Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

بلوچستان: کیچ میں دہشت گردوں کاحملہ، 10سیکیورٹی اہلکار شہید

SAMAA | - Posted: Jan 27, 2022 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 27, 2022 | Last Updated: 4 months ago
[caption id="attachment_2327309" align="alignnone" width="800"] فوٹو: اے ایف پی[/caption]

بلوچستان میں دہشتگردوں نے سیکیورٹی فورسز کی چوکی پر حملہ کردیا، واقعے میں 10 جوان شہید ہوگئے، فائرنگ کے تبادلے میں ایک دہشت گرد مارا گیا، کئی زخمی بھی ہوئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر)  کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ بلوچستان کے علاقے کیچ میں دہشت گردوں نے سیکیورٹی فورسز کی چیک پوسٹ پر منگل اور بدھ کی درمیانی شب حملہ کیا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق فائرنگ کے تبادلے میں 10 سیکیورٹی اہلکار شہید ہوگئے جبکہ ایک دہشت گرد مارا گیا، کئی تخریب کار زخمی بھی ہوئے۔

سیکیورٹی فورسز نے واقعے کے بعد علاقے میں کلیئرنس آپریشن کیا، جس میں 3 دہشت گردوں نے ہتھیار ڈال دیئے، فورسز کا کلیئرنس آپریشن جاری ہے۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ مسلح افواج دہشتگردوں کے خاتمے کیلئے پر عزم ہیں، چاہے اس کیلئے کوئی بھی قیمت ادا کرنی پڑے۔

سیکیورٹی ذرائع کے مطابق دہشتگرد جدید اسلحہ سے لیس تھے، جنہوں نے چھوٹے ہتھیاروں سے شدید فائرنگ کی اور مارٹر گولے بھی داغے، فورسز اور دہشتگردوں کے درمیان 2 گھنٹے تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا۔

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا ردعمل

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کا سماء ٹی وی سے گفتگو میں کہنا ہے کہ اس واقعے پر ہر پاکستانی کی آنکھ اشکبار ہے، اس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے، فورسز کی قربانیوں سے ہی پاکستان میں آزادی کی بہاریں ہیں، جن ماؤں کے بیٹوں نے شہادت پائی پوری قوم ان کے احسان تلے دبی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سیکیورٹی فورسز اور جوانوں نے ہمیشہ مادر وطن کیلئے اپنے سینوں کو پیش کیا ہے، ہماری دعائیں اس سانحے کے متاثرہ خاندانوں کے ساتھ ہیں۔

وفاقی وزیر اطلاعات کا مزید کہنا تھا کہ دہشت گردوں سے اس کا بدلہ لیا جائے گا، یہ خون ہر گز رائیگاں نہیں جائے گا۔

تاحال حملے کی ذمہ داری کسی تنظیم نے قبول نہیں کی۔ واضح رہے کہ چند روز قبل لاہور کے انار کلی بازار میں ایک دھماکا ہوا تھا جس میں 3 افراد جاں بحق اور 24 سے زائد زخمی ہوئے تھے، اس حملے کی ذمہ داری بلوچ نیشنلسٹ آرمی (بی این اے) نامی تنظیم نے قبول کی تھی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube