Thursday, May 19, 2022  | 1443  شوّال  17

ایران: اسٹریٹ پرانک کی ویڈیوز وائرل ہونے پر 17افراد گرفتار

SAMAA | - Posted: Jan 28, 2022 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 28, 2022 | Last Updated: 4 months ago
[caption id="attachment_2511572" align="alignnone" width="800"] فوٹو: اے ایف پی[/caption]

ایران میں پولیس نے انسٹاگرام پر اسٹریٹ پرانک کی ویڈیوز وائرل ہونے کے بعد 17 افراد کو گرفتار کر لیا۔

برطانوی خبر رساں ادارے بی بی سی کے مطابق پرانکسٹرز خود کو جعلی قتل میں مارنے اور لوگوں پر کیک پھینکنے کی ویڈیوز ریکارڈ کرتے تھے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ انفلیونسر نے اپنے فالورز کی تعداد بڑھانے کے لیے ’خوف و ہراس پھیلایا‘۔

ایرانی حکام نے انٹرنیٹ پر سخت کنٹرول برقرار رکھا ہے اور یہ گرفتاریاں سوشل میڈیا کے استعمال پر پولیس کے وسیع کریک ڈاؤن کے حصے کے طور پر کی گئی ہیں۔

تہران کے پولیس چیف نے انسٹاگرام صارفین پر الزام لگایا کہ وہ لوگوں کے اعصاب اور عوام کے امن و سلامتی سے کھیل رہے ہیں جبکہ ویڈیوز کو بغیر اجازت کے فلمایا گیا تھا۔

گرفتار کیے گئے پرانکسٹر نے ایرانی میڈیا کو بتایا کہ اس نے ویڈیوز پوسٹ کرنے سے پہلے اپنے متاثرین سے اجازت لی تھی اور اس نے انہیں کسی بھی تکلیف کی تلافی کے لیے 20 ڈالر دینے کی پیشکش کی تھی۔

واضح رہے کہ سوشل میڈیا سائٹ انسٹاگرام پر پرانکسٹرز کو خطرناک قسم کی ویڈیوز پوسٹ کرتے دیکھا گیا ہے، جوکہ دل دھلا دینے والی ہوتی تھیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube