Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

دیامربھاشا ڈیم ملکی تاریخ کا سب سےبڑا منصوبہ

SAMAA | - Posted: Jan 15, 2022 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 15, 2022 | Last Updated: 4 months ago

برف پوش پہاڑوں اور گلیشیئر سے نکلنے والے 5 بڑے دریا ایک دھرتی بناتے ہیں اور مل کرسندھ ساگر کو بھی جنم دیتےہیں جو بلاشبہ پاکستان کی لائف لائن ہے۔

دریاؤں کے پانی سے زمانہ قدیم سے آب پاشی کی جاتی رہی ہے اور انہی بہتےدریاؤں پر بند باندھ کربجلی جیسی توانائی بھی حاصل کی جارہی ہے۔ پاکستان دنیا کے ان ممالک میں شامل ہے جن میں ماحولیاتی تبدیلوں کےساتھ ساتھ بڑھتی ہوئی آبادی کے چیلنجزکا بھی سامنا ہے۔

مستقبل کے تقاضوں کومدنظر رکھتے ہوئے ملکی تاریخ کے سب سے بڑے تعمیراتی منصوبے یعنی دیامر بھاشا ڈیم پر کام جاری ہے۔ بدقسمتی سے سندھ طاس معاہدے کے نتیجے میں بنے والے منگلا اور تربیلا ڈیمز کے بعد پاکستان میں کوئی بڑا ڈیم نہیں بنا۔ کالا باغ ڈیم جیسا منصوبہ سیاست کی نظر ہواجبکہ دیامر بھاشا، داسو اور پونجی جیسےمنصوبوں پر کبھی سیاست تو کبھی وسائل کی کمی آڑے آتی رہی۔

برسوں کی منصوبہ بندی اور کئی طرح کی رکاوٹیں دور کرنے کے بعد اب بالآخر دیامر بھاشا ڈیم پرکام پایہ تکمیل تک پہنچنے کو ہے۔ فرنٹیرورکس آرگنائزیشن اور پاورچائنہ مل کریہ ڈیم تعمیرکررہے ہیں۔ اس میگا پراجیکٹ کے لیے پہلے مرحلہ میں 272 میٹر بلند ڈیم تعمیرکیا گیا جوکہ رولرکمپیکٹڈ کنکریٹ سے تعمیرکیا گیا۔

یہ دنیا کا سب سےبلند ڈیم سمجھا جارہا ہے۔ پاورچائنہ اور فرنٹیرورکس آرگنائیزیشن نے ڈیم کی تعمیرکے لیے کام شروع کردیا ہے۔ سن 2023 میں میں ڈیم کی تعمیرکی کنکریٹ بورنگ بھی شروع ہوگی ہے لیکن اس سے پہلے دریا کا رخ موڑاجائےگا۔ جس کے لیے پاورچائنہ دو ڈویژن  سرنگوں کی کھدائی کرہی ہے۔

دیامر بھاشا ڈیم کی تعمیرکے ملکی معیشت پر انتہائی مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ دیامر باشا ڈیم کے اس میگا پروجیکٹ سے سستی بجلی کے ساتھ ساتھ واٹرسیکیورٹی کا مسئلہ بھی کافی حد تک حل ہوجائے گا۔ اس ڈیم کی اسٹوریج 8.1 میٹرایکڑ فٹ ہے ۔ دیامر بھاشا ڈیم انجینئرنگ کا شاہکار ہوگا کیوں کہ اس سے پہلے پوری دنیا میں اس سے بلند آر سی سی ڈیم نہیں بنا۔

یہ ڈیم پاکستان کا سب سے بڑا آبی ذخیرہ ہوگا۔ پاکستان میں اس سے پہلے اس سائز کی کنکریٹنگ نہیں ہوئی۔ تقریبا  20 ملین کیوبک میٹر کمپلیٹنگ ہوئی ہے۔ پاکستان کی آنے والی نسلوں کے مستقبل کومحفوظ بنانے کے لیے واٹرسیکورٹی کو یقینی بنانا لازم وملزم ہے۔ حکومت قومی تعمیروترقی کے جس جذبہ کے ساتھ دیامر بھاشا ڈیم پر کام کررہی ہے اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ میگا ڈیم بروقت پایہ تکمیل کو پہنچےگا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube