Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  16

لاہور: ایڈونچر اور تھرل کے شوقین نوجوان قاتل بننے لگے

SAMAA | - Posted: Jan 20, 2022 | Last Updated: 4 months ago
Posted: Jan 20, 2022 | Last Updated: 4 months ago

لاہورمیں  قتل و غارت اور بھتہ خوری میں ملوث مافیا نے انسانی جان کی قیمت موٹرسائیکل اور چند ہزار روپے لگا دی، ایڈونچر اور تھرل کے شوقین نوجوان قاتل بننے لگے۔

انسانی جان کی قیمت چند ہزار روپے لگانے والوں کو جرائم کی دنیا میں اجرتی قاتل یا شوٹر کہا جاتا ہے جن میں ایک بڑی تعداد اب ان نوجوانوں کی ہے جن کا کوئی کریمنل ریکارڈ نہیں، پولیس نے حال ہی میں شوٹرز کے دو گینگز گرفتار کرنے کا دعوی کیا ہے لیکن ان کے کارندوں کی حتمی تعداد کتنی ہے پولیس ابھی تعین نہیں کرسکی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال کے دوران گھروں پہ نامعلوم افراد کی فائرنگ کے کئی مقدمات اور قتل کی 23 فیصد وارداتیں جرائم کی دنیا میں قدم رکھنے والے نئے شوٹر نے کیں۔ حال ہی میں لیگی ایم پی اے بلال یاسین پہ قاتلانہ حملہ، اسسٹنٹ ایڈووکیٹ خاتون کے قتل کی واردات، اور سبزہ زار میں نوجوان فیصل کا قتل اور یہ تینوں جرائم شوٹرز نے انتہائی معمولی رقم کے عوض کئے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ دیرینہ دشمنیاں رکھنے والے گروپس اور بھتہ وصولی میں ملوث گینگز اب خود کسی کو نشانہ بنانے یا منظرعام پہ آنے کی بجائے ان شوٹرز کو آپریٹ کرنے لگے ہیں، شاہدرہ ، شادباغ اور سری ڈویژن کے اکثر علاقے شوٹرز کی آماجگاہ ہیں اور زیادہ تر گینگز کی کڑیاں بیرون ملک سے جا ملتی ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
Facebook Twitter Youtube