Monday, January 24, 2022  | 20 Jamadilakhir, 1443

پلیٹ اورپلیٹ لیٹس

SAMAA | - Posted: Nov 4, 2019 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Nov 4, 2019 | Last Updated: 2 years ago

ہم دعوے سے کہہ سکتے ہیں کہ آج سے کچھ دن پہلے تک 75 فیصد غریب عوام کو بلکل بھی نہیں علم تھا کہ یہ پیلیٹ لیٹس کیا بلا ہیں؟ ۔ سیاسی خبروں میں مختلف اہم شخصیات کے قیمتی یا بیش بہا پلیٹ لیٹس کا متعددبار گرتے پڑتے، چڑھتےاترتے پلیٹلیس کا تواتر سے ذکر ہوا تب ایک مفلوک الحال غریب کو پتہ چلا کہ ہر انسان میں ان کی اچھی خاصی تعداد ہونی چایئے لیکن شاید کچھ بے خبرعوام جو محض چند پلیٹ لیٹس کی بدولت اپنے کندھوں پربھاری بوجھ ڈھوتے ہیں اب بھی ایسی خبروں سے رغبت نہہں رکھتے۔

 

زرداری اور نواز شریف صاحب کے پلیٹ لیٹس کبھی کم کبھی زیادہ ہو رہے ہیں ۔ آپ کو علم ہے ؟؟

دیکھئے صاحب اگر آپ غریب آدمی کو یہ احساس دلائیں گے کہ یہ پلیٹ لیٹس انسانی جسم کے لئے کتنے اہم ہیں تو یہ راشن آٹے اور مہنگائی کے خلاف سڑکوں پر احتجاج کرنے کے بجائے پلیٹ لیٹس پر اپنا حق ظاہر کر کے باقاعدہ نعرہ بازی پھرڈرامہ بازی پر اتر آئیں گے اور برابری کی بنیاد پر پلیٹ لیٹس کا تقاضہ کریں گے اور حقوق انسانی کی تنظیموں کو ایک زبردست موقع ہاتھ لگنے کا قوی امکان ہے ۔ پھر وہی معاشرے کی ناہمواری اور غیر منصفانہ تقسیم کا رونا دھونا مچ سکتا ہے اور بینرز پر نعرے درج ہونگے۔

پلیٹ لیٹس کم ہو کر مر جائے گی مخلوق تو انصاف کرو گے؟؟؟ ؟ سنو حکمرانو۔۔۔۔ فی زمانہ پلیٹ لیٹس کی کمی کا ذمہ دارڈینگی مچھر کو ٹہرایا جاتاہے اور مچھر وہاں پیدا ہوتے ہیں جہاں پر گندگی ہوتی ہے ۔ لیکن چونکہ ڈینگی صفائی پسندی کی وجہ سے صاف اور ٹہرے پانی میِں اپنی ولادت و افزاءش کو قابل فخر سمجھتا ہے لہذِا صاف پانی نہ ہونے کے باوجود غریب پر حملہ آور ہوتا ہے۔ کیوں کہ ڈینگی خوب جانتا ہے کہ غریبی کے خاتمے کے لئے غریب مکائوکتنا سود مند ہے۔

یہاں پرامیر کی بیماری کسی غریب کو لگ جائے تو وہ چپکے چپکے شکوہ ضرور کرتا ہوگا کہ واہ رے میرے پیارے اللہ نہ پانی نہ سوءمنگ پول پھر بھی میری جھونپڑی میں ڈینگی کا بسیرا کچن میں پلیٹس اور میرے ناتواں جسم میں پلیٹ لیٹس کی کمی ۔ یہ کیا قصہ ہے ؟۔

آج پاکستان میں صرف دو تین اشخاص ہی ایسے ہیں جن کے پلیٹ لیٹس گرما گرم خبروں کا حصہ ہیں۔ ان اترتے چڑھتے اسکور پرہرپاکستانی افسردہ ہے کہ ہر چہرہ کسی نہ کسی کا محبوب ہوتا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube