نااہلی کے بعد عوامی طاقت دکھانے کا مقصد کیا ہے؟

August 11, 2017

Nawaz Stage Kunda Jehlum 10-08

تحریر: روحان احمد

پانچ معزز ججوں پر مشتمل سپریم کورٹ بینچ نے نوازشریف کو اقامہ اور دس ہزار تنخواہ نہ ظاہر کرنے پر نااہل قرار دیا اور نواز شریف نے اگلے چند ہی گھنٹوں میں وزیراعظم ہاؤس چھوڑدیا اور یہ پیغام دینے کی کوشش کی کہ وہ اور ان کی جماعت پاکستان مسلم لیگ نواز عدالتی فیصلے کا احترام کرتی ہے۔

پھر کیا ہوا؟ میاں صاحب نے صحافیوں سے ملاقاتیں کیں اور کہنے لگے کہ ان کو نااہل کرنے کا فیصلہ پہلے ہی کیاجاچکا تھااورصرف جواز تلاش کیا جارہا تھا لیکن نواز شریف یہ نہ بتاسکے کہ نااہلی کا فیصلہ کس نے کیا اور جواز آخر کون تلاش کررہا تھا؟ خیر پھر اعلان ہوا اسلام آباد سے گھر واپسی کا اور کہا گیا کہ ریلی کی صورت میں جی ٹی روڈ سے جاؤں گا۔

ریلی کا پہلا اسٹاپ راولپنڈی تھا، اس کے بعد میاں صاحب کا قافلہ کئی جگہوں پر رکا۔ تمام تقریروں میں ایک ہی بات بار بار میاں صاحب دہراتے رہے "کروڑوں لوگوں کے منتخب وزیراعظم کو قرار دینا ووٹرز کی توہین ہے اور عوام کو یہ فیصلہ منظور نہیں"۔یعنی نوازشریف نے فیصلہ نہیں مانا۔عوامی طاقت کا مظاہرہ کرنے سے عدالتی فیصلہ تبدیل نہیں ہوگا۔ پھر اس ریلی اور جلسے جلوسوں کی وجہ کیا ہے؟

NAWAZ DAWAT SOT 10-08

ٹی وی پر براجمان تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ میاں صاحب نیب ریفرینسز سے ڈرے ہوئے اور اداروں پر دباؤڈالنا چاہتے ہیں۔ ہوسکتا ہےکہ ایسا ہی ہو لیکن میرا خیال تھوڑا مختلف ہے۔ پنجاب مسلم لیگ کا قلعہ ہے۔اس میں کوئی شک نہیں لیکن یہ نہ بھولیں یہ صوبہ اسٹیبلشمنٹ کے لئے بھی ہمیشہ سے فری زون رہا ہے بلکہ یہ کہنا درست ہوگا کہ پنجاب اسٹیبلشمنٹ کے کھیل کا ہمیشہ سے ہی اہم حصہ رہا ہے۔

مثال کے طور پر پیپلزپارٹی کی حکومت گرانے کے لئے اسٹیبلشمنٹ نے پنجاب کے لیڈر نواز شریف کا انتخاب کیا، پہلے وزیراعلیٰ منتخب کروایا اور پھر وزیراعظم بھی منتخب کروایا۔1999میں پرویز مشرف نے جب نواز شریف کی حکومت کا تختہ الٹا تب بھی پنجاب سے ہی کنگز پارٹی یعنی پاکستان مسلم لیگ ق بنائی گئی اور سیاستدانوں کی وفاداریاں تبدیل کرائی گئیں۔

Nawaz Sharif Convoy 1730 Faizabad Khi 09-08

ایسی بہت سی سیاسی جماعتیں جو پنجاب میں وجود آئیں ان کے بارے میں یہ ہی خیال کیا جاتا ہے کہ یہ اسٹیبلشمنٹ کی پارٹیاں ہیں۔عوامی طاقت کا مظاہرہ کرنے کا فیصلہ میرے خیال سے نواز شریف نے پنجاب کی سیاست کو مدِنظر رکھتے ہوئےکیاہے۔نواز شریف کی نااہلی کے فیصلے کے بعد یہ کہا جارہا تھا کہ مسلم لیگ نواز ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوگی اور مختلف دھڑوں میں تقسیم ہوجائے گی۔

اطلاعات ہیں کہ نون لیگ میں بھی کچھ ایسے لوگ ہیں جو سیاسی وفاداریاں تبدیل کرنے کی سوچ رکھتے تھے۔ نواز شریف کے جلسے جلوس کا مقصد سیاسی وفاداریاں تبدیل کرنے کی سوچ رکھنے والوں کو یہ پیغام دینا ہے کہ وہ صرف عدالتی فیصلے سے نااہل قرار دیئے گئے ہیں تاہم پنجاب کا ووٹر آج بھی نواز شریف کیساتھ ہے۔

Email This Post
 
 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.