Tuesday, January 25, 2022  | 21 Jamadilakhir, 1443

عجیب و غریب قوانین

SAMAA | - Posted: Oct 29, 2017 | Last Updated: 4 years ago
Posted: Oct 29, 2017 | Last Updated: 4 years ago

آج کے جدید اور ترقی یافتہ دور میں بھی ایک ایسا ملک موجود ہے جو پرانے دور کے بہت سے تاریخی حکمران اور ان کے عجیب وغریب قوانین کی عکاسی کرتا ہے ۔ جس کے قوانین کو دیکھتے ہوئے یہ ماننا ناممکن ہے کہ یہ 21 ویں صدی کا ملک ہے ۔ دنیا اس ملک کو شمالی کوریا کے نام سے جانتی ہے۔

شمالی کوریا میں کوئی شخص اپنی مرضی کے بال بھی نہیں رکھ سکتا حکومت کی طرف سےدئیےگئےعورتوں کیلئے28 اور آدمیوں کیلئے 10 طرح کے ہیئراسٹائل موجود ہیں۔انہیں میں سے ایک ہیئراسٹائل منتخب کرنا ہوتا ہے۔
شمالی کوریا میں ملٹری والے یا حکومت کے افسران ہی گاڑی رکھ سکتے ہیں اس کے علاوہ عام لوگوں کو گاڑی رکھنے کی بھی اجازت نہیں وہ پیدل چلیں یا پبلک ٹرانسپورٹ کا استعمال کریں۔
نارتھ کوریا میں اپنا الگ انٹرنیٹ چلتا ہے جو کورین زبان میں ہے۔ جسےصرف اورصرف 605 لوگ استعمال کرتے ہیں۔
وہاں میں جرم کرنے والے کو اس کے جرم کی سزا اس کی اگلی تین نسلوں تک کو بھگتنا پڑتی ہے۔

ایک عجیب و غریب قانون یہ بھی ہے کہ کسی شخص کو گرے رنگ کے علاوہ اپنے گھر کو پینٹ کرنے کی اجازت نہیں۔
شمالی کوریا میں ہرگھرمیں ایک ریڈیو لگا ہوا ہے جو وہاں کی حکومت کی طرف سے ہے جس کو بند کرنے کی اجازت نہیں ہے اور اس پر حکومتی خبریں ہی چلتی ہیں۔
شمالی کوریا میں ٹی وی کے صرف 3 چینل ہیں اور وہ بھی حکومت کے کنٹرول میں ہیں۔
شمالی کوریا والےجینز نہیں پہنتے جس کی وجہ یہ ہے کہ امریکہ میں جینز پہنی جاتی ہے ۔
شمالی کوریا کےسب سے بڑے حکمران’ کم جونگ ان’ ہیں اور انہوں نے اپنے چچا کو ننگا کرکے 120 بھوکے کتوں کے پنجرے میں صرف اس بنا پرپھنکوا دیا تھاکہ ‘کم جانگ ان’ کے خطاب کے دوران اس کا چچا سوگیا تھا۔
شمالی کوریا میں کوئی بھکاریوں کی تصویربھی نہیں کھینچ سکتا کیونکہ ‘کم جانگ ان’ نہیں چاہتا کہ باہر کی دنیا کو پتہ لگے کہ کوریا میں غربت بھی ہے۔

شمالی کوریا آنے والے کسی بھی سیاح کوفون لےجانے کی اجازت نہیں ۔کوریا میں آنے والے اپنے ساتھ فون نہیں لا سکتے اور فون ائیر پورٹ پر ہی جمع کر لیا جاتا ہے۔
شمالی کوریا میں ہر 5 سال بعد الیکشن ہوتا ہے لیکن ووٹ صرف ایک ہی امیدوار کوڈالا جاتاہے اور اسے ہی چنا جاتا ہے۔
شمالی کوریا میں فحش فلم دیکھنے کی اجازت نہیں ہے اور اس پر سخت سزا دی جاتی ہے۔
شمالی کوریا میں حکومت نے ایک ماڈل سٹی بھی بنایا ہوا ہے جو باہر سے دیکھنے پر انتہائی خوبصورت اوربہترین دکھائی دیتا ہے لیکن اندر سے یہ ایک خالی کھنڈر ہے۔

دنیا میں بہت عجیب و غریب حکمران اور بادشاہ گزرے ہیں جن کے شوق اور قوانین بھی حیران کن تھے جیسے امیر تیمور نے کھوپڑیوں کا مینار تعمیر کروایا، نیرو بانسری بجاتا رہا اور روم جلتا رہا، محمد شاہ رنگیلا نے اپنے دربار میں فضول اور عجیب قسم کے قوانین بنائے ہوئے تھے تاریخ اس قسم کے بے شمار واقعات سے بھری پڑی ہے لیکن وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ہر ملک ترقی کی منازل طے کرتا چلا گیا ۔سائنس ترقی کرتی چلی گئی، جدید ٹیکنالوجی بڑھتی گئی۔ اور پرانے ،بوسیدہ اور عجیب و غریب رسم و رواج اور روایات کی جگہ نئے دور کے نئے ماحول اور نئے قوانین نے لے لی۔وقت گزرتا گیا اور دنیا ایک نئے دور میں داخل ہوگئی۔لیکن آج کے جدید اور ترقی یافتہ دور میں بھی اس قسم کے قوانین کا لاگو ہونا انتہائی حیران کن بات ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube