Thursday, March 4, 2021  | 19 Rajab, 1442
ہوم   > بلاگز

فٹبال ورلڈکپ میں ہو کیا رہا ہے

SAMAA | - Posted: Jun 29, 2018 | Last Updated: 3 years ago
Posted: Jun 29, 2018 | Last Updated: 3 years ago

تحریر: سید راشد حسین

فیفا ورلڈ کپ کے آغاز پر جن ٹیموں کی با آسانی کامیابیوں کی باتیں ہورہی تھیں وہ دوسرے مرحلے میں پہنچنے کے لئے پاپڑ بیلتی نظر آئیں۔ ارجنٹینا، برازیل، پرتگال کا پہلا راؤنڈ میں خوب امتحان ہوا۔ چھوٹی ٹیمیں اتنی بھی چھوٹی ثابت نہیں ہوئیں۔ آئس لینڈ نے ارجنٹینا کو ورلڈکپ میں اپنے پہلے ہی میچ میں مشکلات کا شکار کردیا۔ میچ برابر کھیل کر میسی الیون کی پریشانیاں بڑھا دیں۔ گو ارجنٹینا نے جس طرح اس بار ورلڈ کپ کے لئے کوالیفائی کیا وہ بھی مرحلہ اگر مگر ہی تھا۔ ارجنٹائن کی نیشنل ٹیم پچھلے آٹھ سالوں میں پانچ کوچز تبدیل کرچکی ہے۔ ٹیم کی روانگی سے قبل ہی فیڈریشن ذہنی طور پر ٹیم کی پہلے راؤنڈ سے باہر ہونے کے لئے تیار تھی۔ ایسا اس لئے بھی ہے کہ صرف مئی دوہزار سترہ سے ٹیم میں انسٹھ سے زائد کھلاڑیوں کو موقع دیا گیا۔ ورلڈکپ اسکواڈ کی سلیکشن میں پسند اور ناپسند نے اہم کردار ادا کیا۔

برازیل کا حال بھی کچھ زیادہ اچھا نہیں ہے۔ نیمار بھی اب تک توقعات کے مطابق کارکردگی نہیں دکھا سکے ہیں۔ ٹیم متحد ہوکر کھیلتی نظر نہیں آرہی۔ ہر ٹیم  کو پہلے راؤنڈ میں پریشانی کا سامنا رہا۔ ایران اور مراکش نے گروپ کی مضبوط اور ورلڈ کپ ٹائٹل کی امیدوار پرتگال اور اسپین کی ٹیموں کو ٹف ٹائم دیا۔ مراکش جیت کے قریب پہنچا لیکن اسپین نے میچ برابر کردیا۔ پرتگال کی برتری کو ایران نے برابر کردیا۔ زیادہ تر مسلمان ملکوں کی ٹیمیں مہمان اداکار ثابت ہوئیں۔ سعودی عرب کی کارکردگی توقعات کے مطابق تھی نہ محمد صلاح کی مصر نے کوئی کمال دکھایا۔ روس نے میزبانی کا بھرپور فائدہ اٹھاتے ہوئے اگلے راؤنڈ میں جگہ بنائی اور جو کارکردگی ٹیم کی اب تک رہی ہے اس کو دیکھتے ہوئے مزید کامیابیوں کی پیش گوئی کی جاسکتی ہے۔ یوراگوئے نے گروپ اسٹیج میں شاندار کارکردگی دکھائی لیکن ابھی عشق کے امتحان اور بھی ہے۔ ایونٹ میں دفاعی چیمپئن مسائل کا شکار نظر آئی۔ خاص کرکے ایسے وقت جب جرمنی نے ورلڈ کپ کوالیفائنگ راؤنڈ میں شاندار کارکردگی دکھائی تھی۔ ایونٹ میں جرمنی کی کامیابی کا سب کو یقین تھا۔ میکسیکو سے شکست نے جرمن فینز کو کافی پریشان کیا۔ رونالڈ سے زیادہ گول انگلینڈ کے ہیری کین کر چکے ہیں۔ انگلش ٹیم کی کامیابیوں کا سلسلہ جاری رہا تو فائنل فور تک پہنچنے سے روکنا مشکل ہوجائے گا۔ پہلے راؤنڈ میں رونالڈو اور میسی پنالٹی ضائع کرکے اپنے فینز اور ٹیموں کو حیران کرچکے ہیں۔ مصری گول کیپر عصام الحضر نے پینتالیس سال کی عمر میں نا صرف پنالٹی روکی بلکہ سب سے بڑی عمر میں ورلڈکپ کھیلنے کا ریکارڈ بھی حاصل کرلیا۔

روس میں تمام تر پروپیگنڈے اور میڈیا تنازعات کے باوجود تاحال انتظامات انتہائی بہترین رہے۔ نا صرف کھلاڑیوں نے انتظامات پر اطمینان کا اظہار کیا بلکہ میچز دیکھنے پہنچنے والے بھی روسیوں کی مہمان نوازی کے قائل ہوگئے ہیں۔ ہوٹلز اور ریسٹورینٹ ورلڈکپ کے لئے خصوصی پیکجز دے رہے ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ پولیس کو عوامی مقامات پر شائقین کی رہنمائی کے لئے مختلف زبانیں ترجمہ کرنے والے آلات بھی فراہم کئے گئے ہیں۔ روسی صدر پوٹن کی خصوصی ہدایات پر ٹھگوں سے غیر ملکی شائقین کو بچانے کے انتظامات کئے گئے ہیں اور جدید وی اے آر سسٹم نے میچز کی دوران تنازعات کافی حد تک کم کر دیئے ہیں۔ گراؤنڈ ریفری کی فیصلے پر قریبا نو سے دس افراد مل کر ریویو کرتے ہیں۔ جدید سسٹم نے کئی تنازعات دور کر دیئے ہیں۔ اب ڈرامے بازیاں کرکے فاؤل لینے والے کھلاڑی بے نقاب ہو رہے ہیں۔ ریفریز کی غلطیوں  کو پکڑنےاور گول لائن ٹیکنالوجی کی خامیاں دور کرنے بھی کافی کامیابی ہوچکی ہے۔ روس کی سرد موسم کے باوجود میچز میں ہونے والی گرما گرمی کے واقعات اس بار بھی کھیل کا حسن بڑھا رہے ہیں۔ تاحال دلچسپ مقابلوں نے ایونٹ کو اوپن رکھا ہے۔ گروپ اسٹیجز کی صورتحال دیکھتے ہوئے ناک آؤٹ راؤنڈ کو مزید دلچسپ قرار دینا بہت آسان ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube