کینیڈا میں مقیم پاکستانیوں میں کرکٹ کی مقبولیت

June 23, 2019

پاکستان کا ایک اور ستارہ عالمی افق پر جگمگانے کو تیار ہوگیا۔ نوجوان کلیم ثنا انٹرنیشنل کرکٹ میں دھوم مچانے کو تیار ہوچکا ہے۔ پہلے اسٹیج پر پاکستان انڈر 19 کرکٹ میں اپنی آل راؤنڈ پرفارمنس سے دھاک بٹھائی اور اب کینیڈا میں کرکٹ میں اپنا نام بنارہا ہے۔

گذشتہ 3 سالوں سے کینیڈا میں مقیم کلیم ثنا نے سنچورین کرکٹ کلب سے اپنا کیریئر دوبارہ شروع کیا اور کچھ ہی عرصے میں کینیڈا کرکٹ میں اپنی دھاک بٹھاتے ہوئے برٹش کولمبیا کیلئے کھیلنا شروع کردیا۔

بے پناہ ٹیلنٹ اور کئی میچ وننگ پرفارمنسز کی وجہ سے اب کینیڈا ٹی 20 لیگ میں وینیپگ ہاکس نے کلیم ثنا کو ڈرافٹ میں پک کیا اور اب وہ 25 جولائی سے 11 اگست تک کینیڈا ٹورنٹو میں ہونیوالے گلوبل ٹی 20 میں ایکشن میں ہونگے۔

پاکستان کے بہت سے کرکٹر کینیڈا میں جاکر کرکٹ کھیلنے کے خواہاں ہیں اور بہت سارے کرکٹرز یہ عزم لیے کینیڈا پہنچتے ہیں تو برٹش کولمبیا کرکٹ کے صدر امجد باجوہ ، تھنڈر کرکٹ ٹیم کے ملک عاصم ، وینکور سٹی میں ٹی 20 کے فروغ کیلئے کام کرنے والے اشرف میتلا اور ساجد حمید ان کرکٹرز کو اپنے خواب سچے کرنے میں مدد ملتی ہے جس کیلئے سنچورین کرکٹ کلب کا کردار بھی انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔

کینیڈا میں کرکٹ برٹش کولمبیا کو کرکٹ کے فروغ میں اس لیے بھی اہم گردانا جاتا ہے کیونکہ اس اسٹیٹ میں 104 کرکٹ کلبز رجسٹرڈ ہیں جن کا تعلق مختلف ڈویژنز سے ہے۔ سنچورین کرکٹ کلب سے وابستہ اشرف میتلا نے کلیم ثنا کو بھی سنچورین کرکٹ کلب سے کھیلنے کا موقع دیا تو کلیم ثنا کا انٹرنیشنل کرکٹر کا خواب سچا کرنے میں مدد ملی۔

کلیم ثنا کا اور ان جیسے پاکستانی کھلاڑیوں کو مدد کرنے میں اشرف میتلا پیش پیش رہتے ہیں جس وجہ سے انہیں تمام کھلاڑی بڑے بھائی کا درجہ دیتے ہیں اور پاکستانیوں کے کینیڈا میں متحرک کلبز کے ذریعے یہ کھلاڑی اپنی صلاحیتوں کا لوہا منواتے ہیں اور اسی وجہ سے پاکستان کے بہت سارے کھلاڑیوں کے بیشتر بڑے کلبز سے مختلف لیگز کے لیے معاہدے ہوجاتے ہیں۔