Wednesday, January 26, 2022  | 22 Jamadilakhir, 1443

مسجد اقصیٰ کا معاملہ، اسرائیل کو امریکی آشیر باد

SAMAA | - Posted: Oct 20, 2015 | Last Updated: 6 years ago
Posted: Oct 20, 2015 | Last Updated: 6 years ago

مسئلہ فلسطین اتنا ہی گھمبیر ہے جتنا مسئلہ کشمیر، فلسطینی اور کشمیری عوام نے اپنی سرزمین کی آزادی کیلئے بے پناہ قربانیاں دی ہیں اور دونوں اقوام نے تاحال اپنے حق کیلئے جہدوجہد جاری رکھی ہوئی ہے۔

5c

کشمیر میں بھارتی فوج نے مظالم کی داستانیں رقم کی ہیں تو فلسطین میں اسرائیلی فوج مسلمانوں پر ظلم ڈھا رہی ہے اور اسے دنیا کی واحد سپر پاور امریکا کی پوری آشیر باد حاصل ہے، معصوم اور بے گناہ فلطسینیوں پر ڈھائے جانے والے ہر ظلم میں امریکا اسرائیل کی کھلم کھلا حمایت کرتا ہے۔

5d

فلسطین میں مقبوضہ بیت المقدس (جسے اسرائیل نے یروشلم کا نام دیا ہوا) میں مسجد اقصیٰ بھی واقع ہے جو مسلمانوں کا مقدس مقام اور قبلہ اول بھی ہے، مسجد اقصیٰ مقبوضہ بیت المقدس کی سب سے بڑی مسجد ہے، جس میں کم از کم 5000 افراد نماز ادا کرسکتے ہیں جبکہ مسجد کے صحن میں بھی ہزاروں نمازیوں کی گنجائش ہے، تمام دنیا کے مسلمانوں کیلئے مسجد اقصیٰ خانہ کعبہ اور مسجد نبوی ﷺ کے بعد تیسرا مقدس ترین مقام ہے۔

5f

اسرائیل نے ہمیشہ فلسطین کے مسلمانوں پر مظالم ڈھائے اور حالیہ دنوں میں صہیونی فوج نے مسجد اقصیٰ پر قبضہ کیا ہوا ہے، مسلمانوں پر مسجد اقصیٰ کی حدود میں داخلے پر پابندی لگادی گئی ہے، قابض اسرائیلی فوج مسجد کی سر عام بے حرمتی کررہی ہے جبکہ فلسطینی مسلمان بے سرو سامانی کے باوجود ظالم صہیونی فوج کیخلاف احتجاج کررہے ہیں اور اپنے مقدس ترین مقام پر سے اسرائیلی فوج کا قبضہ چھڑانے کی کوشش میں ہیں۔

5e

اسرائیلی فوج اور فلسطینی مظاہرین کے درمیان مسجد اقصیٰ کے معاملے پر جھڑپوں میں اب تک 50 کے قریب فسلطینی شہید ہوچکے ہیں جبکہ اس سے قبل فلسطینی مسلمانوں کی شہادتیں ان گنت ہیں، اسرائیلی فوج کے پاس ہر قسم کا جدید اسلحہ ہے جبکہ فلسطینی مظاہرین صہیونی فوج کا پتھروں سے مقابلہ کررہے ہیں۔

اقوام متحدہ کے جنرل سیکریٹری بان کی مون نے اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے تشدد کے خاتمے کی اپیل کی ہے جبکہ عالمی طاقت امریکا اسرائیل کے مظالم کی کھلم کھلا حمایت کررہا ہے، مسئلے کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے عالمی برادری نے مسجد اقصیٰ کے مسئلے پر عالمی مبصرین کی میٹنگ بلانے کو کہا تو امریکا نے اسرائیلی مؤقف کی کھلم کھلا تائید کرتے ہوئے کہا کہ مسجد اقصیٰ کے معاملے پر عالمی مبصرین کی ضرورت نہیں ہے۔

5a

امریکی وزیر خارجہ جان کیری کا کہنا تھا کہ ہم کسی تبدیلی پر غور نہیں کر رہے اور نہ ہی اسرائیل کو ایسا کرنا چاہئے، اسرائیل اس معاملے میں حالات کو جوں کا توں رکھنے کی اہمیت سمجھتا ہے، مسلمانوں کے مقدس مقام مسجد اقصیٰ میں عالمی مبصرین کی تعیناتی اور عالمی نگرانی مسئلے کا حل نہیں۔

5b

سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ امریکا کا اگر ایک شہری بھی کہیں قتل ہو جائے تو امریکا آسمان سر پر اٹھا لیتا ہے اور ملکوں پر چڑھائی کر دیتا ہے، امریکا کو معصوم فلسطینیوں کی شہادتیں نظر کیوں نہیں آتیں؟، سچ تو یہی ہے کہ اسرائیل امریکا کا ہی پٹھو ہے اور اسی کی شہہ پر فلسطینی مسلمانوں پر ظلم ڈھا رہا ہے، اسرائیل کو امریکا کی پوری آشیر باد حاصل ہے۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube