Thursday, January 27, 2022  | 23 Jamadilakhir, 1443

بے گانی شادی میں عبد اللہ دیوانہ قوم

SAMAA | - Posted: Jun 26, 2018 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Jun 26, 2018 | Last Updated: 4 years ago

پاکستان کا قومی کھیل ویسے تو ہاکی ہے لیکن ہمارے قوم سب ہی کھیلوں پر نظررکھتی ہے ۔ اب کرکٹ سےتو ہمارا واسطہ ہے ہی لیکن فٹ بال سے ہمارا دور دور تک کوئی واسطہ نہیں ہے۔ اس کے باوجودجب بھی فٹ بال کا ورلڈ کپ شروع ہوتاہے، ہماری قوم اس سے متعلق پوسٹس،خبریں ، تجزیے پڑھنے اور پروگرامز دیکھنے کی طرف دل و جان سےفدا ہوجاتی ہے۔ فٹ بال کے میچزان دنوں بھی اس طرح دیکھے جارہے ہیں کہ جیسے اگر کوئی میچ مس کرگئے تو لاٹری نکلنے کا چانس بھی مس ہوجائے گا۔ اب ذرا ان باتوں پر تفصیلی غور کرلیتے ہیں کہ پاکستانی قوم آخر کیوں ، بیگانی شادی میں عبد اللہ دیوانہ بنتے ہوئے فٹ بال کے میچزدیکھتی ہے۔

سب سے پہلے تو جس بات پر ہمارے یہاں کے لوگ خوش نظر آرہے ہیں وہ یہ کہ ورلڈ کپ کے دوران استعمال کی جانے والی آفیشل فٹ بال ’’ٹیل اسٹار2018ء ‘‘ پاکستان کے شہر سیالکوٹ میں بنائی گئی ہے۔ ہمارے یہاں کے اکثر نوجوانوں کی رائے یہی ہے کہ کیا ہوا اگر پاکستانی ٹیم روس میں ان دنوں جاری ورلڈکپ کے میچزمیں حصہ لیتی ہوئی نظر نہیں آرہی ہے، ہمارے یہاں کی تیار کردہ فٹ بال تو ہر میچ میں نظرآرہی ہے نا؟ اور لوگوں کو تو اس بات کی ہی خوشی ہے کہ انہیں ہارنے یا جیتنے کا غم نہیں ہوگا کیونکہ فٹ بال ورلڈ کپ کے دوران استعمال کی جانے والی ٹیل اسٹار فائنل میں بھی استعمال کی جائے گی، یوں پاکستا ن کی نمائندگی اس فٹ بال کی صورت میں فائنل تک ہوگی۔

The day is set to be extra special for Pakistani teenager Ahmad Raza as he will be able to meet the Brazilian football team and attacker Neymar Jr, who he greatly admires. Source; Press Release

اب ذرا22جون کو برازیل اور کوسٹاریکا کے مابین ہونے والے میچ کی بات کرلیتے ہیں ، اس میچ کی وجہ سے پاکستان کے شہر سیالکوٹ سے تعلق رکھنے والے15سالہ ’’احمد رضا‘‘ کو بہت شہرت ملی ہے، اس کی وجہ یہ ہے کہ اس میچ کا ٹاس احمد کے ہاتھوں انجام پایا اور یوں انہیں اس ورلڈ کپ کا آفیشل نمائندہ ہونےکا اعزاز بھی حاصل ہوا۔ احمد رضا کا تعلق اپنے خاندان کی اُس تیسری نسل سے ہے، جو فٹ بال تیار کررہی ہے۔15سالہ احمد رضا بھی اب فٹ بال تیار کرنے میں اپنے خاندان کا ہاتھ بٹاتے نظر آتے ہیں ، ( یہاں یہ بھی بتاتی چلوں کہ آسکر ایوارڈ ایافتہ فلم میکر شرمین عبید چنائے ایک نجی اکیڈمی کے اشتراک سے اس بچے پر فلم تیار کررہی ہیں ، جو شاید اگلے مہینے منظر عام پر بھی آجائے گی۔جس سے اس پاکستانی بچے کو مزید شہرت ملے گی) ۔

احمد کے خاندان کی ان ہی خدمات کو پیش نظررکھتے ہوئے ورلڈ کپ کے اس اہم میچ کا ٹاس ان کے ہاتھوں سے کروایا گیا، یوں جہاں یہ پاکستانی بچہ دنیا بھر میں مشہور ہوا، وہیں ہماری قوم اس بچے کو ٹاس کرواتے دیکھ کر ہی خوش ہوگئی کہ’’ہماری ٹیم ورلڈ کپ میں نہ سہی ، ہمارے یہاں کے بچے کا ٹاس کروانا ہی کافی ہے‘‘۔

تیسری بات یہ بہت سی ٹیموں میں اس وقت مسلمان کھلاڑی کھیل رہے ہیں ، مسلمان ہونےکے ناتے ہماری قوم ان کھلاڑیوں کو ’’اپنا‘‘ سمجھتی ہے۔ مصر سے تعلق رکھنےوالے محمد صلاح ہوں یا فرنچ فٹ بالرپال پوگبا، نائجیریا سے تعلق رکھنے والے احمد موسیٰ ہوں یا جرمنی سے تعلق رکھنے میست اوزل، ا ن کے علاوہ بھی کئی فٹ بالرز مسلمان ہیں ، پاکستانی قوم جب ان فٹ بالرز کو میچ کے دوران ہاتھ اٹھا کر دعائیں مانگتےاور سجدہ شکر اداکرتےہوئے دیکھتی ہےتو ان کا دل خوشی سے جھوم اٹھتا ہے، کیونکہ مسلمان آپس میں بھائی بھائی ہیں ، تو ا س لئے پاکستانی نوجوان ان مسلمان فٹ بالرز کو کھیلتے دیکھ کر خوش ہورہے ہیں اور ان کی کامیابی کے لئے دعائیں کررہےہیں ۔

اس کے علاوہ لوگ فٹ بال دوسروں کے دیکھا دیکھی بھی دیکھنے لگتے ہیں ، دوستوں نے آپس میں ٹیمیں بانٹ لی ہوتی ہیں ، شرطیں لگائی جاتی ہیں، اپنی ٹیموں اور پسندیدہ کھلاڑیوں کی حمایت میں پوسٹس سوشل میڈیا پر شئیرکی جارہی ہوتی ہیں۔ ان دنوں نیمار ہو یا رونالڈو، دنیا کے بہترین فٹ بالرز کی تصاویراپنے گھروں ، گاڑیوں اور سوشل میڈیا اکائونٹ ڈی پیز پر لگاکر پاکستانی نوجوان یہ بات ثابت کررہے ہیں کہ انہیں فٹ بال سےبہت لگاؤ ہے، کراچی کےعلاقے لیاری میں بھی فٹ بال کے کھلاڑیوں کی قد آدم تصاویر دیواروںپر بنائی گئی ہیں۔

فی الحال تو پاکستانی قوم کا فٹ بال ورلڈ کپ کی طرف رجحان دیکھ کربے گانی شادی میں عبد اللہ دیوانہ، جیسا ہی محاورہ ذہن میں آتاہے تاہم اس بات کی امید کی جاسکتی ہے کہ آنے والے وقت میں ہماری ٹیم بھی اس ایونٹ کا حصہ بنے گی اور پاکستانی قوم کو ورلڈ کپ کے دوران اپنی ٹیم کو کھیلتے ہوئے دیکھ کر حقیقی خوشی حاصل ہوگی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube