Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  16

جماعت اسلامی کا آج شارع فیصل پر احتجاج کا اعلان

SAMAA | - Posted: Jan 16, 2022 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 16, 2022 | Last Updated: 4 months ago

کراچی میں جماعت اسلامی نے آج بروز اتوار 16 جنوری کو شارع فیصل پر احتجاج کا اعلان کیا ہے۔ ٹریفک پولیس کی جانب سے ٹریفک پلان جاری نہیں کیا گیا۔

سندھ کے بلدیاتی قانون کے خلاف جماعت اسلامی کا سندھ اسمبلی کے باہر سترہویں روز سے دھرنا جاری ہے، جماعت کی جانب سے آج شارع فیصل پر مارچ کا اعلان کیا گیا ہے۔

امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمان کا کہنا ہے کہ کرپشن کا پورا نظام سندھ اسمبلی سے چل رہا ہے، انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے پورے صوبے اور ہر ادارے پر قبضہ کرلیا ہے، ان کی جدوجہد وڈیرا مائنڈ سیٹ کے خلاف ہے۔

جماعت اسلامی کے امیر کراچی حافظ نعیم نے کہا کہ شہر کے تمام اضلاع سے ریلیاں آج شارع فیصل پہنچیں گی، احتجاج کے دوران شارع فیصل پر ایمبولینس کے سوا کوئی گاڑی نہیں چلے گی۔

سندھ اسمبلی کے باہر دھرنے سے خطاب میں نعیم الرحمان نے کہا تھا کہ پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم نے مل کر کراچی کو تباہ و برباد کیا ہے، پی ٹی آئی نے بھی ڈھائی سال میں کراچی کے لیے کچھ نہیں کیا، مردم شماری پر اگر ایم کیوایم کو تحفظات ہیں تو حکومت سے علیحدہ کیوں نہیں ہو جاتی

دوسری جانب بلدیاتی ترمیمی قانون کے خلاف جماعت اسلامی نے سندھ ہائی کورٹ میں درخواست جمع کروائی ہے جس پر عدالت نے سندھ حکومت کو نوٹس جاری کردیا ہے۔

ہفتے کے روز متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان ، تحریک انصاف (پی ٹی آئی) سمیت سندھ میں دیگر اپوزیشن کی جماعتوں نے بلدیاتی قانون کے خلاف علامتی دھرنا دیا۔

کراچی میں فوارہ چوک پر اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے بلدیاتی قانون کے خلاف مشترکہ احتجاج کیا، اپوزیشن لیڈر سندھ حلیم عادل شیخ، خرم شیر زمان، نصرت سحر عباسی، خواجہ اظہار، ایم کیو ایم پاکستان کے سینئر ڈپٹی کنونیئر عامر خان سمیت دیگر نے احتجاجی شرکا سے خطاب کیا۔

ایک ہفتے کا الٹی میٹم

علامتی دھرنے کے بعد خطاب کرتے ہوئے عامر خان کا کہنا تھا کہ بدعنوان حکمرانوں کو ایک ہفتے کا الٹی میٹم دے رہے ہیں، ایک ہفتے تک کالے قانون کو واپس لیا جائے، جعلی اور جھوٹی اکثریت کی بنیاد پر قانون بنایا گیا، متحدہ اپوزیشن کالےقانون کو بدلنے پر مجبور کرے گی، مطالبہ نہ مانا گیا تو پھر آپ کے پاس بھاگنے کا وقت نہیں ہوگا۔

علی زیدی

پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما اور وفاقی وزیر علی زیدی نے کہا ہم مظلوموں پر 14 سال سے حکومت کررہے ہیں، آصف علی زرداری ایک مافیا ہے ، اس کے اکاؤنٹنٹ کا نام مردا علی شاہ ہے ، وہ سارے پیسے گنتا ہے ، یہ مظاہرہ تو ایک چھوٹا سا ٹریلر ہے ، اگر یہ گھوم گئے تو پھر تمہارا کیا ہوگا۔

علی زیدی نے کہا ہے کہ نا ان سے کچرا اٹھتا ہے ، نا یہ بس چلا سکتے ہیں ، ان سے اسپتال نہیں چلتے ہیں ، یہ 14 سال میں 1122 شروع نہیں کرسکے ، یہ نہ راشن کارڈ اور صحت کارڈ نہیں دے سکے۔

وفاقی وزیر برائے بحری امور نے کہا کہ اب اعلان آیا ہے کہ 5 ہزار اسکول بند کرنے جارہے ہیں ، اسکولوں میں وڈیروں کی اوتاکیں بنائی ہوئی ہیں ، یہ پیسا پھر گیا کہاں؟ ایک اور لیڈر ہے یہاں پر اس سے اپنی بوتل بھی نہیں کھلتی ہے ، اس نے ڈھکن کھولنے کےلیے ایک وزیر رکھا ہے ، یہ ماں کے پاؤں تلے سے زمین ہی نکال کر کھا گئے ہیں ، ہم زرداری مافیا کے خلاف جنگ میں پیچھے نہیں ہٹیں گے۔

علی زیدی نے کہا ہے کہ ہم 27 فروری کو گھوٹکی سے کراچی تک مارچ کریں گے ، ہم میر پور خاص، سکھر سب بند کردیں گے ، ہم سب ملکر اس کا تختہ پلٹ کر رہیں گے ، آصف زرداری تمہارا وقت پورا ہوچکا ہے۔

نصرت سحر عباسی

گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس(جی ڈی اے) کی رہنما اور رکن سندھ اسمبلی نصرت سحر عباسی نے کہا کہ پیپلز پارٹی چاہتی ہے کہ سندھ میں ان کا راج رہے، پیپلز پارٹی نے کراچی سے کشمور تک مظالم ڈھائے، ڈاکے ڈالے، پیپلز پارٹی اس قانون کی آڑ میں ہم پر قابض ہونا چاہتی ہے، پیپلز پارٹی کی نظر میں دیگر جماعتوں اور اراکین کو ملنے والے ووٹوں کی اہمیت نہیں، کراچی سے کشمور تک کا فیصلہ ہے کہ یہ کالا قانون ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
Facebook Twitter Youtube