Thursday, May 19, 2022  | 1443  شوّال  17

چنگان پاکستان نےایلسون اورکاروان کی قیمتوں میں اضافہ کردیا

SAMAA | - Posted: Jan 26, 2022 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 26, 2022 | Last Updated: 4 months ago

وفاقی حکومت کی جانب سے ٹیکس میں اضافے کے بعد چنگان پاکستان نے مختلف ویریئنٹس کی قیمتوں میں اضافہ کردیا ہے۔

حکومت نے منی بجٹ میں گاڑیوں پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی (ایف ای ڈی) میں اضافہ کردیا جس کے نتیجے میں پاک سوزوکی، ٹویوٹا، ہونڈا، کِیا لکی موٹرز اور ڈی ایف ایس کے نے گاڑیوں کی قیمتوں میں اضافہ کردیا ۔

چنگان کےڈیلر کے مطابق  نئی قیمتوں کا اطلاق 15 جنوری 2022 سے ہوچکا ہے اور نئی قیمتیں 15 جنوری سے پہلے کیے گئے تمام جزوی اور مکمل ادائیگی کے آرڈرز پر بھی لاگو ہوں گی۔

کمپنی نے قیمتوں میں کم از کم 65 ہزار  روپے اور زیادہ سے زیادہ ایک لاکھ 30 ہزار  روپے کا اضافہ کیا ہے۔

چنگان ایلسون 1.3 ایل ایم ٹی کمفرٹ کی قیمت 65 ہزار روپے اضافے کے بعد اب 24 لاکھ 80 ہزار روپے میں فروخت ہوگی۔ چنگان ایلسون 1.5 ایل ڈی سی ٹی کی قیمت میں 70 ہزار روپے کا اضافہ کیا گیا ہے، یہ ویریئنٹ اب 27 لاکھ 40 ہزار روپے میں دستیاب ہوگی۔

چنگان ایلسون 1.5 ڈی سی ٹی لومیئر کی قیمت میں بھی 75 ہزار روپے کا اضافہ ہوا ہے اور یہ گاڑی اب  29 لاکھ  30 ہزار روپے میں دستیاب ہے۔

چنگان کاروان ایم پی وی کی قیمت 1 لاکھ 20 ہزار روپے اضافے سے 17 لاکھ 90 ہزار روپے ہوچکی ہے۔

چنگان کاروان ایم پی وی پلس کی قیمت1 لاکھ 30 ہزار روپے سے بڑھ کر اب 19 لاکھ 40 ہزار روپے ہوگئی ہے۔

تاہم چنگان ایم 9 لوڈر پک اپ کی قیمت 15 لاکھ روپے پر برقرار ہے۔

کمپنی نے اگست میں ایلسوین کے تمام ویریئنٹس کی قیمتوں میں 1لاکھ 20 ہزار روپے کا اضافہ کیا تھا لیکن حکومت کی مداخلت کے بعد اسے یہ فیصلہ واپس لینا پڑا۔

تاہم نومبر میں پاکستان میں گاڑیوں کی قیمتوں میں اضافے کی ایک نئی لہر دیکھی گئی اور تقریباً تمام کمپنیوں نے شپنگ کے بڑھتے ہوئےاخراجات اور ڈالر کی قیمت میں اضافےکے بعد گاڑیوں کی قیمتیں بڑھادیں۔چنگان پاکستان نے نومبر میں قیمتوں میں 2 لاکھ 75 ہزار روپے تک اضافہ کیا تھا۔

 چنگان کمپنی نے گاڑیوں کی قیمتوں میں اضافہ کیوں کیا؟

چنگان کے ایک ڈیلر نے بتایا کہ کار کمپنیوں نے حکومت کی جانب ٹیکس بڑھائے جانے کے باعث گاڑیوں کی قیمتوں میں اضافہ کیا ہے۔ اُن کا کہنا تھا کہ اگر ڈالر کی قیمت میں اضافہ ہوا گاڑیوں کی قیمتوں میں مزید اضافہ ہوسکتا ہے۔

کار ڈیلرز نے توقع ظاہر کی کہ قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے فروخت میں کمی آسکتی ہے کیونکہ قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے ممکنہ صارفین کی قوت خرید کم ہوتی جارہی ہے۔

واضح رہے کمپنی نے گزشتہ 2 مہینوں میں گاڑیوں کی قیمتوں میں 4 لاکھ 5 ہزار  روپے تک اضافہ کیا ہے۔

دوسری جانب ایسوسی ایشن آف پاکستان موٹرسائیکل اسمبلرز (اے پی ایم اے) کے چیئرپرسن محمد صابر شیخ نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے کیش سیلز متاثر ہو سکتی ہے، کیونکہ قیمتیں بڑھ جانے سے ان کی قوت خرید پر اثر پڑتا ہے۔

ذرائع کے مطابق درآمدشدہ گاڑیوں کے ڈاکومنٹیشن کے عمل میں ان دنوں کافی وقت لگ رہا ہے، جس کی وجہ سے کم درآمدی گاڑیاں ملک میں فروخت ہورہی ہیں اور گاڑیاں بنانے والے درآمدی گاڑیوں کی کمی کا فائدہ اٹھا کر قیمتیں بڑھا رہے ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
Changan, Car Prices, چنگان پاکستان، گاڑیوں کی قیمتیں
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube