ ڈرا ہوئے۔

اسپین اور فرانس کے مابین 35  میچ ہوئے جن میں سے اسپین نے 16 جیتے فرانس 12میں فاتح اور سات ڈرا ہوئے ۔ اسپین اور بلجیئم میں 22 میچ کھیلے گئے۔ اسپین نے 12میں کامیابی سیمیٹی اور پانچ میں بلجیئم فاتح رہا پانچ میں نتیجہ خیز ثابت نہیں ہوئے۔

اٹلی اور فرانس 39 بار آمنے سامنے آئے جس میں 18  فتوحات کے ساتھ اطالوی ٹیم کو برتری حاصل ہے فرانس نے 11 میچوں میں کامیابی حاصل کی اور 10  ڈرا ہوئے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube