Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

سعودی اتحاد کا یمن کی جیل پرفضائی حملہ، 70افراد ہلاک

SAMAA | - Posted: Jan 22, 2022 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 22, 2022 | Last Updated: 4 months ago
[caption id="attachment_2504782" align="alignnone" width="800"] فوٹو: اے ایف پی[/caption]

یمن میں حراستی مرکز پر سعودی اتحاد کے فضائی حملے میں کم سے کم 70 سے افراد ہلاک اور 100 سے زائد زخمی ہوگئے۔

غیر ملکی خبر ایجنسی الجزیرہ کے مطابق ایک حوثی اہلکار اور طبی خیراتی ادارے ڈاکٹرز وِدآؤٹ بارڈرز بتاتے ہیں کہ ایک رات میں ہلاکت خیز بمباری کے بعد ملک میں طویل عرصے سے جاری تنازعہ میں ڈرامائی طور پر اضافہ ہوا ہے۔

پیر 17 جنوری کو حوثیوں کی جانب سے اتحاد کے رکن متحدہ عرب امارات پر غیر معمولی حملے اور سعودی شہروں پر میزائل اور ڈرونز داغے جانے کے بعد سعودی فوجی اتحاد نے حملے تیز کر دیے ہیں۔

حوثیوں کی جانب سے جمعے کو ایک فوٹیج جاری کی گئی جس میں دیکھا گیا کہ صعدہ میں قائم عارضی حراستی مرکز پر صبح کے وقت ایک فضائی حملے کے بعد امدادی کارکن ملبے سے لاشیں نکال رہے ہیں۔

ملک کے شمالی حصے کو چلانے والی حوثی حکومت کے وزیر صحت طحہٰ المتوکل نے ایسوسی ایٹڈ پریس پریس ایجنسی کو بتایا کہ جیل میں 70 قیدی مارے گئے ہیں جبکہ ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے کیونکہ حملے میں زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے۔

میڈیسنز سینس فرنٹیئرز (ایم ایس ایف) کے ترجمان نے اے ایف پی نیوز ایجنسی کو بتایا کہ فضائی حملے میں 70افراد ہلاک اور 138 زخمی ہوئے ہیں۔

ترجمان نے مزید کہا کہ یہ اعداد و شمار صعدہ کے ایک اسپتال سے آئے ہیں جبکہ شہر کے دو دیگر اسپتالوں میں بھی بہت سے زخمی آئے ہیں۔

ایک ویب مانیٹر نے کہا کہ یمن کو ملک بھر میں انٹرنیٹ کی بندش کا سامنا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
Facebook Twitter Youtube