ہوم   >  بلاگز

مہنگائی نے کیسے فرانس میں انقلاب برپا کیا

SAMAA | - Posted: Jan 19, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Jan 19, 2020 | Last Updated: 1 month ago

رعایا نے بادشاہ کو پھانسی چڑھا دیا

دنیا میں آج تک پانچ بڑے عوامی انقلاب آئے ہیں جن میں انقلاب فرانس کو اولین حیثیت حاصل ہے کیونکہ یہ وہ انقلاب تھا جو مہنگائی کی وجہ سے آیا۔

فرانس پر 1774  میں کنگ لوئس کی حکمرانی تھی اور اس وقت فرانس تین طبقوں میں تقسیم تھا۔۔ ایک طبقہ تھا مسیحی پادری۔ دوسرا وہ جن کے لیے فرانس جنت کا ٹکڑا تھا۔ یہ وہ لوگ تھے جو چاندی کی پلیٹوں میں سونے کے چمچ سے کھانا کھاتے۔ تیسرا غریب طبقہ تھا جو ضروریات زندگی کے لیے ترس رہاتھا۔

یہ صورتحال کچھ عرصہ چلتی رہی۔ پھر 1788  اور 89 میں شدید سردی سے غذائی قلت پیدا ہوئی۔ ایک سال میں خوراک کی قیمتوں میں کئی گنا اضافہ ہوا۔ بالآخر بھوک سے نڈھال عوام نے14  جولائی 1789 کو پیرس کا رخ کیا اور شاہی محل کے سامنے روٹی روٹی کی دہائیاں دیں۔

اس احتجاج میں خواتین روتی رہیں، بچے بلکتے رہے مگر بادشاہ نے رحم نہ کھایا بلکہ الٹا لاچار لوگوں کیخلاف فوج کو میدان میں اتارا جس پر عوام نے بھی ڈنڈے اٹھا لیے۔ خونریز تصادم ہوا اور ہجوم نے بادشاہ کے محل پر حملہ کیا۔ اسے باہر نکالا، سڑکوں پر گھسیٹا اور سولی پرچڑھا دیا۔

اس کے ساتھ ہی لالچی اور مفاد پرست وزیروں مشیروں، ذخیرہ اندوز تاجروں، صنعتکاروں اور خوشحال لوگوں کو بھی قتل کردیا گیا۔

تاریخ خون کے اس دور کو انقلاب فرانس کہتی ہیں۔ جس کے بعد فرانس سے بادشاہت ہمیشہ ہمیشہ کے لیے ختم ہوگئی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube