Sunday, January 16, 2022  | 12 Jamadilakhir, 1443

عربی خطاط جرمن خاتون

SAMAA | - Posted: Jan 22, 2016 | Last Updated: 6 years ago
SAMAA |
Posted: Jan 22, 2016 | Last Updated: 6 years ago

german 4

تحریر : سمرا افضل

کہتے ہیں نہ جیسا دیس ویسا بھیس، اس اردو محاورے کی جیتی جاگتی مثال ہیں پاکستان میں مقیم جرمن نژاد سونیا ہائیک، جو انیس سو بیاسی میں شادی کے بعد اپنے خاوند نعیم باجوہ کے ساتھ پاکستان آئیں اور ان کو یہ دیس ایسا بھایا کہ بس واپسی کا خیال بھلا دیا۔

رائیونڈ روڈ لاہور میں خوبصورت سا گھر بنایا اور دل لگی کیلئے باغیچے میں پالتو جانوروں کیساتھ سبزیوں، پھولوں اور پھلوں سے لدے پیڑ اگائے۔ پاکستان آمد پر سونیا کو اسلام کے بارے میں جاننے کا بہتر موقع ملا اور عربی خطاطی نے جرمن خاتون کو اتنا متاثر کیا کہ آج سونیا اسلامی فن خطاطی کی روح کو تازہ رکھنے کیلئے کوشاں ہیں۔ خطاطی کے سفر کا آغاز اللہ کے قرب اور روحانیت کے حصول کی کوششوں سے ہوا۔ german 3

سونیا نے مصوری کے فن کو اللہ کے ناموں اور آیات کی شکل میں خوبصورتی سے ڈھالا، سونیا کے مطابق ان کے دن کا زیادہ تر وقت عربی خطاطی میں مصروف رہتے گزرتا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ مصوری اور خطاطی کے ملاپ سے بننے والوں فن پاروں کو بیچنا نہیں چاہتیں، کیونکہ یہ ان کا جنون ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ زاویات، نقطوں، اور لکیروں پر مبنی فن خطاطی سیکھنے کیلئے سونیا نے کسی سے مدد نہیں لی بلکہ ایک ایک لفظ کو سیکڑوں بار لکھنے کے بعد اس فن میں مہارت حاصل کی ہے۔ سونیا قرآن و حدیث کو بہتر طور پر سمجھنے کیلئے عربی زبان بولنا بھی سیکھ رہی ہیں۔

german 2

عربی خطاط ہونے کیساتھ ساتھ سونیا کامیاب بزنس ویمن بھی ہیں اور گزشتہ کئی سالوں سے انٹیریئر ڈیزائننگ کا کاروبار کامیابی سے چلا رہی ہیں۔ پاکستان میں گزرا تین دہائیوں سے زیادہ وقت نے انہیں ایک سچا پاکستانی بنا دیا ہے۔ سونیا کی خواہش ہے کہ ان کے بچوں کی طرح باقی پاکستانی نوجوان بھی اعلیٰ تعلیم کے حصول کے بعد بیرون ممالک جانے کی بجائے اپنی صلاحیتیں پاکستان کی ترقی میں گزاریں۔german 1

سونیا کے خاوند نعیم باجوہ کا کہنا ہے کہ شادی کے بعد ان کا خیال تھا کہ شاید سونیا پاکستانی ماحول میں زیادہ وقت نہ گزار پائے اور انہیں واپس جرمنی ہی آنا پڑیگا، لیکن ایسا نہ ہوا۔ سونیا نے نہ صرف مذہنی اور سماجی طور پر خود کو اس ماحول کے مطابق ڈھالا بلکہ بچوں کی تربیت میں بھی کوئی کمی نہیں رہنے دی۔ آج سونیا بھی عام پاکستانی خواتین کی طرح ہنسی خوشی یہاں رہ رہی ہیں اور بیرون ملک سے آئے دوسرے افراد کیلئے رول ماڈل بن چکی ہیں۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube