Leena Hashir

Leena Hashir is daughter of renowned poet Anwer Masood. She writes columns, short stories and light satire. She tweets as @leenahashir93

شہید بچے کی پاگل ماں

سنا تھا وقت  کسی کے لیے نہیں رکتا- کوئی مرے یا جیے  اس کو کوئی فرق نہیں  پڑتا-  گھڑی کی  سوئیاں بھی اپنی رفتار سے چلتی رہتی ہیں – کیلنڈر پر لکھے ماہ و سال بھی اپنے اپنے مقررہ وقت پر آتے جاتے رہتے  ہیں- لیکن جس گھر میں تم رہتے تھے وہاں سولہ دسمبر…

Read More
 

سرحد پر کل رات سنا ہے چلی ہے گولی

زینب  سرحد کے اِس پار پیدا ہوئی اور راکھی کا جنم سیما کے اُس پار ہوا، دونوں کا تعلق اس طبقے سے تھا جن کے گھر بیٹی پیدا ہوتے ہی اس  کیلئے جہیز اکٹھا کرنے کی فکر لاحق ہوجاتی ہے اور ماؤں کی آنکھوں میں ان کو دلہن بنا دیکھنے کی خواہش دن رات  زور…

Read More
 

قنوطیت پسند قوم اور کنٹینرز

ہماری قوم قنوطیت پسند ہے .ہر روشن پہلو میں سے ایک ایسا  تاریک پہلو نکال لیتی ہے کہ عقل ششدر ره  جاتی ہے اوراب قوم کی مزید رہنمائی کے لئے یہ کام میڈیا نے بھی نبھانا شروع کر دیا ہے۔اب ذرا آپ خود ہی سوچیں کہ گزشتہ دنوں خان صاحب کی ریلیوں کے وقت کتنی…

Read More
 

اچھی آپا اور ننھی نے گاؤں چھوڑ دیا

اچھی آپا اور ننھی کی  گھر کہلانے والی جھونپڑیاں ساتھ ساتھ تھیں ۔ اور ان میں  بہت سی چیزیں مشترک ہونےکے ساتھ ساتھ غربت کا رنگ بهی ایک جیسا تها.چھوٹی عید پر نئے کپڑے،جوتے اور میٹھا پکانے کا رواج ان کے گھروں میں نہ تها عیدی کے نام پرننهی کو پانچ سال سے تسلی دی…

Read More
 

بستی سے سیلاب گزرنے والا ہے

پوری دنیا ہمیں سلام کرتی ہے.کوئی ہمارے ملک کی طرف میلی آنکھ سے دیکھے تو ہم اس کی آنکھیں نکال دیتے ہیں.ہم جہاں چاہیں اپنے دشمن کو  نشانہ بنا کر ڈرون  سے اس کے پرخچے اڑا سکتے ہیں.دنیا بهر کے لوگ ہمارے ملک کی شہریت کے لیے ترستے ہیں. ہمارے پاس دولت ہے ، ایجادات…

Read More
 

تم ایسے روٹھے کہ مدرزڈےپربھی نہ آئے

مدرز ڈے کو گزرے کتنے دن ہو گئے ۔ یہ تو گزرگیا ہے، ناجانے اب اور بھی کتنے گزریں گے۔ اس دفعہ بھی میرے کان  اس دستک کو سننے کے لیے بے قرار تھے جو تم کئی سالوں سے مدرز ڈے کی رات میرے دروازے پر دیتے تھے۔ کمرے میں داخل ہوتے ہی بڑی گرم جوشی سے …

Read More
 

باجی، میٹرو لندن جائے گی؟

حکومتی کارندے جب بھی میٹرو  سروس کا ذکر کرتے ہیں  تو ہمارا دل کرتا ہے کہ ہم میٹرو اسٹیشن پرجاکراس کی آرتی اتاریں.اس پر تلک لگائیں،اس کی بلائیں لیں.ماشااللہ جس دن سے بنی ہے اسی دن سے خسارے میں چل رہی ہے.ہماری سمجھ میں نہیں آ رہا جس ملک میں میٹرو چلتی ہے اس کے…

Read More
 

گینگ ریپ اور تیس من گندم

آٹا، گهی، دال چاول، روٹی کپڑا مکان کے علاوہ یہاں اور بهی  بہت کچھ بکتا ہے، اس بے حسی کے بازار  میں ہر چیز بکاؤ ہے، ضمیر بکتا  ہے، ایمان کی بولی لگتی ہے، نعرے بکتے ہیں، خواب بکتے ہیں، زندہ انسان کا سودا ہوتا ہے، لاشوں کی بولی لگتی ہے، انسانی  اعضا بیچنے کا…

Read More
 

جرم

جب جرم بھیانک ہو تو اس کی سزا بھی اتنی ہی خوفناک ملنی چاہیے .مجرم کو لوگوں کے سامنے عبرت کا نشان بنا دینا چاہیئے تاکہ باقی تمام عمر اپنے کردہ گناه کی سزا کاٹے.جب تک مجرم کو  سزا نہیں ملے گی تو معاشرے میں سدھار کس طرح ممکن  ہو گا.اس بار پھر سزا پانے…

Read More
 

شکر خدا کا

تحریر:لینہ حاشر ویگن سے اترتے ہی زاد سفر کو اپنے کندھوں سے اتارا.چلنے کی بجائے بھاگنے کو فوقیت دی ۔ منزل مقصود پر پہنچتے ہی دروازے کی گھنٹی  پر ہاتھ رکھا اور ہاتھ اٹھانا بھول گیا.دروازے کھلا تو ماں پھولوں کا ہار تھامے ہماری منتظر تھی ۔ایک ملازم مٹھائی  کا ڈبہ لیا مسکرا رہا تھا۔ ہمارے دل میں…

Read More
 

بہت یاد آتے ہو

  تحریر:لینہ حاشر  آج ہفتہ ہے اور پچھلے ہفتے کی طرح تم آج بھی گھر نہیں آؤ گے بلکہ اب تم کبھی بھی گھر نہیں آؤ گے۔ 20 جنوری کے سانحہ کے بعد مجھ جیسی بہت سی مائیں دروازے کو تکتے تکتے تھک گئی  ہوں گی۔مگر اب یہ انتظار نہ ختم ہونے والا ہےجس کے خیال سے…

Read More
 

تھر میں دودھ کی نہریں

 تحریر:لینہ حاشر                         محترم جناب  مولا بخش چانڈیو اور نثار کھوڑو صاحب نےتازہ تازہ مٹھی کے ہسپتال کا دورے کیا اور ہم کو یہ نوید مسرت سنائی کہ مٹھی کے ہسپتال  میں  کام اطمینان  بخش ہے.نہ تو ادویات کی کمی ہے اور نہ ہی عملہ  سے کوئی شکایت  ہے.قحط سے کسی بچے کی موت نہیں ہوئی.جن…

Read More
 

ارکان سندھ اسمبلی کیلئے بیوٹی پارلر کے مختلف پیکجز

تحریر:لینہ حاشر ارکان اسمبلی کے لیے بیوٹی پارلر کی خبر سنتے ہی ہم سجدہ شکر بجا لائے.اس ملک کے حکمرانوں کی جانب سے عوام پر ایک اور احسان عظیم. ہم نے حکمرانوں کی کامیابی اور لمبی زندگی کے لیے ہاتھ  اٹھا اٹھا کر دعائیں کیں . خدا کے آگے گڑگڑا کر دعائیں مانگیں کہ ہم…

Read More
 

ہائے نی میں پتر کنوں آکھاں

تحریر : لینہ حاشر سیلاب گزشتہ ایک سال سے روز آتا ہو گا، روز سارے حفاظتی بند باندھے جاتے ہونگے، مگر تمام بند،تمام پشتے ناکارہ ثابت ہوجاتے ہوں گے۔ شہید بچوں کی یادوں کی شدت جب زور پکڑتی ہوگی تو تمام حوصلے اور ہمت مائیں ہار بیٹھتی ہوں گی، جس لمحہ تمام تر صبر کا…

Read More
 

گدھوں کا احترام کیجئے

تحریر:لینہ حاشر کم از کم اتنا تو ہوا کہ حرام گوشت کی فروخت پرآٹھ سال کی قید کا قانون بنادیا گیا ہےاور اس نئے قانون کی منظوری میں دیر نہیں کی گئ .اس قانون سے گدھوں کا سب سے زیادہ فائدہ ہوا ہے.کس کس طرح  سےانہوں نے ہماری خدمت کی ہے . آخرکار کسی نےتو…

Read More
 

مر نہ جاتے گر اعتبار ہوتا۔۔!!۔۔

کس طرح ہماری پولیس ایسے کارنامے سر انجام دیتی ہے کہ عقل دنگ ره  جاتی ہے.ان کے کارناموں کے بعد کیا کیوں کب اور کیسے جیسے سوالوں کا جواز ہی پیدا  نہیں ہوتا کیونکہ معجزوں کے جواب ملنا مشکل ہی نہیں بلکہ ناممکن ہے۔ ایک ایسا ہی کارنامہ ہماری سندھ کی پولیس نے تازہ تازہ…

Read More
 

گول روٹی نہ پکانے والی انیقہ کا جنت سے اپنے والد کے نام خط

میرے پیارے بابا میں بہت خوش تھی کہ آج میں اپنے بابا کو اپنے ہاتھ سے روٹی بناکر کھلاؤں گی اور مجھے اس بات کا یقین بھی تھا کہ آپ میری اس کوشش کی بہت تعریف کریں گے، میرے ماتھے کو بوسہ دینگے، میرے ہاتھوں کو پکڑ کر کبھی اپنے رخسار سے لگائیں گے اور…

Read More
 
 
 
 

مصنفین