Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

خواجہ سراؤں کی نوکریوں کامعاملہ،متعلقہ محکموں سےجواب طلب

SAMAA | - Posted: Jan 25, 2022 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 25, 2022 | Last Updated: 4 months ago
[caption id="attachment_2130194" align="alignnone" width="680"] فوٹو: لاہور ہائیکورٹ ویب سائٹ[/caption]

لاہورہائیکورٹ نے خواجہ سراؤں کو محکمہ پولیس میں کوٹہ کے تحت نوکریاں نہ دینے کے خلاف دائر درخواست پرچیف سیکرٹری اور سوشل ویلفئیر ڈپارٹمنٹ سے جواب طلب کرلیا ہے۔

لاہور ہائیکورٹ میں خواجہ سراؤں کو محکمہ پولیس میں کوٹہ کے تحت نوکریاں نہ دینے کے خلاف دائر درخواست پر سماعت ہوئی۔

جسٹس شجاعت علی خان نے عاشی جان کی درخواست پر سماعت کی۔ ڈی آئی جی لیگل عدالت کے روبرو پیش ہوئے۔

فاضل جج نے ڈی آئی جی لیگل سے استفسار کیا کہ خواجہ سراؤں کو بھرتی کرنے کے حوالے سے کیا اقدامات کیے۔اس پر ڈی آئی جی لیگل نے بتایا کہ میں یہ درخواست دیکھ لیتا ہوں۔

خواجہ سراؤں کوپولیس میں نوکریاں نہ دینےپرپنجاب حکومت سےجواب طلب

عدالت نے ڈی آئی جی لیگل پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آپ یہاں کیا لینے آئے ہیں،کیا باغ جناح میں سیر کرنے آئے ہوئے ہیں۔

عدالت کو ڈی آئی جی لیگل نے بتایا کہ 21 جنوری کو اس درخواست کا جواب عدالت میں جمع کروا چکے ہیں۔

خواجہ سراؤں کونوکریاں نہ دینےسےمتعلق درخواست،پنجاب حکومت سمیت دیگر سے جواب طلب

عدالت نے چیف سیکرٹری اور سوشل ویلفئیر ڈپارٹمنٹ سے جواب طلب کرلیا اور استفسار کیا کہ متعلقہ محکمےبتائیں کہ خواجہ سراؤں کی بھرتیوں کے لیے کتنی درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔

عدالت میں دائردرخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ پولیس کے محکمے میں خواجہ سراؤں کو بھرتی نہیں کیا جارہا ہے،پولیس میں خواجہ سراؤں کو بھرتی نا کرنا قانون کی خلاف ورزی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube