Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

طالبان سے مذاکرات میں ڈیڈلاک، سیزفائر ختم ہوگیا، وزیرداخلہ

SAMAA | - Posted: Jan 22, 2022 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 22, 2022 | Last Updated: 4 months ago

وفاقی وزیر داخلہ کہتے ہیں کہ لاہور ميں دہشت گردی کا مقصد پی ايس ايل اور دورۂ آسٹريليا ميں رکاوٹيں کھڑی کرنا ہوسکتا ہے ليکن امن دشمنوں کو اپنے عزائم ميں کاميابی نہيں ہوگی۔ شيخ رشيد کا کہنا ہے کہ مہمانوں کو مکمل سيکيورٹی فراہم کريں گے۔

نمائندہ سما سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے خبردار کیا ہے کہ دشمن کی نظر پاکستان کے امن پر  ہے، لاہور دھماکے کا مقصد پی ايس ايل اور آسٹريلين کرکٹ ٹيم کو دورے سے روکنا ہوسکتا ہے۔

انہوں نے کالعدم تحريک طالبان سے سيزفائر ختم ہونے کا انکشاف بھی کردیا۔ کہتے ہیں کہ بات چیت کے دروازے کھلے ہیں تاہم حکومت سے مذاکرات ميں ڈيڈلاک برقرار  ہے، کالعدم تنظيم کے بعض مطالبات قبول کرنے سے انکار کرديا ہے۔

شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ دشمن کو ہرائيں گے، مہمانوں کو مکمل سيکيورٹی فراہم کريں گے، دشمن کے عزائم خاک ميں مليں گے،  پہلے بھی دہشتگردی کا خاتمہ کيا تھا، پھر کريں گے۔

لاہور میں جمعرات کو ہونیوالے دھماکے میں 3 افراد جاں بحق اور دو درجن سے زائد زخمی ہوئے تھے۔

سینیٹ میں پالیسی بیان دیتے ہوئے وفاقی وزیر شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ دنیا میں کسی ملک نے اس طرح سے دہشتگردوں کو شکست نہیں دی جیسے پاکستان نے دی ہے۔ شیخ رشید نے کہا کہ یہ نہیں بتانا چاہتا کہ دہشت گرد کہاں رکے اور انہوں نے کہاں کھانا کھایا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم دہشت گردی کے واقعات کا جائزہ لے رہے ہیں، اس سال کا پہلا دہشت گردی کا واقعہ اسلام آباد میں ہوا، جہاں 2 دہشت گرد مارے گئے ہیں۔ مارے جانے والے دونوں دہشت گردوں کے پاس سے 6 فون نکلے ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
Facebook Twitter Youtube