Raazia Syed

Author is journalist by profession currently working as a researcher in private channel.

اخلاقیات بمقابلہ قابلیت

سقراط کی مجلس میں ایک شخص آیا ، اس نے بہت قیمتی لباس زیب تن کر رکھا تھا اوراسے اسی بات کا یقین تھا کہ سقراط اس کے لباس فاخرہ کی وجہ سے اس سے متاثر ہوئے بغیر نہیں رہ سکتا ۔ لیکن حیرت کا مقام تو یہ تھا کہ سقراط نے اسکی رتی برابر…

Read More
 

زندانوں میں کیاگذری؟

منٹو نے ایک مرتبہ کہا تھا کہ’’ میں سزائے موت کا قائل نہیں ہوں ، میں جیل کے حق میں بھی نہیں ہوں کیونکہ میں سمجھتا ہوں کہ جیل انسان کی اصلاح نہیں کر سکتا لیکن میں ایسے اصلاح خانوں کے حق میں ہوں جو غلط رو انسانوں کو صیحح راستہ بتا سکیں ‘‘۔ اگرچہ…

Read More
 

تنہا ذمہ داری کیسے اٹھائوں ؟

موت کائنات کی سب سے بڑی حقیقت ہے کیونکہ جس نے بھی اس دنیا پر آنا ہے وہ اپنے مقررہ وقت پر اس زندگی کے قفس سے آزاد ہو جاتا ہے، اگرچہ زندگی بہت خوب صورت ہے لیکن کبھی کبھی مشکلات کے بار تلے دب کر انسان خود اس قید سے جان چھڑانے کی سوچتا…

Read More
 

ہم جنہیں رسم دعا یاد نہیں

دعاایک ایساہتھیاراور ایک ایسی طاقت ہے کہ جس کے پاس دعا کا تحفہ ہو تواسےعرش کی بلندیوں تک پہنچنے سے کوئی نہیں روک سکتا۔ ہماری زندگیوں میں بہت سے مددگار ہاتھ ہوتے ہیں جو ہماری مشکلات اور پریشانیوں میں ہمارا ساتھ دیتے ہوئے نظر آتے ہیں۔یہ ہاتھ ہمارے لئےدعاکرنےوالےہوتےہیں۔اب دعاؤں کےلئےاٹھتےہوئےیہ ہاتھ ہمارے والدین کے…

Read More
 

میراگھر ۔۔۔ میراکنبہ

وہ ایک پنجابی زمیندار تھا جس کی مجبوریوں کی داستان اور قرضوں کے قصے تو آپ سب نے میری طرح اپنی درسی کتب میں پڑھ رکھے ہیں کہ کس طرح اس زمیندار نے اپنی برادری کی ناک اونچی رکھنے کے لئے سماج کے فرسودہ طریقوں کو اپنا کر خود کو اور اپنے گھر والوں کو…

Read More
 

وہ موسیقی اب کہاں ۔۔؟

۔۔۔۔۔**  تحریر ؛ راضیہ سید  **۔۔۔۔۔ ہمیں اس بات سے 100 فیصد اتفاق ہے کہ موسیقی روح کی غذا ہے تاہم موسیقی کی جو قسم اور صورت آج کل چل رہی ہے، اس کے ہم بہت مخالف ہیں ڈم ڈم، ہا ہا، ہو ہو قسم کے ساز جن کو چھونے پر وہ بھی برا مان…

Read More
 

وکیل کی بریانی

کل ہی ایک ڈھابہ ہوٹل پر مجھے کھانا کھانے کا اتفاق ہوا ، اتنی چھوٹی سی جگہ پر اتنا لذیذ اور صاف ستھرا کھانا ، کھانے سے پہلے تو بیٹھنے کی جگہ دیکھ کر ہی دل خوش ہو گیا ۔ گھر والے ہمارے باہر کھانا کھانے کی عادت سے بہت پریشان ہیں کہ ہم ایک…

Read More
 

سب معیار عورت کے لئے ہی کیوں ؟

عورت بہن ، بیوی ، بیٹی ، ماں اور کتنے ہی رشتوں کا نام ہےلیکن اس نام کے ساتھ کتنے ہی معیار جوڑ دئیے گئے ہیں اسکا تو کوئی شمار ہی نہیں۔ اس کےکردار کو ماپنے کے کتنے ہی پیمانے مقرر کر دئیے گئے ہیں ۔ کبھی لڑکی کے رشتے کے لئے جانا ہو تو…

Read More
 

کہیں تو اماں ملے

تحریر: راضیہ سید ایک تنگ و تاریک بدبو دار سیلن زدہ کمرہ اور اس میں لوہے کی چار چارپائیاں جو ایک قطار میں موجود تھیں مجھے دکھائی دیں، بطور صحافی دارلامان میں یہ میرا پہلا چکر تھا، کمرے میں گھٹن اور بدبو کے باعث میرا اور میری ٹیم کا رکنا دشوار تھا۔ لیکن میں ان…

Read More
 

باپ کو نظراندازنہ کریں

 میں نے تمھیں کہہ دیا ہے کہ تمھاری ماں ہی تمھاری سب سے بڑی خیر خواہ ہے ، اب یہ بات پلو سے باندھ لو کہ باپ کسی کے بھی نہیں بنتے ، یہ صرف ماں کی ممتا ہی ہوتی ہے جو بچوں کے لئے ہر طرح کی قربانی دیتی ہے ۔یہ الفاظ گلی میں…

Read More
 

پاکستان میں پنجابی فلموں کا زوال

تحریر؛ راضیہ سید زبان ابلاغ کا ایک اہم ذریعہ ہے یہ ایک ایسی طاقت ہے جو اشرف المخلوقات کو جانوروں سے ممتاز کرتی ہے، اگر یہ کہا جائے کہ قومی زبان علاقائی زبانوں سے سجا ہوا ایک گلدستہ ہوتا ہے تو کچھ غلط نہیں ہوگا کیونکہ قومی زبان اگر وحدت کا باعث ہے تو علاقائی…

Read More
 

پانی پلاؤ،ثواب کمائو

دن رات ٹی وی اور اخبارات میں پانی کی کمی اور آلودہ پانی کے استعمال کی کہانیاں سن کر انسان جہاں ایک خفت میں مبتلا ہو جاتا ہے وہیں کچھ خوشگوار ماضی کی یادیں بھی ذہن میں آنے لگتی ہیں جو پانی اور اسکے استعمال سے متعلق ہوتی ہیں۔ مجھے اپنے پورے محلے کے گھروں…

Read More
 

نوجوان نسل اور ان کے خواب

تحریر : راضیہ سید نجمہ آنٹی آج کل کافی پریشان ہیں کہ ان کے بیٹے شکور کو کوئی نوکری نہیں مل رہی حالانکہ اسکے پاس پروفیشنل ڈگری بھی ہے ، شکور کی تین بن بیاہی بہنیں ہیں جن کے مستقبل کی فکر بھی اس نے ہی کرنی ہے ۔ والد ریٹائرڈ افسر اور اماں گھریلوخاتون…

Read More
 

بچوں کے فیشن پرکم توجہ کیوں

بچے بےچاروں کی عید کے بغیر سنے کون اور کیوں سنے کہ بس ان کو تو عید کے عید ہی من پسند کپڑے پہننے کو ملتے ہیں۔ باقی پورا سال تو بس زیادہ تربچوں کے لبوں پر ایک ہی شکوہ ہوتا ہے کہ ’’ہم کیا کریں کچھ لے کے ، ہماری امی اور پھوپھو تو…

Read More
 

اسٹریٹ کرائمز سے نجات کیا ممکن؟

۔۔۔۔۔**  تحریر  : راضیہ سید  **۔۔۔۔۔ آج کا موضوع تو یقیناً پرانا ہے لیکن ہماری ایک جاننے والی کیلئے پہلا پہلا اور بہت ہی ناخوشگوار ہی ہے کیوںکہ ان کا نا صرف موبائل کل گلی میں چوری ہوا بلکہ ان کے قیمتی زیورات بھی اسلحے کے زور پر اتروا لئے گئے۔ یعنی کہ یہ ایک…

Read More
 

ذہنی آزمائش کے مقابلے اب کم کیوں؟

تحریر : راضیہ سید اسکول کالج کے دن ایک طالب علم کبھی نہیں بھول سکتا کیوں کہ دوستوں کی اچھی یادیں اور اساتذہ کی شفقت اسے نہیں بھولتی لیکن کچھ ایسی غیر نصابی سرگرمیاں بھی ہوتی ہیں جن کو باوجود کوشش کے وہ بھلا نہیں پاتا ۔ تعلیم کا مقصد صرف ’’رٹو طوطے ‘‘ تیار…

Read More
 

پہلے پورا پاکستان تو دیکھ لیں ۔

ہماری دادی اماں کے خیال کے مطابق یورپی اور مشرق وسطی کے ممالک کی سیر فضول ہے کیونکہ ان کا یہ ماننا ہے کہ جو لوگ دبئی چلو کی رٹ لگاتے ہیں اصل میں بے وقوف ہوتے ہیں کیونکہ وہ پاکستان جیسی جنت کو چھوڑ کر مصنوعی جنت کی سیر کیوں کرنا چاہتے ہیں ؟…

Read More
 

خواتین میں نشہ آور اشیا کا بڑھتا ہوا استعمال

گذشتہ دونوں ہمارے ہاں ایک رشتے دار خاتون گاؤں  سے آئیں تو مجھے یہ دیکھ کر بہت حیرت ہوئی کہ اب تک حقے نے اس ترقی یافتہ دور میں بھی ان کاپیچھانہیں چھوڑا ، حتی کہ  یقین مانیے کہ ہمارے گھر آنے کے بعد بھی انھوں نے حقہ یہاں راولپنڈی سے خریدا اور گھر آکر…

Read More
 

دستی پنکھے،رواج یاآجکل کی ضرورت

دیکھا جائے تو ہماری زندگی میں بجلی کی بہت اہمیت ہے۔کبھی کوئی حکومت آکر ہمیں یہ نعرہ دیتی ہے اور ساتھ ہی تسلی بھی کہ اب پریشان ہونے کی کوئی ضرورت نہیں ہے کیونکہ ’’اب میرے گاؤں میں بجلی آئی ہے ۔‘‘کبھی کوئی گلوکارہ یہ گاتے ہوئے سنائی دیتی ہیں ’’بجلی آئے یا نہ آئے…

Read More
 

درست ابلاغ اب کیوں نہیں ؟

مجھے یہ کہنے میں کوئی عار نہیں کہ مجھے بچپن میں ریاضی اور سائنس کے مضامین بہت ہی برے لگتے تھے اسکی وجہ یہ نہیں تھی کہ میں کوئی بہت نالائق یا ڈفر طالبعلم تھی بلکہ اسکی بنیادی وجہ یہ تھی کہ میں ان مضامین کی پیچیدگی سے زیادہ ان کی استانیوں سے خوف زدہ…

Read More
 

ہنر مند خواتین اور ہماری ذمہ داریاں

تحریر: راضیہ سید خواتین جو ہماری آبادی کا تقریبا 52 فیصد ہیں زندگی کے ہر شعبے میں مردوں کے شانہ بشانہ  کام کر رہی ہیں، یہ الگ بات ہے کہ ملازمت پیشہ خاتون دو مختلف محاذوں پر لڑ رہی ہے۔ ایک جانب بچوں کی دیکھ بھال ہے تو دوسری طرف شوہر اور دیگر سسرال والوں…

Read More
 
 
 
 

مصنفین