Tuesday, July 7, 2020  | 15 ZUL-QAADAH, 1441
ہوم   > بلاگز

لاک ڈاؤن ميں نرمی،ڈاکٹرقيصر سجاد کا تحفظات کا اظہار

SAMAA | - Posted: May 16, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: May 16, 2020 | Last Updated: 2 months ago

بازار کھولنے سے بيماری پھيلے گی

پاکستان میں لاک ڈاؤن ميں نرمی پر ڈاکٹر قيصر سجاد نے تحفظات کا اظہار کرديا ہے۔

سماء کے پروگرام نيوز بيٹ ميں انھوں نے کہا کہ بازار کھولنے سے بيماری پھيلے گی۔انھوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں ابھی کرونا وائرس کا پیک نہیں آیا ہے،عيد تک کرونا وائرس کےکيسز ميں اضافے کا خدشہ ہے۔

ڈاکٹرقیصر سجاد نےزوردیا کہ ڈبليوايچ او کےاحکامات پرعمل ضروری ہوگيا ہےجس کے تحت کيسز بڑھنے پرلاک ڈاؤن سخت کيا جائے،کرونا متاثرين اور اموات کی تعداد بڑھ رہی ہے۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ ملک کے اسپتالوں میں بستروں اور وینٹی لیٹرز کی دستیابی کو دیکھتے ہوئےلاک ڈاؤن کو مزید موثر کرنا چاہئے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ يہ طے ہے کہ اس سال ہميں کرونا وائرس کے ساتھ گزارا کرنا ہے، ميڈيکل کميونٹی بتائے کيا ہم مسلسل لاک ڈاؤن رکھ سکتے ہيں، لاک ڈاؤن کی وجہ سے آج 15 کروڑ لوگ متاثر ہيں، اتنی بڑی تعداد میں متاثرہ افراد کا کیا کریں۔

ان کا کہنا تھا کہ لوگوں کو روزگار نہ ديا تو بھوک سے اموات ہوں گی، کرونا کو ديکھ رہے ہيں ليکن باقی ملک بھی سنبھالنا ہے، لاک ڈاؤن کھولنا مجبوری ہے۔

وزیراعظم نے صوبوں سے کہا کہ ايس او پيز کے ساتھ کام شروع کريں، ہم 15 کروڑ متاثرہ لوگوں کا دھيان نہيں رکھ سکتے، پبلک ٹرانسپورٹ پر پھر اتفاق رائے نہيں ہوسکا جو ميرے نزديک درست نہيں، درخواست کرتا ہوں کہ پبلک ٹرانسپورٹ کھول ديں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube