Jalal Noorzai

کوئٹہ: پشتون آباد میں نمازِ جمعہ سے قبل دھماکہ،3 افراد جاں بحق،متعدد زخمی

کوئٹہ کے علاقے پشتون آباد کی رحمانيہ مسجد ميں نماز جمعہ کے وقت بیان سے قبل دھماکہ ہوا جس سے 3 افراد جاں بحق اور 2 درجن سے زائد زخمی ہوگئے۔   دھماکے کے بعد زخمیوں کو جائے وقوعہ پر موجود دیگر افراد نے اپنی مدد آپ کے تحت فوری طور پر اسپتال منتقل کیا۔…

مزید پڑھیے
 

پولیو مہم، دہشت گردی اور کج بیانی

پاکستان کے اندر بچوں کو پولیو سے بچاﺅ کے قطرے پلانے کی مہم کی راہ میں ہر طرح کے روڑے اٹکائے گئے حالانکہ ملک کے بڑے بڑے دانشور، علمائے کرام، خصوصاً بڑے معتبر دینی مدارس، مدارس کی بڑی تنظیمات، دینی جماعتیں اور ان کے اکابر اس بابت عوام الناس سے انسداد پولیو ویکسین کے قطرے…

مزید پڑھیے
 

ضرورت غیر مبہم پالیسیوں کی ہے

وزیراعظم عمران خان کے دورہ ایران(22اپریل) ، ایرانی صدر حسن روحانی سے ملاقات کے بعد یہ ضرورت مسلمہ ٹھہری ہے کہ دونوں ممالک ان گروہوں اور تنظیموں کے خلاف موثر، مربوط کارروائیوں کا آغاز کریں، جن کی وجہ سے نہ صرف امن و تحفظ پامال ہے بلکہ یہ ہمسایہ ممالک کے درمیان بد اعتمادی اور…

مزید پڑھیے
 

بلوچستان، دہشت گردی کی نئی لہر

کوئٹہ کی ہزار گنجی سبزی منڈی میں خودکش حملے کو چند دن ہی ہوئے تھے کہ 18 اپریل کو مکران کوسٹل ہائی وے پر اورماڑہ کے مقام پر مسلح افراد نے بسوں سے مسافروں کو اتارا، شناختی کارڈ دیکھے، ان میں سے 16 افراد کو شناخت کرکے ہمراہ لے جایا گیا، جہاں ان کے ہاتھ…

مزید پڑھیے
 

نیشنل پارٹی اور اٹھارویں آئینی ترمیم

اپریل کی 4 تاریخ کو نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکریٹری اطلاعات برادرم ڈاکٹر اسحاق بلوچ نے ظہرانے پر مدعو کیا، تقریب کوئٹہ پریس کلب کے نو منتخب عہدیداروں کے اعزاز میں منعقد کی گئی تھی، ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ، پارٹی کے سیکریٹری جنرل جان بلیدی بھی موجود تھے، میں کچھ تاخیر سے پہنچا اس بناء پر…

مزید پڑھیے
 

بلوچستان کی معدنی دولت اور دعوے

  بلوچستان کی قسمت بدلنے کیلئے ابھی وقت درکار ہے، صوبے کے نمائندے اور سرکاری مشینری دیانت کا مظاہرہ کریں تو قلیل وقت میں صوبے کا مقدر تابناک ہوسکتا ہے، بلوچستان سونا، چاندی، تانبا، تیل، گیس، کوئلہ، کرومائٹ سمیت بیش بہا قیمتی پتھروں اور معدنیات کا عظیم خزانہ اپنے سینے میں چھپائے ہوئے ہے۔ المیہ…

مزید پڑھیے
 

جام کمال کے خلاف اپنوں کا محاذ

حکومتیں ہمہ وقت تنقید کی زد میں رہتی ہیں۔ ایسی ہی صورتحال کا بلوچستان حکومت کو سامنا ہے۔ بلوچستان اسمبلی میں حزب اختلاف کی جماعتوں کا نو مارچ کو ساروان ہاﺅس میں اجلاس ہوا۔ بعد ازاں گیارہ مارچ کو پریس کانفرنس کے ذریعے حکومتی کارکردگی پر سوالات اٹھائے۔ صوبے میں پبلک سیکٹر ڈیولپمنٹ پروگرام (…

مزید پڑھیے
 

محتاط وزیر اعلیٰ اور مسائل کے انبار

بلوچستان کے وزیراعلیٰ بہت محتاط شخص ہیں، ان کی پوری کوشش ہے کہ اپنی حکومت میں صوبے کی بہتری کیلئے بڑے پیمانے پر کام کریں، یقیناً وہ اس جانب بڑھنے کیلئے اپنی صلاحیتوں کو استعمال بھی کررہے ہیں، اس مقصد کیلئے وقت بھی دے رکھا ہے، ظاہر ہے کہ کوئی بھی انقلابی اقدام اور تبدیلی…

مزید پڑھیے
 

شور بازار کا صبغت اللہ مجددی

کابل کے شور بازار کے معروف علمی و روحانی حضرات گھرانے کے صبغت اللہ مجددی 11 فروری کو 93 برس کی عمر میں خالق حقیقی سے جا ملے۔ اللہ تعالیٰ انہیں اپنی جوارِ رحمت میں جگہ دے ، خطاؤں و لغزشوں سے درگزر فرمائے۔ افغان سرکردہ جہادی رہنماؤں سے تعارف اپنے قبلہ محترم مولانا نیاز…

مزید پڑھیے
 

افغان طالبان میں دھڑے بندی کی پیش گوئی

جمعیت علماءاسلام ف کے مولانا محمد خان شیرانی رائے،استدلال اور منطق کے لحاظ سے خود کو منفرد سیاستدان ثابت کرنے کی کوشش کرتے رہتے ہیں۔ ان کی دلی تمنا رہی ہے کہ پاکستان و افغانستان کے اہلِ دیوبند انہیں اپنا فکری رہبر و مجتہداعلیٰ تسلیم کریں۔ وہ سمجھتے ہیں کہ جے یو آئی کے اندر…

مزید پڑھیے
 

آزادی کی جانب گامزن افغانستان

خطے کے ممالک اور افغان عوام کے لیے خوشی اور راحت کا مقام ہے کہ افغانستان میں امارت اسلامیہ کی طویل اور صبر آزما مزاحمت جس میں یقینا حزب اسلامی افغانستان کا بھی حصہ ہے، کے نتیجے میں آزادی کی نئی صبح طلوع ہونے کے امکانات روشن ہو گئے ہیں ۔قابض امریکہ اس امر کے…

مزید پڑھیے
 

جبری گمشدگیوں کا مسئلہ

بلوچستان کے اندر حالیہ گمشدگیوں کی تاریخ اتنی ہی پرانی ہے جتنی کہ مسلح مزاحمت کی ہے۔ لاپتہ افراد کا مسئلہ ریاست مخالف عملیات سے تعلق رکھتا ہے۔ چناںچہ رفتہ رفتہ جب لوگوں کا ماورائے عدالت غائب ہو نا شروع ہوا تو اس کے ساتھ ہی احتجاج کا سلسلہ بھی شروع ہوا۔ عدالتوں سے رجوع…

مزید پڑھیے
 

وزیر اعلیٰ مخالف ریشہ دوانی

جام حکومت کے خلاف اندریں شور ُاٹھانے اور فضاءبنانے کی بہت کوششیں ہوئی ہیں۔ سرِدست ان لوگوں کو شرمندگی کا سامنا ہوا ہے۔ یقینا جام کمال خان کی چند مجبوریاں ہیں وگرنہ شاید یہ لوگ موجودہ مقام پر بھی نہ ہوتے۔دیکھا جائے تو حالات جنوری 2018 ءجیسے نہ ہیں۔ ان صاحبانِ بے خِرد کو معلوم…

مزید پڑھیے
 

جام حکومت کے چند اقدامات

 ماضی قریب میں صوبائی دار الحکومت کوئٹہ میں نکاسی آب کے بڑے منصوبے پر کام کا آغاز ہوا۔چند شاہراہیں غالباً آٹھ سے دس فٹ گہری کھودی گئیں ،پائپ بچھائے گئے،کثیر سرمایہ لگا۔ جس طرح ان پائپوں پر مٹی ڈالی گئی ، بعینہ منصوبہ بھی دفن ہوا ۔ معلوم نہیں کہ وہ منصوبہ کہا ںگیااور کتنا…

مزید پڑھیے
 

نشانہ پاکستان ہے

مشرقی پاکستان میں علیحدگی کی بھارتی تخریب میں ہر گزرتے دن کے ساتھ اضافہ ہو رہا تھا ۔ایک بھارتی مبصر” سبرا مینیم سوامی “ جن کا شاید آج کل بھارتیہ جنتا پارٹی سے تعلق ہے، نے پندرہ جون 1971ءکی ڈیلی مدر لینڈ میں لکھا تھا کہ” پاکستان کے مٹ جانے سے ہندوستان کی خارجی و داخلی…

مزید پڑھیے
 

ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کی جیت

کوئٹہ کے حلقہ چھبیس کے ضمنی انتخاب میں ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کے اُمیدوار قادر علی نائل بالآخر کامیاب ہو گئے ۔اس جماعت کے ارکان کی تعداد بلوچستان اسمبلی میں دو ہو گئی۔یوں65 رُکنی بلوچستان اسمبلی ارکان کی تعداد کے لحاظ سے پوری ہوگئی۔ پچیس جولائی کے عام انتخابات کے بعد مختلف وجوہ کی بناءپر چند…

مزید پڑھیے
 

حلقہ ’’چھبیس‘‘ کا ضمنی انتخاب

ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کے سیکریٹری جنرل علی احمد کوہزاد 25 جولائی 2018ء کے عام انتخابات میں حلقہ پی بی 26 کوئٹہ پر کامیاب ہوئے تھے۔ بعد ازاں ان کی پاکستانی شہریت کا مسئلہ کھڑا ہوا، چناں چہ الیکشن کمیشن نے یہ نشست خالی قرار دیدی اور ضمنی انتخاب کیلئے 31 دسمبر کا دن مقرر کردیا۔…

مزید پڑھیے
 

بلوچستان میں خشک سالی

یقینا آفات ارضی و سماوی پر انسان کا بس و قدرت نہیں ہوتا، تاہم حکومتیں پیش بندی کرتی ہیں، تاکہ نقصانات کم سے کم ہوں اور لوگوں کے تحفظ کے لیے جامع منصوبہ بندی کرتی ہیں، بلوچستان کے کئی اضلاع اس وقت خشک سالی کی لپیٹ میں ہیں، ایک لمبے عرصے سے بارشیں نہیں ہوئی…

مزید پڑھیے
 

گورنر ہاوس سہی ،گرشاہراہیں بھی

برطانوی ہند نے 1856ء میں کوئٹہ پر قبضے کی منظوری دیدی تھی ۔علیٰ ہذا 1877ء میں کوئٹہ کوباقاعدہ انگریز کی قلمروں میں شامل کر لیا گیا ۔عسکری اور دوسرے ماہرین سمیت فوجی دستے پہنچ گئے ۔کوئٹہ چھاؤنی کے قیام کیلئے زمین مختص کی گئی اور ساتھ ہی تعمیر کا کام شروع کر دیا گیا ۔رہائشی…

مزید پڑھیے
 

افغان مسئلہ اور کور چشمی

امریکہ کی زیر دست کابل انتظامیہ داخلی و خارجی امور و معاملات میں قطعی بے اختیار ہے ۔ افغانستان کے نظام کار کی طنابیں مکمل طور پر امریکہ کے ہاتھ میں ہیں۔ یہاں تک کہ کابل انتظامیہ کو اپنی خفیہ ایجنسی جو بھارت کے جاسوسی کے ادارے ”را“ کی رکھیل بنی ہوئی ہے پربھی مکمل…

مزید پڑھیے
 

چینی قونصلیٹ پر حملہ

 بلوچستان کی سیاست میں شدت پسندی کا عنصر پاکستان کے قیام کے ساتھ ہی شامل رہا ہے ۔1948 ءسے اب تک پانچویں مرتبہ تشدد کی سیاست نے سر اُٹھایا ہے ۔بلاشبہ اس طرز کی مزاحمت نے بلوچ معاشرے اور سیاست پر اچھے اثرات مرتب نہیں کئے ہیں۔البتہ ستم یہ بھی ہے کہ حکومتوں کی جانب…

مزید پڑھیے