Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  16

کراچی:گرد آلود ہواؤں کا سلسلہ جاری،سردی بڑھنے کی پیشگوئی

SAMAA | - Posted: Jan 22, 2022 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 22, 2022 | Last Updated: 4 months ago

شہر قائد میں جمعہ سے شروع ہونے والی گرد آلود ہواؤں کا سلسلہ ہفتہ 22 جنوری کے روز بھی جاری رہے گا۔ میٹ آفس نے آج سے کراچی میں سردی کی شدت بڑھنے کی پیش گوئی بھی کردی ہے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق کراچی میں ہفتے کو گرد آلود ہوائیں جنوب مغرب اور مغرب چل رہی ہیں، جس کی رفتار 23 کلو میٹر فی گھنٹہ سے زیادہ ہے۔ ہواؤں کی سمت شمال مغرب ہونے کے باعث ہوائیں سرد ہوتی جائیں گی، جب کہ موسم میں شدت 27 جنوری تک باقی رہے گی۔

چیف میٹرولوجسٹ سردارسرفراز کے مطابق اس دوران رات میں کراچی کا درجہ حرارت 8 سے 9 ڈگری سینٹی گریڈ ہوسکتا ہے۔ تیز ہواوں سے ڈسٹ اڑتی ہے، گرد آلود ہواؤں کے باعث صبح کے اوقات میں حد نگاہ 500 میٹر رہی۔ محکمے کا کہنا ہے کہ جمعہ کے مقابلے میں ہفتے کے روز دن سرد رہے گا۔ اس دوران کراچی میں بارش کا کوئی امکان نہیں ہے۔ اگلے 4 سے5 دن تک سردی کی شدت میں اضافہ رہے گا۔

جامعہ کراچی

کراچی میں تیز ہواؤں کے باعث تقسیم اسناد کیلئے لگائے گئے ٹینٹ اکھڑ گئے ، موسم کی خرابی کے باعث جامعہ کراچی کا سالانہ تقسیم اسناد ملتوی کردیا گیا ۔

رجسٹرار جامعہ کراچی پروفیسر ڈاکٹر عبدالوحید نے اعلان کیا کہ جلسہ تقسیم اسناد غیر متوقع موسمی تبدیلی کے پیش نظر ملتوی کیا گیا ہے، جلسہ کے انعقاد کی نئی تاریخ کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

موٹر سائیکل اور پیدل چلنے والے پریشان

تیز ہواؤں کی وجہ سے کھمبے گرنے اور تاریں ٹوٹنے کے باعث کئی علاقے بجلی سے بھی محروم ہوگئے۔ کراچی میں گرد آلود تیز ہوائیں چلنے کے دوران بس اسٹاپ پر کھڑے افراد، موٹر سائیکل سوار اور پیدل سفر کرنے والوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔ حد نگاہ کم ہونے اور دھول مٹی آنکھوں میں آنے کی وجہ سے موٹرسائیکل سواروں کو متعدد بار سڑک کنارے رکنا پڑا۔

سب سے تیز ہوائیں کہاں چلیں؟

کراچی کے مختلف علاقوں میں جمعے کے روز دوپہر سے چلنے والی تیزہواؤں کی رفتار کا ڈیٹا سامنے آگیا ہے، سب سے تیز رفتار ہوائیں مسرو بیس پر چلیں، جس کی رفتار 72 کلو میٹر فی گھنٹہ تک رہی۔ مسرور بیس پر 3 بج کر 20 منٹ پر ہواؤں کی رفتار 65 کلو میٹر فی گھنٹہ تھی۔

اعداد و شمار کے مطابق اس کے بعد سب سے زیادہ تیز ہوائیں پی اے ایف فیصل پر چلیں، جن کی رفتار 63 کلو میٹر فی گھنٹہ تک ریکارڈ کی گئی۔ پی اے ایف فیصل پر 3 بج کر 15 منٹ پر ہواؤں کی رفتار 47 کلو میٹر فی گھنٹہ تھی۔

تیز ہواؤں کے باعث حادثات

کراچی میں تیز ہواؤں کے باعث مختلف حادثات میں جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 5 ہوگئی ہے۔ کنیز فاطمہ سوسائٹی، گلشن معمار، شیر شاہ اور نارتھ کراچی میں دیواریں گرنے سے چار افراد جاں بحق ہوئے، جب کہ لانڈھی میں بجلی کے تار گرنے کے باعث کرنٹ لگنے سے ایک شخص دم توڑ گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ کنیز فاطمہ سوسائٹی، گلشن معمار، شیر شاہ، اور نارتھ کراچی میں دیواریں گرنے سے 4 افرادجاں بحق ہوئے۔ پولیس کے مطابق لانڈھی میں بجلی کے تار گرنے کے باعث کرنٹ لگنے سے ایک شخص دم توڑ گیا، مواچھ گوٹھ بلدیہ میں چھت کا حصہ گرنے سے خاتون اور مرد زخمی ہوئے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ اورنگی میں بجلی کا کھمبا گرنے سے ایک شخص زخمی ہوا۔ محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ مغربی بلوچستان اور مشرقی ایران میں ہوا کا زائد دباؤ موجود ہے، مغربی سمت سے 45 سے54 کلومیٹر فی گھنٹہ رفتار سے ہوائیں چل رہی ہیں۔ کبھی ہواؤں کی رفتار 63 کلو میٹر بھی ہورہی ہے، رات گئے تک تیز ہواؤں کا سلسلہ جاری رہ سکتا ہے۔

ملک کے دیگر حصے

ملک کے مختلف شہروں میں بارش اور برف باری کے باعث موسم سرد ہوگیا، جب کہ مختلف حادثات میں 2 افراد جاں بحق ہوگئے۔ ملتان، رحیم یار خان اور لودھراں سمیت جنوبی پنجاب میں بارش کے باعث موسم سرد اور درجنوں فیڈر ٹرپ ہونے سے بجلی کی فراہمی معطل ہوگئی۔

پشاور میں موسلادھار بارش کے بعد موسم سرد ہوگیا جبکہ مختلف سڑکوں پر پانی جمع ہوگیا۔ شانگلہ کے علاقے الپوری فیض آباد میں لینڈ سلائیڈنگ کے باعث 2 افراد جاں بحق ہوگئے۔ علاوہ ازیں چمن سمیت بلوچستان کے شمالی اضلاع میں برف باری کے بعد قومی شاہراہیں ٹریفک کیلئے بند کردی گئیں۔

مری

مری میں ہفتے سے پیر تک شدید برف باری کی پیش گوئی کے بعد برف باری کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔ ملکہ کوہسار مری میں ایک مرتبہ پھر ریڈ الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔ برف باری کی پیش گوئی کے بعد ضلعی انتظامیہ، ٹریفک پولیس کو الرٹ کردیا گیا ہے، جب کہ ڈپٹی کمشنر آفس میں ایمرجنسی کنٹرول روم بنا دیا گیا۔

لینڈ سلائیڈنگ

شانگلہ کی تحصیل الپوری میں مکان لینڈ سلائیڈنگ کے باعث گر گیا، ملبے تلے دب کر دو بچے جاں بحق ہوگئے، چھ افراد کو نکال لیا گیا جبکہ تین افراد کی تلاش جاری ہے۔ ریسکیو ذرائع کے مطابق واقعہ کوزہ آلپوری موتہ خان کے مقام پر پیش آیا، جہاں لینڈ سلائیڈنگ کےباعث مکان زمین بوس ہوگیا۔ ملبے تلے دب کر دو بچے جاں بحق ہوگئے۔ ملبے سے 6 افراد کو زخمی حالت میں نکال کر طبی امداد کے لیےڈی ایچ کیو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

لانچ سمندر میں پھنس گئی

بلوچستان کے ساحل اورماڑہ میں لانچ طوفانی ہواؤں کی وجہ سے سمندر میں پھنس گئی۔ کشتی کے ناخدا کا کہنا تھا کہ سمندر میں پھنسی لانچ میں 8 ماہی گیر سوار ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube