Tuesday, May 17, 2022  | 1443  شوّال  15

این سی اوسی کا2روز ویکسینیشن سینٹر بند رکھنےکافیصلہ

SAMAA | - Posted: Dec 30, 2021 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Dec 30, 2021 | Last Updated: 5 months ago

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشنل سینٹر (این سی او سی) کی جانب سے یکم اور 2 جنوری 2022 کو ملک بھر کے ویکسینیشن سینیٹرز بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

این سی او سی کی جانب سے بتایا گیا کہ ویکسینین سینٹرز میں موجود اسٹاف پورا سال قومی ہدف حاصل کرنے میں مصروف عمل رہا ہے، اس لئے انہیں دو روز کے لیے چھٹی دی گئی ہے۔

این سی او سی کےمطابق ملک بھر میں کرونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین لگانے کے عمل کا آغاز دوبارہ 3 جنوری 2022 سے ہوگا۔

این سی او سی نے کہا کہ پاکستان کی مجموعی آبادی کی 30 فیصد جبکہ 46 فیصد اہل آبادی ویکسینیٹڈ ہے۔

این سی او سی نے ہدایت کی ہے کہ شہریوں کو چاہیے کہ ماسک پہنیں، ہجوم والی جگہوں پر نہ جائیں اور سماجی فاصلے کا خیال رکھیں۔

این سی او سی کے مطابق ‏اومی کرون وائرس کی وجہ سے دنیا بھر میں کرونا کی نئی لہر کا سامنا ہے اوراس کے خلاف واحد دفاع مکمل ویکسینیشن ہی ہے۔

شہریوں سے درخواست کی گئی ہے کہ اپنی ویکسینیشن جلد ازجلد مکمل کروائیں۔

گزشتہ روز اسلام آباد میں معاون خصوصی صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے بتایا تھا کہ کرونا وائرس کے ویرینٹ اومی کرون کتنا خطرناک ہے؟ اس کا وقت کے ساتھ پتہ چلے گا۔

ڈاکٹر فیصل سلطان نےکہا کہ اومی کرون روکنے کیلئے احتیاطی تدابیر ضروری ہے کیوں کہ اومی کرون میں پہلے کرونا اقسام کی ہی علامات ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ابھی کچھ نہیں کہا جاسکتا کہ اومی کرون سے شرح اموات کتنی ہیں۔ اومی کرون کی تشخیص کےلیے ہرجگہ سے نمونے حاصل کررہے ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube