Sunday, January 16, 2022  | 12 Jamadilakhir, 1443

نشے میں ڈوبے نوجوان اور سُست حکومت

SAMAA | - Posted: Nov 12, 2015 | Last Updated: 6 years ago
SAMAA |
Posted: Nov 12, 2015 | Last Updated: 6 years ago

 2a

مختلف پھلوں اور تمباکو فلیورز میں متعارف ہونیوالا شیشہ چند ہی سالوں میں پاکستانی نوجوان نسل میں ایسا پھیلا کہ اسٹیٹس سمبل اور فیشن بن گیا لیکن بات صرف یہیں نہیں رکی، حکومت کی جانب سے روک تھام نہ ہونے کی وجہ سے کئی شیشہ کیفے نشے کے اڈوں میں تبدیل ہوگئے اور درجنوں نوجوان لڑکے لڑکیاں شوق شوق میں ہی نشے کے عادی بن گئے، انسداد منشیات کی ٹیموں کے مطابق کئی شیشہ کیفیز میں نشے کے عادی نوجوان اکثر صراحی میں شراب، چلم پر چرس رکھ کر پیتے اور نشہ آور انجیکشنز لگاتے پکڑے گئے۔

2

فیشن کے نام پر نشے میں ڈوبتی نوجوان نسل کو ہوش و حواس میں رکھنے کیلئے شیشہ کیفے پر پابندی اور قانون سازی بہت ضروری ہے لیکن حکومت اس معاملے میں زیادہ سنجیدہ نہیں لگتی، ہائیکورٹ اور سپریم کورٹ نے تو شیشہ کیفیز پر پابندی کا حکم دیدیا لیکن آبادی کے لحاظ سے پاکستان کے سب سے بڑے صوبے پنجاب میں گزشتہ پونے 2 سال سے شیشہ کیفے بنانے پر پابندی کا بل وزیراعلیٰ اور گورنر کے دستخط نہ ہونے کی وجہ سے قانونی شکل اختیار نہیں کرسکا۔

گیارہ مارچ 2014ء کو پنجاب اسمبلی سے پاس ہونے کے بعد بل ڈیڑھ سال صحت کی اسٹینڈنگ کمیٹی کے پاس پڑا رہا، جس کے بعد خدا خدا کرکے منظوری کیلئے وزیراعلیٰ کے پاس پہنچا اور اب ڈیڑھ ماہ سے یہ بل اس انتظار میں پڑا ہے کہ وزیراعلیٰ بھی اس بل کی منظوری دیں اور یہ گورنر کی میز پر دستخط کیلئے پہنچے۔

2c

ایک سروے کے مطابق ملک بھر میں تقریباً 90 لاکھ افراد ہارڈ اور سافٹ نشہ لے رہے ہیں، ابتدائی طور پر صرف لاہور میں ہی 360 شیشہ کیفے کھولے گئے تھے، جن میں سے 180 کے قریب کیفے ضلعی انتظامیہ کی کارروائیوں سے بند کروادیئے گئے لیکن اب بھی کئی پرائیوٹ مقامات، ہاسٹلز، ریسٹ ہاؤسز اور کرائے کے فلیٹس میں خفیہ طور پر شیشہ اسموکنگ جاری ہے۔

شیشہ کیفوں پر قانونی پابندی عائد ہونے کی صورت میں شیشہ پینے، پلانے، اور مواد رکھنے یا فراہم کرنیوالے کو 3 سال قید اور ایک لاکھ روپے جرمانے کی سزا دی جائے گی۔

2b

انسداد منشیات کے ماہرین کے مطابق پنجاب حکومت کیجانب سے شیشہ اسموکنگ کیخلاف قانون سازی میں تاخیر کی ممکنہ وجہ تمباکو بیچنے والی کمپنیوں کی جانب سے دباؤ ہوسکتا ہے لیکن اس تاخیر کی وجہ سے نوجوان نسل تباہی کے راستے پر چل رہی ہے، سیاسی تقریروں میں نوجوانوں کو روشن مستقبل کے خواب دکھانے والے حقیقت میں نوجوانوں کیلئے کتنے سنجیدہ ہیں، اس کا اندازہ تو بخوبی لگایا جاسکتا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube